• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Death / Funeral / Graves / موت / جنازہ / قبر > ریشمی کپڑا یا رنگ برنگی چادریں میت پر ڈالنے کا حکم

ریشمی کپڑا یا رنگ برنگی چادریں میت پر ڈالنے کا حکم

Published by Admin2 on 2013/12/6 (799 reads)

New Page 1

مسئلہ نمبر۱۸: از سورت اسٹیشن سائن، موضع کٹھور،   مرسلہ مولوی عبدالحق صاحب     ۲۱جمادی الاولٰی  ۱۳۰۹ھ

کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں یہاں رواج ہے کہ شخص میت کو بعد تغسیل وتکفین کے جنازے میں رکھتے ہیں، اور جنازہ کی چھتری پر غلاف ڈال کے مُردے کے واسطے شال اور عورت کے واسطے دامنی ڈالا کرتے ہیں اورپھر اس شال یا دامنی کو پھولوں کی ایک چادر بنا کر ڈالتے ہیں تو آیا یہ امر واسطے مرد کے کرنا شرعاً جائز ہے یانہیں؟ بینواتوجروا

الجواب

جنازہ  زنان پر چھتری یا گہوارہ بنا کر غلاف وپردہ ڈالنا مستحب وماثور ہے، ایسا ہی چاہئے، اور جنازہ مرداں میں نہ اس کی حاجت نہ سلف سے عادت ۔ہاں بارش یا دھوپ وغیرہ کی شدت سے بچانے کو بنائیں تو کچھ حرج نہیں، فی کشف الغطاء (کشف الغطاء میں ہے):اولٰی  آنست کہ پوشیدہ شود جنازہ زنان را ومستحسن داشتہ اند گرفتن صندوق رابرائے وے نہ بروئے مرد۔ مگر آن کہ ضرورتے داعی باشد چون خوفِ باران وبرف وشدّتِ گرماونحوآن۱؎ ۔عورتوں کے جنازہ کو چھپادینا بہتر ہے اور اس کے لئے صندوق بنانا علماء نے مستحسن قرار دیا ہے مرد کے لئے نہیں، مگر یہ کوئی ضرورت داعی ہو بارش اور برف کا اندیشہ ہو یا سخت گرمی وغیرہ ہو۔(ت)

 (۱؎ کشف الغطاء   فصل پنجم   مطبع احمدی دہلی ص ۳۲)

اور دوشالہ وغیرہ بیش بہا کپڑے ڈالنے سے اگر ریاء وتفاخر ہو تو وہ حرام ہے نہ کہ خاص معاملہ میت واولین منازل آخرت میں، اوراگر زینت مراد ہو تو وہ بھی مکروہ۔فی الشامیہ عن الطحطاویۃ ویکرہ فیہ کل ماکان للزینۃ۲؎ ۔شامی میں طحطاوی کے حوالے سے ہےـ: اس میں وُہ سب مکروہ ہے جو زینت کے لئے ہو۔(ت)

 (۲؎ ردالمحتار     باب صلٰوۃ الجنائز     مطبوعہ ادارۃ الطباعۃ المصریہ مصر    ۱ /۵۷۸)

ہاں تصدق منظور ہو تو بے شک محمود۔ مگر تصدق کچھ اس طرح اس پر موقوف نہیں کہ جنازہ پر ڈال ہی کر دیں۔ یونہی پھولوں کی چادر بہ نیتِ زینت مکروہ، اور اگر اس قصد سے ہو کہ وہ بحکم احادیث خفیف الحل وطیب الرائحہ ومسبحِ خداومونسِ میّت ہے تو حرج نہیں۔کما فی القبور ففی الھندیۃ وغیرھا وضع الورد والریاحین علی القبور حسن۳؎الخ واﷲتعالٰی اعلم۔جیسے قبروں میں کہ ہندیہ وغیرہا میں ہے : قبروں پر گلاب وغیرہ کے پھول رکھنا اچھا ہے الخ واﷲ تعالٰی  اعلم (ت)

 (۳؎ فتاوٰی  ہندیہ      الباب السادس عشر زیارۃ القبور    مطبوعہ نورانی کتب خانہ پشاور     ۵/۳۵۱)


Navigate through the articles
مرتے وقت صرف لا الہ الا اللہ کہنا کافی ہے؟ Next article
Rating 2.89/5
Rating: 2.9/5 (213 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu