• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Juma & Eid Prayer / جمعہ و عیدین > خطیب خطبہ کے معانی اگاہ نہ ہو جمعہ جائز ہے یا نہیں؟

خطیب خطبہ کے معانی اگاہ نہ ہو جمعہ جائز ہے یا نہیں؟

Published by Admin2 on 2013/10/28 (1291 reads)
Page:
(1) 2 »

New Page 1

مسئلہ ۱۲۷۸: مرسلہ مولوی الہ یار خاں صاحب ۲۱ ذی الحجہ ۱۳۰۵ھ

کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ یہ جو فتاوٰی   ابوالبرکات میں لکھا ہے

لا تجوز الجمعۃ حتی یعلم الخطیب معناہ ( جب خطیب ، خطبہ کے معانی اگاہ نہ ہو جمعہ جائز نہیں۔ ت) یہ صحیح ہے یا کیا: بینوا توجروا

الجواب

خطیب کا معنی عبارت خطبہ سمجھنا شرط کیا ، معنی ہر گز واجب بھی نہیں کہ آثم کہہ سکیں ، جمعہ ناجائز ہونا تو درکنار اگریہ قول صحیح ہوتا واجب تھا کہ کتب مشہور ہ متداولہ اس کی تصریحوں سے مالا مال ہوتیں ایسا نہایت ضروری مسئلہ جس پر نماز فرض کے صحتِ وبطلان کا مدار ہو اور متون وشروح وفتاوٰی   کہیں اس کا پتا نہ دیں ہر گز عقل سلیم اسے قبول نہیں کرسکتی ولہذا مجتبٰی   میں جو بہت سی شرائط نیت نمازفرض و نفل میں ذکر کیں جب کا تصانیف معتمدہ میں وجود نہ تھا علماء نے اسی وجہ سے ان کی طرف اصلاً التفات نہ فرمایا ،

اشباہ میں ہے:من الغریب مافی المجتبٰی   لابد من نیۃ العبادۃ والطاعۃ والقربۃ وانہ یفعلھا مصلحۃ لہ فی دینہ وان یکون اقرب الی ماوجب عندہ عقلا عہ من الفعل واداء الا مانۃ وابعد عما حرم علیہ من الظلم وکفران النعمۃ ثم ھذہ النیات من اول الصلٰوۃ الٰی   اٰخرھا خصوصا عند الانتقال من رکن الی رکن ولا بد من نیۃ العبادۃ فی کل رکن والنفل کالفرض فیھا الافی وجہ واحد وھو ان ینوی فی النوافل انھا لطف  فی الفرائض و تسھیل لھا ۱؎ اھ ملخصاعجیب ہے وہ چیزیں جس کا تذکرہ مجتبٰی   میں ہے کہ نیت عبادت طاعت اورثواب کا ہونا ضروری ہے، اوریہ بھی ضروری ہے کہ وہ اسے اپنے دین کی مصلحت کی اور عقلا واجب شدہ عمل اور ادائیگی امانت سے قریب اور حرام شدہ ظلم اور کفرانِ نعمت سے بُعد کی خاطر کررہا ہے _______ پھر یہ نیت اول نماز سے لے کر آخرتک خصوصاً جب ایک رکن سے دوسرے رکن کی طرف انتقال ہو، اور ہر رکن میں عبادت کی نیت ضروری ہے اور اس معاملہ میں نفل بھی فرض کی طرح ہے مگر ایک صورت میں ، اور وہ یہ ہے نوافل میں یہ ارادہ کرے کہ یہ فرائض میں لطف اور ان میں آسانی کے لئے ہیں اھ ملخصاً (ت)

عہ : قلت افصح الزاھدی ھھنا عن اعتزالہ فان الوجوب عنداھل الحق شرعی لاعقلی ۱۲منہ (م)

میں کہتا ہو ں زاہدی نے یہاں اپنے معتزلہ ہونے کا اظہار کیا ہے کیونکہ اہل حق کے نزدیک فعل شرعی ہوتا ہے عقلی نہیں ہوتا  ۱۲ منہ (ت)

 (۱؎ الاشباہ والنظائر        الفن الاول قاعدہ ثانیہ    مطبوعہ ادارۃ القرآن وعلوم اسلامیہ کراچی      ۱/۷۰۔۶۹)

غمز العیون میں ہے :اما الغرابۃ فی کون ھذہ الاشیاء لابدمن نیتھا فان الفقھاء لم یذکروا ذلک فی کتبھم متونا وشروحا وفتاوٰی   ۲؎ اھان اشیاء کی غرابت یہ ہے کہ اس کی نیت کا ہونا ضروری قراردیا گیا ہے حالانکہ فقہاء نے یہ بات اپنی کتب کے متون وشروح اور فتاوٰی   میں کہیں نہیں لکھی اھ (ت)

 (۲؎ غمز عیون البصائر شرح الاشباہ والنظائر قاعدہ ثانیہ  مطبوعہ ادارۃ القرآن وعلوم اسلامیہ کراچی    ۱/۷۰)

اور مجتبٰی   اگر چہ مثل سائر تصانیف زاہدی کتب معتمدہ سے نہیں تاہم مشہور مصنف  کی  مشہور تصنیف ہے  جس سے علماء مابعد نے صدہا مسائل نقل فرمائے مگر ایسے  ہی نوادر غرائب کے باعث پایہ اعتماد سے ساقط ہوئی پھر بالفرض اگر فتاوٰی   ابوالبرکات کا یہ مطلب ہو بھی تو اس قسم کے فتاوی ایک بات اور وہ بھی اتنی بے ثبات جس پر شروع سے اصلاً دلیل نہیں، کیونکر ادنٰی   التفات کے قابل ہوسکتی ہے، اس میں شک نہیں کہ تدبرمعنی جمال محمود وکمال مقصود ہے مگر فقہائے کرام نے عموماً عبادات کے کسی ذکر میں نفس نیت کے سواقلب کاکوئی حصہ ایسا نہیں رکھا جس پر فساد و صحت کی بنا ہو یہاں تک کہ اصل حضور قلب جس کے معنی یہ ہیں کہ صدور فعل وقول پر متنبہ ہو اگر چہ معنی کلام نہ سمجھے یہ بھی صحتِ نماز کے لئے ضروری نہیں،

ملتقط وخزانہ وسراجیہ وشرح قیدانی للقہستانی وغمز العیون وردالمحتار وغیرہا میں ہے :لا یعتبر قول من قال لا قیمۃ لصلوۃ من لم یکن قلبہ فیھا معہ ۳۳؎۔اس کا قول معتبر نہیں جس نے کہا کہ اس شخص کی نماز کی کوئی قیمت نہیں جس کے ساتھ اس کا دل نہ تھا (ت)

 (۳؎ردالمحتار       باب شروط الصلٰوۃ     مطبوعہ مصطفی البابی مصر            ۱/۳۰۷)

Page:
(1) 2 »

Navigate through the articles
بعد جمعہ چار رکعت کی ہر رکعت میں سورت ملائیں؟ Next article
Rating 2.79/5
Rating: 2.8/5 (205 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu