• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Namaz / Salat / Prayer / نماز > پہلا قعدہ بھول کر کھڑا ہونے لگےیاد آنے پر کیا کرے

پہلا قعدہ بھول کر کھڑا ہونے لگےیاد آنے پر کیا کرے

Published by Admin2 on 2013/6/6 (926 reads)

New Page 1

مسئلہ۱۲۲۳ : از شہر کہنہ بریلی ۱۱ جمادی الآخر ۱۳۱۷ھ

چہ می فرمایند علمائے دین دریں مسئلہ کہ ترک آرد  قعدہ اولٰی  را لیکن باستادن نزدیک ترشد  آں گاہ نشست بازباقی نماز گزارد دریں حال نماز  او  جائز است یا نے ؟  بینوا  توجروا

علمائے دین اس مسئلہ میں کیا فرماتے ہیں کہ نمازی نے  پہلا قعدہ ترک کردیا، وہ سیدھا کھڑا ہونے کے قریب تھا وہاں سے لوٹ آیا اور  باقی نماز ادا کی اس صورت میں نماز جائز ہوگی یا نہیں؟ بینوا توجروا

الجواب

ہر کہ در فرض یا وتر قعدہٕ اولٰی فراموش کردہ استادہ تابتمام ایستادہ نشود بسوئے قعود رجو عش باید پس اگر ہنوز  بقعود اقرب بود سجدہ سہو نیست و اگر بقیام نزدیک ترشدہ باشد سجدہ سہو لازم آید تانیمہ زیریں ازبدن انسان راست نشدہ است بہ نشستن نزدیک است وچوں ایں نصف راست شدوپشت ہنوز خمیدہ است با ستادن قریب است واگر بتمامہ راست ایستاد آنگاہ نشستن روا نیست اگر بقعدہ اولٰی بازمیگر د د گناہگار شود اما راجح آنست کہ نماز  دریں صورت ہم از دست نرود وسجدہ سہو  واجب شود۔

جو شخص فرض یا وتر کا قعدہ اولٰی بھول کر کھڑا ہوجائے اگر سیدھا کھڑا نہیں ہوا  تھا تو اسے قعدہ کی طرف لوٹ آنا چاہئے اب اگر  بیٹھنے کے قریب تھا تو اس پر سجدہ سہو لازم نہیں اور اگر قیام کے قریب تھا تو سجدہ سہو لازم ہوگا، جب بدن کا پچھلا حصہ سیدھا نہیں ہوا تو وہ بیٹھنے کے قریب ہوگا اور اگر نصف حصہ سیدھا ہوگیا مگر  پشت ابھی ٹیڑھی تھی تو وہ کھڑے ہونے کے قریب ہے، اور اگر سیدھا کھڑا ہوگیا تو اس وقت بیٹھنا جائز نہیں، اب اگر قعدہ اولٰی کی طرف لوٹتا ہے تو گناہگار ہوگا لیکن راجح  یہی ہے کہ اس صورت میں بھی نماز باطل نہ ہوگی سجدہ سہو لازم ہوگا۔

فی الدرالمختار سھا عن القعود الاول ولو عملیا ثم تذکرہ عادالیہ ولا سھو علیہ فی الاصح مالم یستقم قائما فی ظاھر المذھب وھوالاصح فتح وان استقام قائما لا یعود فلو عاد لاتفسد لکنہ یکون مسیئا  ویسجد لتاخیر الواجب وھوالا شبہ کما حققہ الکمال وھوالحق بحر ۱؎اھ مختصرا

درمختار میں ہے (اگر نمازی فرض کے قعدہ اولٰی میں بھول گیا) اگر چہ فرض عملی ہو پھر یاد آگیا تو اس کی طرف لوٹ آئے اور اصح قول کے مطابق سجدہ سہو نہ ہوگا جب تک وہ سیدھا کھڑا نہ ہوجائے، ظاہر مذہب یہی ہے اور یہی اصح ہے فتح، اور اگر سیدھا کھڑا ہوگیا تو نہ لوٹے اگر لوٹ آیا تو نماز فاسد نہ ہوگی البتہ گناہگار ہوگا، تاخیر واجب کی وجہ سے سجدہ سہو کرے یہی مختار ہے جیسا کہ اس کی تحقیق کمال نے کی اور یہی حق ہے بحر اھ اختصاراً،

 (۱؎ درمختار    باب سجودالسہو        مطبوعہ مطبع مجتبائی دہلی   ۱ /۱۰۲)

وفی ردالمحتار قولہ ولا سھو علیہ فی الاصح یعنی اذاعادقبل ان یستقیم قائما وکان الی القعود اقرب فانہ لاسجود علیہ فی الاصح وعلیہ الاکثر اما  اذا عاد و ھو الی  القیام اقرب فعلیہ سجود السھو کما فی نورالایضاح وشرحہ بلاحکایۃ خلاف فیہ وصحح اعتبار ذلک فی الفتح بما فی الکافی ان استوی النصف الاسفل وظھرہ بعد منحن فھو اقرب الی القیام، وان لم یستو  فھو  اقرب الی القعود، قولہ لکنہ یکون مسیئا  ای ویاثم کما فی الفتح فلوکان اماما لا یعود معہ القوم تحقیقا للمخالفۃ ویلزمہ القیام للحال شرح المنیۃ عن القنیۃ ۱؎ اھ ملتقطا۔ واﷲ تعالٰی اعلم

ردالمحتار میں ہے کہ ماتن کا قول کہ ''اس پر اصح قول کے سجدہ نہیں یعنی جب وہ سیدھا کھڑا ہونے سے پہلے پہلے لوٹا اور وہ بیٹھنے کے قریب تھا تو اب اس پر سجدہ نہیں ، یہی اصح ہے اور اکثر کا قول ہے، جب وہ لوٹا حالانکہ قیام کے قریب تھا تو اب اس پر سجدہ سہو لازم ہوگا جیسا کہ نورالایضاح اور اس کی شرح میں اس مسئلہ کو بغیر کسی اختلاف کے ذکر کیا ہے اور کافی کی عبارت کو فتح میں صحیح کہا ہے کہ اگر نمازی کا نصف سیدھا ہوگیا حالانکہ پشت ابھی ٹیڑھی تھی تو یہ قیام کے قریب ہوگا اور اگر نصف اسفل سیدھا نہیں تو وہ قعود کے قریب ہے۔ ماتن کے قول '' یکون مسیئا'' کا معنٰی یہ ہے کہ وہ گناہگار ہے فتح، اوراگر وہ امام ہے تو وہ نہ لوٹے اور لوٹ گیا تو نماز فاسد نہ ہوگی لیکن گناہگار ہوگا۔ اور واجب کی تاخیر کی وجہ سے سجدہ سہو کرے، یہی اشبہ بالحق ہے جیسا کہ کمال نے اس کی تحقیق کی، اور یہی حق ہے بحر اھ مختصراً۔ اس پر فی الحال قیام لازم ہے شرح منیہ میں قنیہ کے حوالے سے ہے اھ ملتقطا واﷲ سبحنہ وتعالٰی اعلم

 (۱ ؎ ردالمحتار    باب سجود السہو        مطبوعہ مصطفی البابی مصر    ۱ /۵۵۰)


Navigate through the articles
Previous article الحمد پڑھنے کےبعد اگلی سورت سوچنے تاخیر ہوجائےتو جسے بھولنے کا مرض ہو وہ نماز کیسے پڑھے Next article
Rating 2.99/5
Rating: 3.0/5 (257 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu