• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
(1) 2 3 »
Published by Admin2 on 2012/8/3 (976 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین ومفتیان شرع متین اس صورت میں کہ مسجد خیرنگر دروازہ کا صحن محراب کے ہردو جانب میں مساوی نہیں ہے بلکہ دست راست کی جانب ۱۶فٹ بڑھاہواہے گرمی برسات وغیرہ میں جب نماز صحن مسجد میں پڑھی جاتی ہے توجماعت اس سرے سے اس سرے تک قائم ہوتی ہے جومحراب کی نسبت سے دائیں جانب ۱۶فٹ متجاوز ہوتی ہے جس کا ایک خاکہ بھی مرسلہ خدمت ہے اب دریافت طلب یہ ہے کہ جب صحن مسجد میں جماعت قائم ہوجائے تو امام کو رعایت وسط صف کی لازم ہے یامحاذاتِ محراب ضروری ہے بینوا توجروا۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/3 (906 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ مسجد کے باہر درمیں جومشرق کی جانب ہوتاہے اس میں تنہا امام کوکھڑے ہوکر نماز پڑھانی کیسی ہے اور اکثرمساجد میں باہر کاصحن اندر کے صحن سے بہت نیچاہوتاہے بینوا توجروا۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/3 (842 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ طالب علم پرجوطلب علم دین کرتاہے جماعت نمازپنجگانہ واجب ہے یانہیں؟ بیّنوا تؤجروا۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/4 (2246 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ اگرصف اول کے مقتدی امام کے ایسے متصل کھڑ ے ہوں کہ ان کے پنجے امام کی ایڑی کے برابرہوں یاایک بالشت امام کی ایڑی سے پیچھے ہوں اس غرض سے کہ دوسری صف بھی مسجد کے اندرہوجائے حالانکہ صحن میں جگہ ہے اور صف اول کاکوئی مقتدی امام کے پیچھے نہ ہو اس صورت میں کراہت ہوگی یانہیں؟ اگرہوگی تو کیسی کراہت ہوگی؟ بینوا توجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/5 (854 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ سمجھ وال لڑکا آٹھ نوبرس کاجونماز خوب جانتاہے اگرتنہا ہوتو آیا اسے یہ حکم ہے کہ صف سے دور کھڑا ہو یا صف میں بھی کھڑا ہوسکتاہے؟ بیّنوا توجروا۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/5 (760 )
"کیافرماتے ہیں علمائے دین مسئلہ ہذا میں:
(۱) اگرکوئی نماز کسی وجہ سے دہرائی جائے تو وہ شخص کہ نماز مشکوکہ میں شریک نہیں تھا وہ جماعت ثانیہ میں شریک ہوسکتاہے یانہیں؟
(۲) امام فرض پڑھارہاہے ایک مقتدی دوسری یاتیسری رکعت میں ملاتو اس کا جو فرض چھوٹ گیا ہے بآوازِ بلند پڑھے یاآہستہ؟
(۳) قضاعمری کو امام وداع جمعہ کو فجر سے عشاء تک بجہر پڑھادے تو سب کی عمربھر کی قضاکیااداہوجائے گی؟
(۴)نمازجمعہ میں اگرکوئی شخص تشہد میں شریک ہو تو نماز ہوگی یانہیں؟ بینوا وتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/5 (917 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ اگرمقتدی ابھی التحیات پوری نہ کرنے پایاتھا کہ امام کھڑاہوگیایاسلام پھیردیا تومقتدی التحیات پوری کرلے یا اتنی ہی پڑھ کر چھوڑدے؟ بینوا وتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/16 (874 )
"کیا فرماتے ہیں علمائے دین متین ومفتیان شرع مبین اس مسئلہ میں کہ:
(۱) زید مسجد یا خلاف آں نماز فرض پڑھارہا ہے اور اس کی پہلی رکعت ہے یا کوئی اور رکعت، اور بکر تنہا یا دو شخص داخل ہوئے باوجود اطلاع ہونے یا ہوجانے کے بکر تنہا یا دونوں شخصوں نے اسی مقام پر اور اسی صف پرعلیحدہ فرض پڑھے اور زید کے مقتدی نہ بنے، کیاحکم ہے ان کی نماز کا؟ یا پہلے ان کو اطلاع نہ تھی نیت باندھنے کے بعد رابع نے بآواز بلند کہہ دیا، اب کیاحکم ہے بکر کی نماز کا ، آیا وہ نماز درست ہوئی؟ اگرنہیں تو اطلاع پانے تک جس قدرہوچکی ہے وہیں سے ترک کردے یا پوری کرکے وہ نماز اعادہ کرے؟ مفصل فرمائیے۔
(۲) اگرہیجڑا یاعورت یانابالغ یاشیعہ جن کی امامت بالاتفاق ناجائز ہے نماز فرض پڑھ رہاہے مسجد میں یا باہر، اور زید بھی نماز فرض پڑھناچاہتاہے آیا اسی مصلے پرنماز پڑھ سکتاہے یانہ؟ کیا اس شخص کی نماز ختم ہونے تک زیدکو انتظار لازم ہے؟ بینوا وتوجروا۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/5 (1213 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ جماعت ثانیہ کی نسبت کیاحکم ہے؟ یہاں بعض لوگوں کو اس کی ممانعت میں تشدد ہے جماعت اولٰی کے بعد آٹھ آٹھ دس دس آدمی جمع ہوجاتے ہیں مگرجماعت نہیں کرتے برابر کھڑے ہوکر علیحدہ علیحدہ نماز پڑھتے ہیں یہ کیسا ہے؟ بینوا توجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/7 (1229 )
"چہ می فرمایند علمائے دین درین مسئلہ کہ دوجماعت دریک مسجد دریک وقت بلاعلمی پس نماز مصلین جماعت ثانیہ جائز است یانہ؟ بینوا توجروا
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ بغیر علم ایک وقت میں ایک مسجد میں دوجماعت ہونا کیسا ہے؟ پھر دوسری جماعت کے نمازیوں کی نماز جائز ہے یانہیں؟ بیان کرو اجرپاؤ ۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/7 (1084 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ وہ جماعت جوکراہت تحریمی پرمشتمل ہے جیسے پانچ چھ مقتدی امام کے برابر کھڑے ہیں یاامام کی آستین کہنیوں تک چڑھائی ہوئی ہیں یاوہ کلام مجید صحیح نہیں پڑھتااس میں شریک ہونا چاہئے یانہیں؟ بینوا توجرا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/7 (1438 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ اما م کے ساتھ ایک مقتدی برابرکھڑا ہے دوسرا اور آیا نہ وہ مقتدی اول پیچھے ہٹا نہ امام آگے بڑھا تو یہ اس مقتدی کونیت باندھ کرکھینچے یابے نیت باندھے؟ بینوا تؤجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/7 (814 )
زید نے وقت مغرب ایک مسجد میں داخل ہوکردیکھا کہ جماعت ہورہی ہے اور امام قرأت بجہر پڑھ رہاہے زید نے اس امام کی اقتداء نہ کی اور اس آن واحد میں علیحدہ اپنی قرأت بجہر شروع کردی اور دوسری جماعت قائم کی پس زید کاکیاحکم ہے اور جماعت ثانی کاجوبحالت موجودگی جماعت اول قائم ہوئی ہے کیا حکم ہے اور دوشخص ایک آن میں قرأت بجہر کرسکتے ہیں یانہیں؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/9 (754 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین ومفتیان شرع متین اس مسئلہ میں کہ ایک مسجد میں ایک شخص واسطے امامت کے مقرر ہے اگر وہ امام قبل ازنمازعشا یا کسی اور وقت میں کسی مقتدی سے یہ کہہ جائے کہ میں کسی کام کوجاتاہوں میراانتظار کرنا یعنی بعد پوراہونے وقت معینہ کے میراانتظار کرنا، بعدہ، سب مصلی اپنے وقت معینہ پرجمع ہوگئے اور اس کے بعد انہوں نے پاؤگھنٹا وقت معمول سے دیر کی واسطے تعمیل حکم امام صاحب کے، پھر انہوں نے ایک شخص کو امام بناکر نمازپڑھ لی، آیا ان سب کی نماز درست ہوگئی یانہیں؟ اور اگرامام صاحب پھرآکر لوگوں سے کہیں کہ تم لوگوں کی نماز نہیں ہوئی، تویہ قول امام صاحب کاصحیح ہوگا یانہیں؟اور امام صاحب کوئی فتوٰی اپنے رائے سے واسطے خواہش نفس کے دیں توشرعاً کیاحکم ہوگا؟ بینواتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/9 (849 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ تارک الجماعت کس کو کہتے ہیں؟ بینواتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/9 (1436 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین ومفتیان شرع متین اس مسئلہ میں مسلمان حلال خور جوپنج وقتہ نمازپڑھتاہو اس طرح پر کہ اپنے پیشہ سے فارغ ہوکر غسل کرکے طاہرکپڑے پہن کر مسجد میں جائے تو وہ شریک جماعت ہوسکتاہے یانہیں، اور اگرجماعت میں شریک ہو تو کیاپچھلی صف میں کھڑا ہو یا جہاں اس کو جگہ ملے یعنی اگلی صف میں بھی کھڑاہوسکتاہے اور اس طرف بعد نمازصبح وبعد نمازجمعہ نمازی آپس میں مصافحہ کرتے ہیں توکیا وہ بھی مسلمانوں سے مصافحہ اور مسجد کے لوٹوں سے وضو کرسکتاہے اور جو حلال خور اپنا پیشہ نہ کرتا ہو صرف جاروب کشی بازار وغیرہ کی کرتاہو اس کے واسطے شرع شریف کاکیاحکم ہے؟ ہردوصورتوں میں جو حکم شرع شریف کا ہو اس سے اطلاع بخشئے۔ بینواتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/9 (776 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ ایک مقام پرجماعت نماز کی ہوتی ہے اور زید بھی نماز پڑھتاہے اور جماعت کے وقت حاضربھی رہتاہے جماعت ترک کرکے اول جماعت سے یابعد جماعت کے نماز پڑھتاہے اس میں کیاحکم ہے؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/9 (880 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ امام نے مع ایک مقتدی کے نماز شروع کی، بعد ایک رکعت کے دوسرااور ایک شخص آیاتواس صورت میں امام سامنے بڑھے گایاوہ شخص مقتدی کو پیچھے کی طرف کھینچے گا،اگرامام سامنے بڑھے توقبل اشارہ کے یابعد اشارہ کے،اگربعد اشارہ کے توقبل تکبیر تحریمہ کے اشارہ کرے گا یابعد،اگرقبل تکبیر تحریمہ کے اشارہ سے امام بڑھے گا یا مقتدی کو قبل تحریمہ کے وہ شخص اپنی جانب کھینچے گا تو اس صورت میں نماز فاسد ہوگی یانہیں؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/9 (906 )
"کیافرماتے ہیں علمائے دین ومفتیان شرع متین ان مسائل میں کہ:
(۱) مسجد یاخلاف مسجد امام کا مصلی مقتدیوں کی صف سے ملارہے یاعلیحدہ، اگرعلیحدہ ہو تو کس قدر فاصلہ پر، امام مصلّے کے کنارے پرکھڑاہو یاکچھ آگے بڑھ کر تاکہ مقتدیوں کوکافی جگہ ملے، فرمائیے ، اﷲ آپ کو اجرعظیم عطافرمائے۔
(۲) زید مسجد یاخلاف آں نماز فرض پڑھ رہاہے اور اس کی پہلی رکعت ہے یاکوئی اور رکعت، اور بکرتنہا یادوشخص داخل ہوئے باوجود اطلاع ہوجانے کے تنہابکر یادونوں شخصوں نے اسی مقام پر اور اسی صف پر علیحدہ فرض پڑھے اور زید کے مقتدی نہ بنے، کیاحکم ہے ان کی نماز کا، یاپہلے ان کو اطلاع نہ تھی نیت باندھنے کے بعد رابع نے بآوازبلند کہہ دیا، اب کیاحکم ہے بکر کی نماز کا؟ آیا وہ درست ہوئی، اگرنہیں تو اطلاع پانے تک جس قدر ہوچکی ہے وہیں سے ترک کردے یا پوری کرکے وہ نماز اعادہ کرے؟ مفصل فرمائیے۔ بینواتوجروا
(۳) اگرہجڑا یاعورت یانابالغ یاشیعہ جن کی امامت بالاتفاق ناجائز ہے نمازفرض پڑھ رہاہے مسجد میں یاباہر، اور زید بھی نماز فرض پڑھناچاہتاہے، آیا اس مصلے پرنماز پڑھ سکتاہے یانہ،کیا اس شخص کے نماز ختم ہونے تک زید کو انتظار لازم ہے؟ بینواتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/9 (733 )
چہ می فرمایند علمائے دین اس مسئلہ میں کہ اکثردیکھاجاتاہے کہ بعض لوگ مسجد میں آتے ہیں اور جماعت اولیہ پڑھی نہیں گئی اورامام کے حاضرہونے میں ابھی کچھ وقفہ ہے وہ اپنے کام کے واسطے امام معین کاانتظارنہیں کرتے، حاضرین میں سے کسی کو بغیر اجازت امام کے امام بنادیتے ہیں اور نماز بجماعت اداکرلیتے ہیں یا اگرجماعت ہوچکی ہے اور آنے والا شامل جماعت نہیں ہواتوپھردیکھاکہ ایک دو اور آدمی موجود ہیں جو شامل جماعت نہیں ہوئے ان کو ہمراہ لے کر جماعت پڑھائی یا ان میں سے کسی اور کو امام بنادیا اور امام سے نہیں پوچھابعض کی یہ عادت ہے کہ مسجد میں آئے اور امام کا مصلّٰی لیااور بچھایا اور اس پرنماز پـڑھی یا یونہی بیٹھ گئے، کیا ان کاایساکرنااور بغیر امام کے نماز پڑھنادرست ہے یانہیں، جواب بحوالہ کتب معتبرہ تحریر فرمائیں بینوابالدلیل وتوجروابالاجرالجزیل(دلیل کے ساتھ بیان کرواﷲ تعالٰی آپ کو اجرجزیل عطافرمائے گا۔ت)
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/9 (830 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ ظہر کی نماز دوبج کرپچیس منٹ پرتین شخص جماعت کرلیں وہ بہترہے یادوبج کر پینتیس منٹ پر پچیس آدمیوں کی جماعت ہو یہ بہترہے ان دونوں جماعتوں میں کون سی جماعت اولٰی ہے، فقط۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/16 (833 )
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/9 (779 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین ومفتیان شرع متین اس مسئلہ میں کہ امام صاحب بہ ہنگام ضرورت محراب مسجد میں یعنی آثاردیوار پچھیت مسجد کے اندرکھڑا ہے اور اپنے دائیں وبائیں برابر ایک ایک یا زیادہ مقتدی کھڑے کرلئے باقی اور صفیں عقب حدود مسجد میں ہوں توایسی صورت میں نماز ہوجائے گی یا نہیں، بینواتوجروا۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/9 (893 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ امام مذہب حنفی امامت کررہا ہے اور اس کے مقتدی کل حنفی ہیں اور ان میں چنداشخاص غیرمقلد شریک ہوکر آمین بالجہر ورفع یدین کریں تو اس صورت میں ادائے نمازحنفی میں نقص واقع ہوتاہے یانہیں کہ جس سے نماز مکروہ ہوتی ہے یافاسد۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/9 (974 )
"وباردوم ازقصبہ سرواڑ علاقہ کشن گڑھ متصل اجمیر شریف ہوشیاروں کی مسجد مسئولہ قاضی اکبر صاحب ۲۰ذیقعد ۱۳۳۰ھ
کیا کسی امام کے مذہب میں آمین بآواز بلند کہناجائز ہے، اگرکوئی جماعت میں آمین زور سے کہتاہو حنفی سنیوں کی جماعت میں شریک کرنے سے نماز میں توکچھ نقص واقع نہیں ہوتا۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/16 (2795 )
السلام علیکم ورحمۃ ا ﷲ وبرکاتہ فقیر حقیر مسکین محمد رکن الدین حنفی نقشبندی مجددی نادیدہ مشتاق زیارت (عـہ)دومسئلہ خدمت شریف میں پیش کرکے امیدوار ہے کہ جناب اپنی تحقیق سے اس عاجز کو ممنون فرمائیں اﷲ تعالٰی اس کااجرعظیم عطافرمائے گا، ایک مسئلہ تو جماعت ثانی کا ہے اس میں گزارش یہ ہے کہ ردالمحتار میں جواقوال کراہت وعدم کراہت کے نقل کئے ہیں ان میں سے کراہت کاقول اس محلہ کی مسجد کی نسبت کہ جس میں امام اور مؤذن اور نمازی معین ہوں ظاہر الروایۃ بیان کیا ہے اور اس کو مدلل بھی کردیا ہے اور عدم کراہت کے قول کی صحت بھی منقول ہے کہ جو منسوب امام ابویوسف رحمۃاﷲ تعالٰی علیہ سے ہے وہ بھی اس میں موجود ہے اب یہ فرمائیے کہ ظاہرالروایۃ کے مقابلہ میں جبکہ وہ مدلل بھی ہو دوسرے قول بلاد دلیل کی ترجیح کس طرح ہوسکتی ہے۔ بینواتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/12 (974 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں زید کہتاہے کہ مسجد کے فرش پرمحراب کے محاذ میں جماعت ہونا افضل ہے خواہ نمازی کم ہو، خواہ کسی درخت وغیرہ کے ہونے کی وجہ سے نمازیوں کی طبیعت پربارہو اور دلیل اس کی یہ ہے کہ شامی کے اندر یہ مضمون ظاہرکرتاہے کہ محراب میں امام کاکھڑاہونا افضل ہے اسی پرقیاس کرلیاجائے، عمریہ کہتاہے کہ تمام فرش مسجد کا ایک حکم میں ہے، کسی جگہ کے واسطے فضیلت نہیں ہوسکتی،اگر اس قدرنمازی ہوں کہ محراب سے راست وچَپ میں جماعت ممکن ہو اور نمازیوں کوبھی وہاں آسائش ہو تو ضرور جماعت کرلی جائے دوسرے یہ کہ ائمہ مجتہدین کے قیاسات کااختتام ہوگیا، علمائے حال کاقیاس کیاہوسکتاہے جبکہ علمائے حال کی یہ کیفیت ہے کہ لفظ کے لغوی معنی غلطی سے کچھ سے کچھ خیال کرتے ہیں لہٰذا مکلف خدمت ہوں کہ جواب مع دلیل تحریر فرمائیں، مکرر یہ کہ زیدمحراب کے محاذ میں جماعت ہونے کی فضیلت میں کوئی قول منقول پیش نہیں کرتا محض قیاس سے کام لیناچاہتاہے عمرقیاس کو رَد کرکے منقول دلیل مانگتاہے۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/12 (2179 )
"کیافرماتے ہیں علمائے دین زید اور عمرو کے بارے میں، دونوں حنفیت کادعوٰی کرتے ہیں اور ترجمہ حدیث یزید بن عامر رضی اﷲ تعالٰی عنہ کاجوبابمن صلی الصلاۃ مرتین (جس نے نماز دوبارپڑھی۔ت)
میں ہے حسب ذیل کرتے ہیں زید آخری حصہ حدیث:
اذا جئت الصلٰوۃ فوجدت الناس فصل معھم وان کنت قدصلیت کن لک نافلۃ وھذہ مکتوبۃ۱؎۔جب تو نماز کے لئے آیا تو لوگوں کو نماز اداکرتے پایا تو ان کے ساتھ نماز میں شامل ہوجا اگر تونماز پڑھ چکا تو وہ نفلی ہوگی اور یہ فرضی ہوگی۔(ت)
(۱؎ سنن ابوداؤد باب من صلی فی منزلہ الخ آفتاب عالم پریس لاہور ۱ /۸۵)
کاترجمہ یہ کرتاہے کہ پہلی نماز جو گھر میں پڑھی گئی ہو نفل ہوگی اور جوجماعت کے ساتھ پڑھی جائے وہ فرض ہوجائے گی دلیل یہ ہے:وان کانت قدصلیت تکن لک نافلۃمیں آیاکرتاہے اس کے بعد مستقل جملہ اور کلام مستانف ہواکرتاہے یہاں ایسا نہیں ، عمرو کہتاہے کہ زیدکا یہ ترجمہ مذہب حنفی کے موافق نہیں بلکہ مخالف ہے، عمرو آخری حصہ حدیث مندرجہ بالا کاترجمہ یوں کرتاہے کہ گھروالی نماز جوپہلے پڑھی ہے وہ فرض ہوگی اور جو بعد میں جماعت سے پڑھی ہے وہ نفل ہوگی، اس وجہ سے کہ ان وصلیہ ہے، دلیل یہ ہے کہ وان کنت قدصلیت میں اول واؤ داخل ہے دوسرے کنت موجود ہے جوماضی کے لئے مخصوص ہے اور قد تحقیق ماضی کے لئے نیز ھذہ اسم اشارہ قریب ذکری کے لئے ہے پس قدصلیت سے جوصلوٰۃ مدلول ہے وہ مشارٌ الیہ ہے اور یہ پہلی ہی ہوگی وہ فرض ہوگی اور جوصلوٰۃ فصل معھم سے مدلول وہ بعیدذکراً ہے وہ مشارٌ الیہ نہیں اگرخود کنت ماضی کو شرط بنایاجائے تو تکن جزاء مرتب کون مخاطب پرنہیں ہے نیز فصل معھم امربھی جواب کوچاہتاہے اور شرط بھی جزا کو علٰی سبیل التسلیم تب بھی تکن لک نافلۃ جواب امر کا ہے جزا نہیں بوجہ مقدم ہونے امر کے جیسے جملہ قسمیہ جب مقدم ہو شرط پرتوجزا نہیں ہوتی بلکہ جواب قسم سے استغنا ہوجاتاہے ان دونوں قائلوں میں کون ساقائل راستی پر ہے نیز اوپربیان کی ہوئی دلیلیں قابل قبول ہیں یانہیں؟ زید و عمرو کی دلیلوں میں سے کس کی دلیلیں زیادہ صحت کے ساتھ مانی جاسکتی ہیں اور قبول کی جاسکتی ہیں؟ دیگرجونماز رکوع وسجود والی علاوہ مجرد عصرومغرب جماعت سے پڑھی یاپڑھائی ہو عام ہے کہ نماز عید وجمعہ ہی کیوں نہ ہو دوبارہ جماعت ملنے پرنفلاً تکرارنماز کرسکتاہے یانہیں؟ اگراوپر بیان کی ہوئی حدیث سے تکرار نماز پر اس طور سے کہ پہلے پڑھی ہوئی نماز فرض یاواجب اقتدا یاامامت کرکے دوسری جماعت دوسرے روز ملنے پرتکرار نماز کرسکتاہے اور وہ نفل ہوگی استدلال لایاجائے تو صحیح ہے یانہیں؟ بینوا توجروا رحمکم اﷲ تعالٰی۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/12 (1467 )
"(اﷲ تعالٰی کی حمد اور حضور علیہ السلام کی خدمت میں صلوٰۃ وسلام عرض کرتے ہوئے۔ت)۔ حضرات علمائے کرام ادام اﷲ بقاء ہم علٰی رؤس المسلمین وحماہم۔ ان چندسوالوں کاجواب مرحمت فرمائیں:
(۱) یہ کہ اختلاف علماء ہو یوم النحر میں، توقربانی کواحتیاطاً ایک روز مؤخر کرانے والا اختلاف علماء سے بچنے کے لئے مجرم ہے یانہیں۔
(۲) سہ شنبہ ۱۰/ذی الحجہ کو عیدالاضحٰی کی نماز واجب کی نیت سے پڑھانے والا امامت سے بوجہ ثبوت شرعی ماننے کے اور چہارشنبہ کو اس جگہ حاضر ہوکر جہاں عیدالاضحٰی بوجہ ثبوت کامل نہ ہونے کے عید سہ شنبہ کو نہیں ہوئی تھی بلکہ آج چہارشنبہ کو عیدالاضحٰی تھی اور جماعت میں شریک ہوگیا، نفلی نیت سے مجرم ہوا یانہیں۔
(۳) سہ شنبہ کوامامت وخطبہ کے بعد احتیاطی جملہ کاتلفظ اور دوسرے روز اسی کاجماعت میں بہ نیت نفل شریک ہونا لوگوں کو شبہہ دلاتاہے کہ اس نے اپنی نماز دہرالی اور ہم لوگوں کی نمازیں خوب خراب کیں مگر امام کو دوشنبہ کو اعلان وقت نماز کے یقین تھا عید کا، اور راضی تھا، اور خود سہ شنبہ کو وہ ایک اعلان دینے پرراضی تھا کہ میں نے ثبوت کویقین جان کر بہ نیت واجب پڑھی اور امام ہوکر اقرارکرتاہے اصرار سے کہ واجب یقینی جان کرپڑھائی اوراحتیاطی جملہ میں بھی یہ عرض کیا کہ دینی بھائیو! آج عید ہے اور اکثرجگہ ہے، نماز بھی عید کی پڑھی گئی مگر قربانی کل کرنے میں احتیاط ہے، ایسی اختلافی حالت میں کس کے قول کو ماناجائے امام کے قول کو یامقتدیوں کے۔
(۴) پڑھی ہوئی نماز نفل کی نیت سے پھر پڑھنا حنفیوں کے نزدیک حدیث یزید ابن عامر رضی اﷲ تعالٰی عنہ جوباب ''من صلاۃ مرتین'' میں ہے، سے ثابت ہوتا ہے یانہیں۔
(۵) اس حدیث میں وان کنت قدصلیت (اگرچہ تونے نماز پڑھ لی ہو۔ت) میں ان وصلیہ ہے یا شرطیہ، اولٰی وصلیہ ہوتاہے یاشرطیہ۔
(۶) آیہ کریمہ ومن تطوع خیرا فھو خیرلہ (اور جو کوئی اپنی طرف سے نیکی زیادہ کرے تو وہ اس کے لئے بہترہے۔ت) اور من تطوع خیراً فان اﷲ شاکر علیم (جوکوئی اپنی طرف سے اچھائی کرے تو اﷲ تعالٰی نیکی کاصلہ دینے والا اور جاننے والا ہے۔ت) سے عبادات مالیہ اور بدنیہ جس میں نفلی نماز بھی داخل ہے کوئی ثابت کرے تو استدلال درست ہے یانہیں اور معطوف علیہ نہ ہونے کی وجہ سے تحریر میں بغیر واؤ کے لکھنے والا اور آیہ ثانیہ میں بغیر ف ترتیبیہ کے لکھنے والا غلطی کرنے والا ہے یانہیں۔ بینواتوجروا رحمکم اﷲ تعالٰی۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/12 (922 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ فجر کی نماز امام پڑھارہاہے اب دوسرا نمازی آیا تو شامل جماعت ہوجائے یااول سنت اداکرے، اگرمسجد چھوٹی ہے یاصحن مسجد قلیل ہے اورکانوں میں امام کی آواز آرہی ہے ایسی صورت میں ادائیگی سنت کس صورت سے ہوناچاہئے، یابلاادائیگی سنت شامل ہوجائے اور سنت بعد طلوع آفتاب ہونا بہتریا اوّل یعنی جماعت میں شامل ہوگیاتھا اس کے بعد؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/12 (832 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ بعض نمازیوں کی کسی دنیاوی ضرورت کی وجہ سے مثلاً بازار کو خریدوفروخت کے لئے جاناہوتاہے تو اس کے لئے ان کی رعایت سے وقت مستحبہ پرنماز کو ترک کرنا اور اول وقت پڑھنے میں کچھ قباحت تونہیں ہے یا امام کو وقت مستحبہ پرپڑھنا چاہئے مثلاً عصر کے وقت کہ بعد گزرنے دومثل سایہ کے پندرہ بیس منٹ کا وقفہ اذان وصلوٰۃ کے لئے دے کر جماعت کرنے میں افضلیت توترک نہ ہوگی۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/12 (874 )
بسم اﷲ الرحمٰن الرحیم کیا فرماتے ہین علمائے دین اس مسئلہ میں کہ ایک شخص مبتلائے جذام کو جس سے طبا اجتناب واجب ہے اور مسلمانان محلہ اس کے دخول مسجد واستعمال ظروف سے حذر کرتے ہیں مسجد میں بغرض شرکت جماعت وغیرہ آنے سے شرعاً بغرض فائدہ عوام روکاجاسکتاہے یانہیں؟ بینواتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/12 (672 )
"کیافرماتے ہیں علمائے دین ومفتیان شرع متین اس مسئلہ میں کہ:
(۱) ایک شخص کو غسل کی حاجت ہے اگروہ غسل کرتاہے تو فجر کی نماز قضاہو ئی جاتی ہے تو اس وقت اسے کیاکرناچاہئے۔
(۲) جبکہ امام رکوع میں ہے اور ایک شخص ایک تکبیر کہہ کر شامل جماعت ہوگیا تو یہ کبیر تحریمہ ہوئی یا مسنونہ، اس صورت میں نماز اس مقتدی کی ہوگی یانہیں؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/12 (891 )
دوشخص ایک چٹائی ایک مصلے پرجداجدا برابرکھڑا ہوکر ایک ہی نماز فریضہ قبل جماعت یابعد جماعت پڑھ رہے ہیں ان کی نماز ہوجائے گی یانہیں؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/12 (777 )
جماعت جمعہ کے اندر پہلی صف میں دو یاتین شخض جن کی داڑھی منڈی ہوئی اور ایک شخص کی کتری ہوئی اس نے یہ لفظ کہا کہ بزرگ لوگ پیچھے بیٹھے ہوئے ہیں وہ اگلی صف میں آجائیں اور منڈی اور کتری ہوئی پیچھے چلے جائیں، لہٰذا اس نے گناہ کیا یانہیں، اور اگلی صف میں منڈی ہوئی ہیں اور پیچھے صف میں پرہیزگار اور متقی ہیں ان کو پہلی صف میں لے جائیں اور منڈی ہوئی کوپیچھے ہٹایاجائے یانہیں، اور وہ لوگ جن کی داڑھی منڈی ہوئی ہے اس مسجد کو چھوڑ کر دوسری مسجد کونماز پڑھنے کوجاتے ہیں اورایک کے ساتھ ایک یادو داڑھی والے بھی جاتے ہیں اس بات کو ان لوگوں نے نہایت ناگوارمعلوم کیا۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/12 (799 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ ایک شخص پانچوں وقت کی نماز اداکرتاہے اور صوم وصلوٰۃ کابھی پابند ہے مگرمسجد میں صرف تین وقت کی نمازیں ظہروعصر ومغرب باقی عشاء وفجر کی اپنے مکان پرتنہاپڑھتاہے اوروجہ تنہائی میں پڑھنے کی یہ ہے کہ بعد نماز عشاء وفجر کے وظیفہ میں زیادہ وقت لگتاہے اورقرآن عظیم کی تلاوت بھی کرتاہے تنہاپڑھنے میں علیحدہ کوئی حرج تو نہیں؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/12 (798 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ جماعت ثانیہ میں اقامت کہ جائے یانہیں اور جماعت ثانیہ میں امام کو زور سے جہری نماز میں قرأت کرنی چاہئے یاجماعت اولٰی کے لوگ جوسنتیں پڑھ رہے ہوں ان کے خیال سے برائے نام آواز سے پڑھے تاکہ دوسروں کی نماز میں ذہن نہ منتقل ہو جوحکم شرعی ہو ارشاد فرمائیں؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/12 (857 )
"(۱) کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ زید و بکر باہم رشتہ دار ہیں دونوں میں خانگی معاملات میں مع دیگررشتہ داران زید و بکر عرصہ سے نااتفاقی ہے اور زید وبکر دونوں شریک ہوکر ایک جماعت میںہمیشہ نماز پڑھتے ہیں، اما صاحب سے کسی کو کچھ کدورت نہیں ہے اب اہل محلہ زید و بکر سے کہیں کہ تم دونوں باہم میل کرلو، بکر یہ جواب دے کہ ہم باہم رشتہ دار ہیں ہمیں میل کرنے میں کچھ انکارنہیں ہے مگراس معاملہ میں دیگررشتہ دار داماد بھائی حقیقی وغیرہ بھی شریک ہیں جن کے ساتھ زیدکو مع دیگررشتہ داران ناراضگی ہے ان کی موجودگی کی بھی ضرورت ہے ـــــــــــــــــــــاس وقت پورا میل ہوسکتاہے تنہامیل کرنے میں دیگررشتہ داران کومجھ سے رنج ہوجائے گا بغیر ان کی موجودگی کے میل ناممکن ہے، یہ جواب بکر کاچنداشخاص کوناگوار معلوم ہوا اور ان اشخاص نے ناخوش ہوکر بکر سے کہا کہ اگرتم اس وقت ہمارے کہنے سے میل نہیں کرو گے تو ہم جماعت میں شریک نہیں ہونے دیں گے ہرطرح پریشان کریں گے لہٰذا اس بنا پر ایک شخص نے مسجد میں وقت نماز اعلان کیا کہ زید و بکر میں باہم رنج ہے جب دوشخص ایسے جن میں رنج ہے وہ شریک جماعت ہوں توپوری جماعت کی نماز نہیں ہوتی ہے اور نہ دعا اس جماعت کی قبول ہوتی ہے اور صرف بکر کو یہ کہہ کر جماعت سے علیحدہ کردیا، تویہ عمل ان اشخاص کاجائز ہے یاناجا ئز، اگرناجائز ہے توعلیحدہ کردینے والوں کو شرع شریف کاکیاحکم ہے؟
(۲) سوال بصورت حال مندرجہ بالا جو اشخاص وقت نماز جماعت سے علیحدہ کردیں ان کے واسطے شرع شریف کاکیاحکم ہے؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/14 (808 )
"کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ نماز عشاکے واسطے (۰۸) بجے وقت مقرر کرلیاگیا کہ بلاانتظار کئے دوسرے کے اس وقت جماعت کھڑی ہوجائے گی کل شب میں ۱۴آدمی دروازے پرمسجد کے کھڑ ے تھے پانچ سات کووضوکرناتھا دوتین کرچکے تھے یہ سب ایک مسئلہ پر ذکرکررہے تھے جماعت کی تکبیر والے نے ان سب کو نہیں بلایا نماز شروع کردی، آیا بلانا یاانتظار واجب تھا یانہیں؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/14 (727 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ زید کے یہاں پانچ آدمی ہیں اور سب کلام مجید خواں اور نمازی ہیں، ایک روززید نے بوقت عشا بوجہ تنہائی مکان اپنے گھر نماز ادا کی بوجہ حاضر نہ ہونے مسجد کے زید کا مع اس کے برادران اور اہل خانہ حقہ پانی بھنگی بہشتی دھوبی جملہ کام والوں کو اس سے بند کردیا اور پانچ دن سے بند ہے یعنی یکم صفر سے ۵صفر تک، حالانکہ زیدنماز کے لئے کوئی عذر وحیلہ نہیں کرتا بلکہ بوجہ مجبوری کے حاضر نہیں ہے، آیا زید اس سزا کامستوجب تھا یانہیں، اگرنہ تھا توسزادہندگان کوکیاکرناچاہئے؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/14 (806 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ زید کومرض جذام ہے سال گزشتہ میں ڈاکٹر نے مرض مذکورکی تصدیق کردی ہے اب ناخون وغیرہ کے دیکھنے سے مرض کی شدت کاثبوت ہوتاہے چونکہ زید مسجد میں آکر وضوکرتاہے جس سے بعض اشخاص تنفرکرتے ہیں بلکہ مسجد میں نماز پڑھنے سے جماعت سے احتراز کرناچاہتے ہیں او ر اکثرمقتدیان کاعزم ہے کہ زید اگرجماعت میں شامل ہوگا تو ہم گھر پرنماز پڑھ لیاکریں گے دریں صورت مسلمانوں کو کیاکرناچاہئے، آیا زید کو مسجد سے روک دیناچاہئے یالوگوں کوگھرپرنماز پڑھ لینا، اور کبھی کبھی خود بھی نماز پڑھانے کو کھڑاہوجاتاہے۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/14 (690 )
حضور اس مسئلہ میں کیاارشاد فرماتے ہیں کہ کوئی شخص ایسا ہو کہ وہابی کے مدرسہ میں پڑھتا ہو اور ان کے اقوال بھی جانتا ہے اور پھر وہابی کے مکان میں رہتاہے اس کے یہاں کھاناکھاتاہے تو اس صورت میں اسے اہلسنت کی نمازجماعت میں کھڑا ہونے دیں یانہیں اور اگر کھڑا ہوگا تو فصل لازم آئے گا یانہیں؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/14 (670 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ ایک جماعت میں چار صفیں ہیں، صف اول میں کسی مقتدی یاامام کاوضوجاتارہا تب وہ مقتدی یاامام باہر کس طرح آسکتاہے کیونکہ درمیان میں تین صفیں ہیں جو شانہ سے شانہ ملائے ہیں اور مقتدی کی جوجگہ خالی ہے اس کے واسطے کیاحکم ہے؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/14 (892 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین وشرع متین اس مسئلہ میں کہ ایک محلہ میں دوگروہ آباد ہیں دیوبندی و سنی حنفی، اس محلہ کی مسجد میں دودوجماعتیں ہوتی ہیں پہلی جماعت دیوبندی فرقہ کی ہوتی ہے وہ لوگ عداوت کی وجہ سے مغرب اور فجر کی نماز میں دیرکردیتے ہیں اس میں جماعت(نماز) قضاہونے کااندیشہ ہے اگرسنی اپنی جماعت پہلے کراناچاہتے ہیں تو وہ لوگ فساد پرآمادہ ہوتے ہیں ایسی حالت میں سنیوں کوکیاکرناچاہئے؟ بینوا توجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/14 (921 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ امام نمازپڑھاتاہے جماعت کو، بعد دوسرے آدمی امام شافعی علیہ الرحمۃ کے مقلد آئے اور صحن میں جماعت پڑھانے لگے اسی طرح دوجماعت ایک مسجد میں ساتھ اداکرناجائز ہے یانہیں اور صحن میں ایک امام نمازپڑھارہاہے مقلد شافعی کے ہاں مسبوق کے ساتھ اقتداکرنا جائز ہے اسی طرح نماز جماعت سے پڑھتے ہیں اور امام آیا اور تکبیر ہوئی اور جماعت کھڑی ہوئی اسی طرح دوجماعت ایک مسجد میں پڑھناجائز ہے یانہیں؟ بینواتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/14 (817 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ نمازباجماعت ہوچکی، بعد میں دوچارآدمی فراہم ہوگئے اور جماعت سے رہ گئے تووہ آپس میں مل کرنمازباجماعت سے پڑھ سکتے ہیں یانہیں، کیونکہ اکثرایسا دیکھاگیاتھا اب ایسا معلوم ہواہے کہ اول جماعت کے بعد پھر جماعت سے نمازپڑھنا موجب ثواب نہیں بلکہ عذاب ہے لہٰذا جوحکم شریعت ہو اس سے آگاہ فرمائیے؟ بینواوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/14 (762 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ ایک صف پردویاچارشخص علیحدہ علیحدہ فرض پڑھ سکتے ہیں یانہیں؟ بینواتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/14 (852 )
"کیافرماتے ہیں علمائے دین ان مسائل میں:
(۱) جماعت کے لئے تعین وقت گھڑی سے جائز ہے یانہیں؟
(۲) امام کو کسی مقتدی کے لئے جوممبرمسجد ومیرمحلہ ہو اور سید ہو باوجودگزرجانے وقت معین گھڑی کے جماعت کے لئے انتظار کرنا درست ہے یانہیں؟
(۳) امام کے نزدیک تمام مقتدیوں کی عزت برابرہونی چاہئے یانہیں؟
(۴) ایک مقتدی کوجوممبرمسجد ومیرمحلہ اور سید ہو دوسرے مقتدی پرفوقیت ہے یانہیں۔
(۵) اگرکوئی مقتدی سنت مستحب نمازپڑھتاہو تواس کی سنت ختم ہونے تک امام کو انتظارکرناچاہئے یانہیں، سنت مؤکدہ کی تعریف کیاہے؟
(۶) کسی مقتدی کابوجہ اس کی امارت اعزاز کے باوجود تعین وقت گھڑی وضو اور سنت کا انتظارکرناجائز ہے یاناجائز؟
(۷) امام کاکہنا کہ ہم کومقتدیوں کے انتظار کی ضرورت نہیںبلکہ مقتدیوں کوامام کے انتظار کی ضرورت ہے صحیح ہے یانہیں؟
(۸) امام کووقت معین گھڑی پرآناجائز ہے یانہیں؟
(۹) امام کاکہنا کہ گھڑی کامعین صرف مؤذن کی اذان کے لئے ہے جماعت کے لئے نہیں درست ہے یانہیں؟
(۱۰) باوجود تعین وقت گھڑی امام کاکہنا کہ جب امام نماز کے لئے کھڑا ہوجائے وہی وقت نماز کا ہے درست ہے یانہیں؟
(۱۱) مقتدیوں کاپیش امام سے جو کہ وقت معین پرنماز نہ پڑھاتے ہوں کہنا کہ آپ وقت معین سے ۲۔۴۔۱۰ منٹ پہلے تشریف لائیے درست ہے یانہیں؟
(۱۲) امام کا کہنا میں حشرتک نہ آؤں گا درست ہے یانہیں؟ بینواتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/14 (802 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ اگرامام کو مقتدی کی صف کے آگے کھڑاہونے کی جگہ نہیں ہے تو امام صف مقتدی میں کس صورت سے کھڑا ہو، آیا امام مقتدی سے کچھ امتیاز کے واسطے آگے کھڑا ہو یامقتدی امام کی دونوں جانب یعنی دہنی بائیں امام کے پیر کے برابرکھڑے ہوں؟ بینواتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/14 (878 )
"کیافرماتے ہیں علمائے دین ومفتیان شرع متین:
(۱) ایک مسجد میں دو تین جماعتوں کایکے بعددیگرے ہوناکیسا ہے، چاہئے یانہیں؟
(۲) کراہت جماعت ثانیہ میں آپ کی کیاتحقیق ہے؟
(۳) ایک مسجد میں ایک ہی وقت دوتین آدمیوں کافرداً فرداً فرض پڑھنا کیسا ہے؟
(۴) اور اگرفرداً فرداً چندشخص فرض پڑھیں تونمازہوجائے گی یانہیں؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الجماعۃ
  Print article

(1) 2 3 »
RSS Feed
show bar
Quick Menu