Salam Us Par Keh Jis Nay Baykason ki Dastgeeri Ki

سلام اس پر کہ جس نے بیکسوں کی دستگیری کی

سلام اس پر کے جس نے بادشاہی میں فقیری کی

سلام اس پر کہ اسرارِ محبت جس نے سمجھا ئے

سلام اس پر کہ جس نے زخم کھا کر پھول برسائے

سلام اس پر کہ جسنے خوں کے پیاسوں کو قبائیں دیں

سلام اس پر کہ جس نے گالیاں سن کر دعائیں دیں

سلام اس پر کہ دُشمن کو حیاتِ جادواں دیدی

سلام اس پرابو سفیان کو جس نے اماں دیدی

سلام اس پر کہ جسکا ذکر ہے سارے صحائف میں

سلام اس پر کہ ہوا مجروح جو بازارِ طائف میں

سلام اس پر وطن کے لوگ جس کو تنگ کرتے تھے

سلام اس پر کہ گھر والے بھی جس سے جنگ کرتے تھے

سلام اس پر کہ جسکے گھر میں چاندی تھی نہ سونا تھا

سلام اس پر کہ ٹوٹا بوریا جس کا بچھونا تھا

سلام اس پر جو سچائی کی خاطر دکھ اٹھاتا تھا

سلام اس پر کہ جو بھوکا رہ کے اوروں کو کھلاتا تھا

سلام اس پر جو اُمت کیلئے راتوں کو روتا تھا

سلام اس پر جو فرشِ خاک پر جاڑے میں سوتا تھا

سلام اس پر کہ جس نے جھولیاں بھردیں فقیروں کی

سلام اس پر کہ مشکیں کھول دیں جس نے اسیروں کی

سلام اس پر کہ تھا الفقر فخری جس کا سرمایہ

سلام اس پر کہ جس کے جسمِ اطہر کا نہ تھا سایہ

سلام اس پر کہ جسنے فضل کے موتی بکھیرے ہیں

سلام اس پر بروں کو جس نے فرمایا کہ میرے ہیں

سلام اس پر کہ جس کی چاند تاروں نے گواہی دی

سلام اس پر کہ جسکی سنگ پاروں نے گواہی دی

 سلام اس پر کہ جس نے چاند کو دو ٹکڑے فرمایا

سلام اس پر کہ جس کے حکم سے سورج پلٹ آیا

سلام اس پر فضا جس نے زمانہ کی بدل ڈالی

سلام اس پر کہ جس نے کفر کی قوت کچل ڈالی

سلام اس پر شکستیں جسنے دیں باطل کی فوجوں کو

سلام اس پر کہ ساکن کردیا طوفاں کی موجوں کو

سلام اس پرکہ جس نے کافروں کے زور کو توڑا

سلام اس پر کہ جس نے پنجۂ بے داد کو موڑا

سلام اس پر سرِ شہنشاہی جس نے جھکایا تھا

سلام اس پر کہ جس نے کفر کو نیچا دکھایا تھا

سلام اس پر کہ جس نے زندگی کا راز سمجھایا

سلام اس پر کہ جو خود بدر کے میدان میں آیا

سلام اس پر بھلا سکتے نہیں جس کا کبھی احساں

سلام اس پر مسلمانوں کو دی تلوار اور قرآ ں

سلام اس پر کہ جس کا نام تسکینِ دل و جاں ہے

سلام اس پر کہ جس کے خُلق کی تفسیر قرآں ہے

سلام اس پر کہ جس کا نام لے کر اُس کے شیدائی

الٹ دیتے ہیں تختِ قیصریت اوجِ دارائی

سلام اس پر کہ جس کے نام لیوا ہر زمانے میں

بڑھا دیتے ہیں ٹکڑا سرفروشی کے فسانے میں

سلام اس پر کہ جسکے نام کی عظمت پہ کٹ مرنا

مسلماں کا یہی ایماں، یہی مقصد ، یہی شیوا

سلام اس ذات پر جس کے پریشاں حال دیوانے

سناسکتے ہیں اب بھی خالد و حیدر کے افسانے

سلام اس پر جو دنیا کے لئے رحمت ہی رحمت ہے

سلام اس پر کہ جس کی ذات فخرِ آدمیّت ہے

درود اس پر کہ جس کی بزم میں قسمت نہیں سوتی

درود اس پر کہ جس کے ذکر سے سیری نہیں ہوتی

درود اس پر کہ جس کے تذکرے ہیں پاک بازوں میں

درود اس پر کہ جس کا نام لیتے ہیں نمازوں میں

درود اس پر، جسے شمعِ شبستانِ ازل کہیے

درود اس ذات پر فخرِ بنی آدم جسے کہیے

ماہر القادری

Lyrics

Salam Us Par Keh Jis Nay Baykason Ki Dastgeeri Ki

Salam Us Par Keh Jis Nay Badshahi Main Faqiri Ki

Salam Us Par Keh Asrar-e Mohabbat Jis Nay Samjhai

Salam Us Par Keh Jis Nay Zakhm Khar Kar Phool Barsai

Salam Us Par Keh Jis Nay Khoo Kay Piyason Ko Qabain Dee

Salam Us Par Keh Jis Nay Galiyan Sun Kar Duaen Dee

Salam Us Par Keh Dushman Ko Hayate Jawidan Day Di

Salam Us Par Abu Sufyan ko Jis Nay Amaa Day Di

Salam Us Par Keh Jis Ka Zikr Hai Saray Sahaif Main

Salam Us Par Keh Huwa Majrooh Jo Bazar-e Taif Main

Salam Us Par Watan Kay Loog Jis Ko Tang Kartay They

Salam Us Par Keh Ghar Walay Bhi Jis Say Jang Kartay They

Salam Us Par Keh Jis Kay Ghar Main Chandi Thi Na Soona Tha

Salam Us Par Keh Toota Borya Jis Ka Bichona Tha

Salam Us Par Jo Sacchai Ki Khatir Dukh Uthata Tha

Salam Us Par Keh Jo Bhooka Reh Kay Auron Ko Khilata Tha

Salam Us Par Jo Ummat Kay Liay Raton Ko Roota Tha

Salam Us Par Jo Farsh-e-Khaak Par Jaray Main Soota Tha

Salam Us Par Keh Jis Nay Jholiyan Bhar Di Faqiron Ki

Salam Us Par Keh Mushken Khool Di Jis Nay Asiron Ki

Salam Us Par Keh Tha ALFAQR-O FAKHRI Jis Ka Sarmaya

Salam Us Par Keh Jis Kay Jism-e-Athar Ka Na Tha Saya

Salam Us Par Keh Jis Nay Fazl Kay Mooti Bakhairay Hain

Salam Us Par buron Ko Jis Nay Farmaya Keh Meray Hain

Salam Us Par Keh Jis Ki Chaand Taroon Nay Gawahi Di

Salam Us Par Keh Jis Ki Sang Paroon Nay Gawahi Di

Salam Us Par Keh Jis Nay Chaand Ko Do Tukray Farmaya

Salam Us Par Keh Jis Kay Hukm Say Suraj Palat Aya

Salam Us Par Faza Jis Nay Zamana Ki Badal Dali

Salam Us Par Keh Jis Nay Kufr Ki Quwwat Kuchal Dali

Salam Us Par Shikastain Jis Nay Di Batil Ki Faujon Ko

Salam Us Par Keh Sakin Kar Diya Tufaa Ki Majoon Ko

Salam Us Par Keh Jis Nay Kariron Kay Zoor Ko Toora

Salam Us Par Keh Panja-e- Bay Daad ko Moora

Salam Us Par Sar-e ShahanShahi Jis Nay Jhukaya Tha

Salam Us Par Keh Jis Nay Kufr Ko Neecha Dikhaya Tha

Salam Us Par Keh Jis Nay Zindagi Ka Raaz Samjhaya

Salam Us Par Keh Jo Khud Badr Kay Maidan Man Aya

Salam Us Par Bhula Saktay Nahi Kabhi Jis Ka Ehsan

Salam Us Par Musalmano Ko Di Talwar Aur Quran

Salam Us Par Keh Jis Ka Naam Taskeen-e Dil-o- Jaa Hai

Salam Us Par Keh Jis Kay Khulq Ki Tafseer Qura’a Hai

Salam Us Par Keh Jis Ka Naam Lay Kar Us Kay Shaidai

Ulat Daitay hain Takht-e Qaisariyyat Taaj-e Daraai

Salam Us Par Keh Jis Kay Naam Laiwa har Zamanay Main

Barha Daitay hain Tukra Sar Faroshi Kay Fasanay Main

Salam Us Par Keh Jis Kay Naam Ki Azmat Pay Kat Marna

Muslama Ka Yahi Emaa Yahi Maqsad Yahi Sheewa

Salam us Zaat Par Jis Kay Preshaa Haal Diwanay

Suna Saktay Hain Ab Bhi KHALID-O- HAIDAR Kay Afsanay

Salam Us Par Keh Jo Dunay Kay Liay Rahmat Hi Rahmat Hai

Salam Us Par Keh Jis Ki Zaat Fakh-e Admiyyat Hai

Durood Us Par Keh Jis Ki Bazm Main Qismat Nahi Sooti

Durood Us Par Keh Jis Kay Zikr Say Sairi Nahi Hooti

Durood Us Par Keh Jis Kay Tazkiray Hain Paak Bazo’o Main

Salam Us Par Keh Jis Ka Naam Laitay Hain Namazoo Main

Durood Us Par Jisay Sham’e Shabistan-e- Azal Kehye

Durood Us Zaat par Fakhr-e- Bani Adam Jisay Kehye

Mahir ul Qadri

Audio Salam Us Par Keh Jis Nay BayKason Ki Dastageeri Ki
Audio Naat: Salam US Par Keh Jis Nay Baadshahi Main Faqiri Ki
Audio Naat by Another Naat Khawan: Salam Us Par Keh Jis Nay Baadshahi Main Faqiri Ki