• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Published by Admin2 on 2012/8/28 (908 )
نیاکپڑااور جُوتاپہن کرنفل پڑھنا کیساہے؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/28 (907 )
آج کل وتر باجماعت پڑھنا بوجہ فضل جماعت افضل یابوقت تہجد بھی بہترہے؟ بیّنواتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/28 (861 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ رمضان شریف میں عشاء کی نماز فرض جس میں مصلی تہجد گزار یاغیرتہجد گزار نے جماعت کے ساتھ اداکی ہو اس کو نماز وتر جماعت کے ساتھا داکرناضرور ہے یانہیں؟ بیّنواتوجروا۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/30 (2787 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین ومفتیان شرع متین اس مسئلہ میں کہ نماز تہجد واجب ہے یاسنت؟ اگرسنت ہے توموکدہ یاغیرمؤکدہ ؟ اس کاتارک گنہگار ہے یانہیں یعنی قصداً ترک کرنے والا ؟ مفصل مع احادیث ارقام فرمائیے گا۔ بیّنواتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/30 (1296 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ سنتیں گھر میں پڑھنا افضل ہے یامسجد میں؟ اور سرورعالم صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم کی عادت کس طرح تھی یا کوئی عادت نہ تھی؟ بلکہ کبھی گھر میں پڑھتے کبھی مسجدمیں؟ اور روافض کی مشابہت اور رفض کی تہمت سے بچنے کو مسجد میں پڑھنا ضرورلازم ہے یانہیں؟ اور حدیثوں میں جو گھر میں پڑھنے کی فضیلت واردہوئی وہاں صرف نوافل ہیں یاسنتیں بھی؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/30 (1442 )
"(۱) نفل کا سوائے تراویح ونماز کسوف وخسوف بجماعت منسوخ ہونا تومعلوم ہے لیکن بعض مشائخ کے یہاں جوباعتبار کسی کسی کتاب کے بعد نمازیں نفل کی مثلاً صلٰوۃ قضائے عمر(۴نفل قبل آخری جمعہ کے) اور نفل شب برات بجماعت ہوتے ہیں ان کی اصل ہے، جوازکس بناپر ہے اور ممانعت کیوں ہے، جن فتاوٰی کی روسے جوازنکالاہے وہ کہاں تک معتبرہے؟
(۲) نفل یوم عاشورہ ہم کوپڑھنا مناسب ہے یانہیں؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/30 (837 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ وترمیں نیت وتر کی کرے یا واجب کی یاسنت کی یاکیا؟ بیّنواتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/30 (840 )
اس مسئلہ میں علماء کی کیارائے ہے کہ مالابدمنہ میں قاضی ثناء اﷲپانی پتینے ذکرکیاہے کہ آنحضرت صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم نمازتہجد میں قیام طویل فرماتے حتی کہ آپ کے پاؤں مبارک متورم ہوجاتے اور پھٹ جاتے، یہ قول قابل اعتبار ہے یانہیں، متورم ہونا اور پھٹنا دونوں صحاح ستہ سے ثابت ہیں یاصحاح کے علاوہ سے،بعض علماء کایہ کہنا ہے کہ مبارک قدموں کامتورم ہونا تو صحاح سے ثابت ہے مگر پھٹ جانا ثابت نہیں، کس کاقول معتبرہے؟ مسئلہ کتاب کے ساتھ بیان کریں اور عطاکرنے والے اﷲ تعالٰی سے اجرپائیں۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/30 (851 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ نماز عشاء میں آخری نفل بیٹھ کرپڑھنا چاہئے یا کھڑے ہوکر؟ سرکار اقدس صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم نے کس طور پرہمیشہ ان لفظوں کو ادافرمایا اور کس طرح پڑھنا باعث زیادتی ثواب ہے ؟ بیّنواتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/30 (887 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ ایک شخص نمازِتہجد اداکرتاہے لہٰذا اس کو وتر بعد فراغتِ تراویح پڑھنا جائزہے یانہیں؟ یاکسی کی تراویح اتفاق سے کچھ باقی رہ گئی ہیں تووہ امام کے بعد تراویح پڑھ سکتا ہے یانہیں؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/30 (886 )
مسئلہ یہ ہے کہ جمعہ کی پہلی چارسنتیں اگرقضا ہوجائیں توبعد فرض جماعت کے اسے سنت وقت کے اندرقضا کرلے یانہیں؟ اس میں بھی صاحب ردالمحتارتحریرفرماتے ہیں کہ جمعہ کی سنت مثل سنت ظہر کے نہیں ہیں لہٰذا گزارش ہے کہ اس کی تحقیق سے بواپسی ڈاک اطلاع بخشی جائے، دوچار علماء سے جوگفتگو ہوئی توانہوں نے جناب کی تحقیق کی طرف توجہ دلائی۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/30 (732 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ ایک شخص نے فوت جماعت کے خوف سے سنتیں فجر کی ترک کیں اور جماعت میں شامل ہوگیا اب وہ ان سنتوں کوفرضوں کے بعد سورج نکلنے سے پیشتر پڑھے یابعد؟ بیّنواتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/30 (686 )
اس مسئلہ میں کیا حکم ہے کہ بکروضو نمازفجر کاکرکے ایسے وقت میں آیا کہ امام قعدئہ اخیرہ میں ہے جو سنت پڑھتاہے توجماعت جاتی ہے اور جماعت میں ملتاہے توسنتیں فوت ہوتی ہیں اس صورت میں سنتیں پڑھے یاقعدہ میں مل جائے؟ بیّنواتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/30 (981 )
"؂ اے لقائے توجواب ہرسوال
مشکل ازتوحل شود بے قیل وقال(آپ سے ملاقات بھی ہرسوال کاجواب ہے اور بغیر قیل وقال آپ سے سوال حل ہوجاتاہے)
بعد تمنا قدمبوسی کے مدعایہ ہے کہ یہاں ہم لوگوں میں ایک حافظ قرآن شریف بہت عمدہ تلاوت کرتے ہیں سب جوانوں کامشورہ ہواکہ حافظ صاحب ہم کو پوراقرآن سنائیں سب کی صلاح سے بعد نمازعشاء پچھلی دورکعت نفل میں دو پارے روزسنائے دس یوم بعد معلوم ہوا کہ نفلوں میں جماعت درست نہیں بعد کو سب کی رائے سے عشاء کے فرضوں میں دورکعت پیشتر میں قرآن سنایا ۸یوم سنا ہوگا کہ بعض نے کہا تمہاری نمازدرست نہ ہوئی اب آپ لکھئے کہ کسی طرح قرآن شریف علاوہ رمضان مبارک سنانا درست ہے یانہیں؟ اب سب کہتے ہیں وتروں میں سناؤ اور اب یہ بھی سناہے کہ سنتوں میں جماعت درست نہیں ہے پھر کیابندوبست کیاجائے؟ اور جونماز اس طورپرپڑھی ہے وہ قبول ہوئی یاپھر قضاکریں؟ یہ جگہ پہاڑ ہے ایک قلعہ ہے جس میں ہم قریب سَوجوانوں کے رہتے ہیں۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/30 (1864 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین کہ نزدیک امام ابوحنیفہ رضی اﷲ تعالٰی عنہ اور علمائے حنفیہ کی نماز تہجد کی ساتھ جماعت کے پڑھنا جائز ہے یانہیں؟ اور دیگر ایام مخصوصہ مثلاً یوم ِ عاشورا وغیرہ میں نفل جماعت سے جائز ہیں یانہیں؟ اور یہاں کے مولوی نماز تہجد کی جماعت سے پڑھنا از حدیث ابن عباس رضی اﷲ تعالٰی عنہما منصوص کہتے ہیں اور وقت تہجد کے جماعت بھی کرتے ہیں، آیا جماعت تہجّد اور نفلوں کی کرنامستحب یاسنت کیاہے؟ اور جبکہ برعکس ہوتوکیامکروہ ہے یابدعت ہے یاکیاہے؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/30 (1533 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین کہ بعد وتر کے نفل جوپڑھے جاتے ہیں اُن کا بیٹھ کرپڑھنا بہترہے یاکھڑے ہوکر؟ کتاب مالابدمنہ ہندی میں صفحہ ۴۵ سطر۵ میں تحریر ہے کہ بعد وتر کے دورکعت بیٹھ کر پڑھنامستحب ہے۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/30 (997 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ صلٰوۃ التسبیح پڑھنے کی کیاترکیب اور اس کا کیاوقت ہے؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/31 (1022 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ چار رکعت تراویح یا اور نوافل ایک نیت سے پڑھے قعدئہ اولٰی میں درودشریف ودعا اور تیسری رکعت میں سبحٰنک اللھم پڑھے یانہیں؟
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/31 (892 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین کہ رمضان شریف میں لڑکوں کے پیچھے دن میں دوتین بالغ حافظ وغیرہا نماز کے اندرقرآن مجید سنتے ہیں یہ امرمشروع ہے یانہیں؟ بظاہر ف کتب فقہیہ سے مفہو م ہوتاہے کہ نوافل روز میں سرّاً پڑھنا واجب ہے بموجب اس کے لڑکا ہو یابالغ اس کی نماز کراہت تحریمی سے توخالی نہ ہوگی یہ اور بات ہے کہ لڑکے کے ذمہ اعاد ہ واجب نہ ہوا جیسا کہ لڑکا اگرنماز نفل کو فاسد کردے گا تواجماعاً اس کے ذمے قضا نہ آئے گی اور یہ اقتدا لڑکے کے پیچھے مختار مذہب کے موافق توصحیح ہی نہیں ہے اس کے متعلق جواب بالصواب بحوالہ عبارت کتب فقہیہ تحریر فرمائیے، اجرجزیل کے عنداﷲ مستحق ہوجئے۔ بیّنواتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/31 (3425 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین کہ نماز تہجد میں خیرمتین ترجمہ حصن حصین کے دیکھنے سے بروایت چاررکعت اور آٹھ رکعت اور تیرہ رکعت نمازتہجد میں ہے، ایک شخص تہجدگزار اجہل سے معلوم ہوا کہ بارہ رکعت تہجد کی اور ترکیب پڑھنے کی یہ ہے کہ اول رکعت میں ایک مرتبہ قل ہواﷲ شریف دوسری میں دوبار بارھویں میں بارہ مرتبہ یاہررکعت میں تین تین بارقل ھواﷲ شریف پڑھاجائے، یہ سمجھ میں نہیں آتا کہ صحیح کون سا قاعدہ ہے اور تہجد میں کَے رکعت پڑھناچاہئے اور بعدالحمد کے جیسا کہ نماز میں قاعدہ ہے کہ جو سورہ چاہے ملائے، خیرمتین میں قل ھواﷲ پڑھنے کاقاعدہ مسطورہ بالا نہیں لکھاہے اور جو بعد وتر کے دورکعت نفل پڑھے جاتے ہیں ان کو بھی تہجد کے وقت میں پڑھنا چاہئے مثل وتر کے، یا عشاء کے وقت اداکرناچاہئے؟ اور نمازصلٰوۃ التسبیح میں کلمہ تمجیدسبحان اﷲ والحمدﷲ ولاالٰہ الااﷲ واﷲ اکبر ولاحول ولاقوۃ الاباﷲ العظیمایک شخص کہتاہے کہ ہررکعت میں گیارہ گیارہ بارپڑھنا چاہئے۔ چاررکعت میں دورکعت کی نیت کی جائے یاچارکی؟ دعائے ماثورکیاہے معلوم نہیں اور کس موقع پرپڑھی جائے، دعائے تہجد بفرض تصحیح مرسل ہےیامقلب القلوب قلب قلبی الیک مامصرف القلوب صرف قلبی علی دینک وطاعتکاورخیر متین میں سنت فجر میںقل یٰایھا الکٰفرون اور قل ھواﷲپڑھنے کولکھاہے اس ترکیب سے پڑھنا سنت فجر یانفل میں جائز ہے یانہیں؟ اورجیسا کہ فرض میں بقید سورہ پڑھنا ناجائزہے اور سنن ابن ماجہ کے ترجمہ رفع الحاجہ کی دو جلدیں میرے پاس ہیں جن میں تہجد وغیرہ کا ذکرنہیں ہے جلد اول میں ہے اور ایک کتاب وظیفہ میں قل یا اور قل ھواﷲ سنت میں پڑھنے کولکھا ہے اور دوسری میں الم نشرح اور الم ترکیف لکھاہے جوفرض ووتر میں بغرض فلاحیت لکھاہے اور وترمیں اخیررکعت میں قل ھواﷲ پڑھنا ضرورہے یا اور سورہ کوملاکر پڑھنے سے نماز ہوجائے گی؟ بیّنواتوجروا۔
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2012/8/31 (1143 )
کیافرماتے ہیں علمائے دین وصوفیائے محققین اس مسئلہ میں کہ بعد نمازفجر آفتاب طلوع ہونے پر جو نوافل اشراق(دولغایت چھ رکعت) اور ایک پہردن چڑھے پرجونوافل نماز چاشت(دولغایت بارہ رکعت پڑھے جاتے ہیں شرح مشکوٰۃ میں ان نوافل یعنی اشراق اور چاشت ہی کو نماز ضحی لکھاہے، لیکن ایک بزرگ صوفی مشرب نماز ضحی کو ان نوافل یعنی اشراق اور چاشت سے علیحدہ بتاتے ہیں اور خود بھی عرصہ چالیس سال سے اشراق اور چاشت کے علاوہ نمازضحی کے نوافل(دولغایت آٹھ رکعت) علیحدہ پڑھتے ہیں اور کہتے ہیں کہ میرپیرطریقت نے علیحدہ پڑھنابتلایاہے اور ملک سندھ میں عام آدمی نماز ضحی کے نوافل نماز اشراق اور چاشت کے علاوہ علیحدہ پڑھتے ہیں اور بعض علما سے تصدیق کرلینا بھی ظاہرکرتے ہیں چونکہ اس مسئلہ میں اختلاف واقع ہوگیاہے اس لئے استفتاء ہے کہ صحیح طریقہ کیاہے؟ اور نمازضحی، اشراق اور چاشت کے نوافل کو کہتے ہیں یاعلیحدہ نمازہے؟ بیّنواتوجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہفتم باب الوتر و النوافل
  Print article

Published by Admin2 on 2013/6/13 (824 )
کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ وتروں میں رکعتِ ثالث میں امام بجائے قنوت پڑھنے کے تکبیر قنوت کہہ کر رکوع کو چلا گیا اور مقتدیان کی تکبیر کہنے سے واپس ہو کر قنوت پڑھا اور پھر دوبارہ رکوع کیا اور سجدہ سہو کیا نماز ادا ہوگئی یا وتر فاسد ہوئے رکوع میں پورا جھک گیا تھا جب قنوت کی طرف رجوع کی ۔ بینوا توجروا
فتاویٰ رضويه جلد ہشتم باب سجودالسہو
  Print article

RSS Feed
show bar
Quick Menu