• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Namaz / Salat / Prayer / نماز > دیر تک جاگنے سے نماز قضا ہو تو کیا ادا کا ثواب ہے؟

دیر تک جاگنے سے نماز قضا ہو تو کیا ادا کا ثواب ہے؟

Published by Admin2 on 2012/12/2 (1753 reads)
Page:
(1) 2 »

New Page 1

مسئلہ ۱۲۰۴: کتاب ترکیب الصلوٰۃ میں لکھا ہے کہ ایک شخص تین بجے رات سے جاگتا رہا اور وقت نماز صبح صادق سوگیا اورآفتاب نکل آیا تو وہ وقت کی نماز  پڑھے ثواب اس کو  ادا کا ملے گا وقت میں قضا کا لفظ نہ کہے۔

الجواب

اس نماز کے قضا ہوجانے میں شک نہیں کہ نماز کے لئے شرعا اوقات معین ہیں،

قال اﷲ تعالٰی ان الصلوٰۃ کانت علی المومنین کتابا موقوتا ۱؎۔

اﷲ تعالٰی نے فرمایا: بیشک نماز مسلمانوں  پر وقت باندھا ہوا  فرض ہے،

 (1۱؎ القرآن        ۴ /۱۰۳)

اور قضا ہوجانے کے  یہی معنی ہیں کہ شرعاً جو  وقت مقرر فرمایا گیا تھا وہ جاتارہے،

رسول اﷲ تعالٰی علیہ وسلم فرماتے ہیں:ان اللصلوٰۃ اولا واخرا و ان اول وقت الفجر حین یطلع الفجر و ان اخر  وقتھا حین تطلع الشمس۱؎۔ رواہ الترمذی والامام الطحاوی بسند صحیح عن الاعمش عن ابی صالح عن ابی ھریرۃ مطولا وھذا مختصر،

بیشک ہر نماز کے لئے اول واخر ہے اور بیشک نماز صبح کا اول وقت طلوع فجر کے وقت ہے اور اس کا آخر طلوع شمس پر ہے ، اسے امام ترمذی اور امام طحاوی نے بسند صحیح اعمش سے انھوں نے ابوصالح سے اور انھوں نے حضرت ابوہریرہ رضی اﷲ تعالٰی عنہ سے تفصیلاً روایت کیا ہے اور یہ مختصر ہے

 (۱؎ جامع الترمذی     ابواب الصلوٰۃ    باب منہ        مطبوعہ امین کمپنی دہلی       ۱/۲۲)

امام طحاوی فرماتے ہیں:ھذا اتفاق المسلمین ان اول وقت الفجر حین تطلع الفجر واٰخر وقتھا حین تطلع الشمس۲؎ ۔

یعنی اس پر تمام مسلمانوں کا اجمع ہے کہ نماز صبح کا وقت طلوع فجر سے شروع ہوتا ہے  اور طلوع شمس پر جاتا رہتا ہے۔

 (۲؎ شرح معانی الآثار    باب مواقیت الصلوٰۃ            مطبوعہ ایچ ایم سعید کمپنی کراچی    ۱/۱۰۳)

اما ما ذکر فی بعض کتب الفقۃ مرفوعا من نام عن صلوۃ اونسیھا فلیصلھا اذااذکرھا فان ذلک وقتھا فاقول الحدیث فی الصحیحین بلفظ من نسی صلوٰۃ فلیصلھا اذ اذکرھا لاکفارۃ لھا الا ذلک ۳؎

جو بعض کتب فقہ میں مرفوعاً روایت مروی ہے کہ جو شخص نماز سے سوگیا اسے بھول گیا تو وہ جب یاد آجائے اسی وقت نماز ادا کرے کیونکہ یہی اس کا وقت ہے ۔ فاقول (میں کہتا ہوں ) اس حدیث کو بخاری ومسلم نے حضرت انس بن مالک رضی اﷲ تعالی عنہ سے ان الفاظ میں روایت کیا ہے کہ نبی اکرم صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم نے فرمایا : جو نماز بھول گیا وہ یاد آنے پر ادا کرے اس نماز کا کفارہ سوائے اس کے کچھ نہیں

 (۳؎ صحیح البخاری    باب من نسی صلوٰۃ فلیصل اذاذکر الخ        قدیمی کتب خانہ کراچی       ۱/۸۴)

(صحیح مسلم        باب قضاء الصلوٰۃ الفائتۃ            نور محمد اصح المطابع کراچی        ۱/۲۴۱)

اخرجاہ عن انس بن مالک رضی اﷲ تعالی عنہ عن النبی صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم،

وفی لفظ لمسلم عنہ من نسی صلوۃ  او نام عنھا فکفارتھا ان یصلھا اذاذکرھا ۴؎

مسلم شریف میں انہی سے یہ روایت ان الفاظ میں ہے جو شخص نماز ادا کرنا بھول گیا یا سو گیا نماز رہ گئی تو اس کا کفارہ یہ ہے کہ جب یاد آئے اسے ادا کرے ۔

 (۴۔ صحیح مسلم        باب قضاء الصلوٰۃ الفائتۃ            نور محمد اصح المطابع کراچی        ۱/۲۴۱)

وفی اٰخر لہ انہ فلیصلھا اذاذکرھا فان اﷲ عزو جل یقول اقم الصلوۃ لذکری ۵؎

مسلم کی دوسری روایت جو اسی صحابی سے مروی ہے یہ الفاظ ہیں کہ جب نماز یاد آئے تو اسے ادا کر ے کیونکہ اﷲ تعالٰی کا فرمان ہے نماز میری یاد کے لئے قائم کرو۔

 (۴و۵۔ صحیح مسلم        باب قضاء الصلوٰۃ الفائتۃ            نور محمد اصح المطابع کراچی      ۱/۲۴۱)

ولہ عن ابی قتادہ رضی اﷲ تعالٰی عنہ بلفظ فلیصلھا حین ینتبہ لھا فاذاکان الغد فلیصلہا عند وقتھا۱؎

اور مسلم نے حضرت ابو قتادہ رضی اﷲ تعالٰی عنہ سے یہ الفاظ روایت کئے ہیں کہ وہ شخص جب بیدار ہو تو ادا کرے اور جب دوسرا  دن آئے تو اسے وقت پر ادا کرے ۔

 (۱؎ صحیح مسلم   کتاب المساجد باب قضاء الصلوٰۃ الفائتۃ   مطبوعہ نور محمد اصح المطابع کراچی   ۱/ ۲۳۹)

ولہ کالستۃ الا البخاری والترمذی عن ابی ھریرۃ رضی اﷲ تعالٰی عنہ کا خر الفاظہ عن انس رضی اﷲ تعالیی عنہ وللتر مذی وصححہٖ والنسائی فی حدیث ابی قتادہ رضی اﷲ تعالٰی عنہ فلیصلھا اذا ذکرھا ۲؎

بخاری کے سوا صحاح ستہ میں ایسے ہی ہے ۔ ترمذی نے حضرت ابو ہریرہ رضی اﷲ تعالٰی عنہ سے حدیث کے آخر ی الفاظ اس طرح نقل کئے ہیں جو حضرت انس رضی اﷲ تعالٰی عنہ سے بھی مروی ہیں، ترمذی اور نسائی میں حضرت ابو قتاوہ رضی اﷲ تعالٰی عنہ سے مروی حدیث میں ہے ، پس اسے  پڑھ لے جب اسے یاد ائے ، ترمذی نے اس روایت کو صحیح کہا ہے

 (۲؎ جامع الترمذی    ابواب الصلوٰۃ   باب ماجاء فی النوم عن الصلوٰۃ    مطبوعہ  امین کمپنی کراچی     ۱/۲۵)

(سنن النسائی   کتاب المواقیت    فیمن نام عن صلوٰۃ        مطبوعہ  المکتبۃ السلفیہ لاہور        ۱/۷۱)

Page:
(1) 2 »

Navigate through the articles
Previous article قضاعمری ادا کرنے کی حالت میں نفل قبول ہوں گے؟ چالیس سال نمازنہ پڑھےاب تجدیدایمان کرےنمازمعاف Next article
Rating 2.75/5
Rating: 2.8/5 (298 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu