• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Death / Funeral / Graves / موت / جنازہ / قبر > کیا بے نمازی کی نماز جنازہ پڑھنا منع ہے؟

کیا بے نمازی کی نماز جنازہ پڑھنا منع ہے؟

Published by Admin2 on 2013/12/16 (1463 reads)

New Page 1

مسئلہ نمبر  ۲۷: از موضع شرشدی جونیر مدرسہ ڈاکخانہ فیسنی ضلع نواکھالی     مرسلہ مولوی عبدالکریم

۲۶ جمادی الاُخری ۱۳۳۸ھماقول علمائنا رحمھم اﷲ (ہمارے علمائے کرام رحمہم اﷲ کیا فرماتے ہیں۔ت) ایک حنفی عالم کہتا ہے کہ بے نمازی کافر و مرتد ہے اس پر نمازِ جنازہ پڑھنا جائز نہیں اور اس کو مسلمانوں کے قبرستان میں دفن نہ کرنا چاہئے۔ اس عالم کا قول مردود ہے یا نہیں؟  تین شخصوں کے بے نمازِ جنازہ دفن کرادیا ہے اس  پر شرعاً کیا وعید عاءد  ہوسکتی ہے؟ دُنیا میں ایسا مسلمان نہیں جو گاہ بگاہ پنجگانہ و عید نہ پڑھتا ہو ۔

الجواب

ایمان وتصحیح عقائد کے بعد جملہ حقوق اﷲ میں سب سے اہم واعظم نماز ہے۔ جمعہ وعیدین یا بلا پابندی پنجگانہ پڑھنا ہرگز نجات کاذمہ دار نہیں۔ جس نے قصداً ایک وقت کی نماز چھوڑی ہزاروں برس جہنم میں رہنے کا مستحق ہوا، جب تک توبہ نہ کرے اور اس کی قضا نہ کرلے، مسلمان اگر اُس  کی زندگی میں اُسے یکلخت چھوڑ دیں اُس سے بات نہ کریں، اُس کے پاس نہ بیٹھیں ، تو ضرور  اس کا سزا وار ہے۔اﷲ تعالٰی  فرماتا ہے :واماینسینّک الشیطٰن فلاتقعدبعد الذکرٰی مع القوم المظّٰلمین۱ ؎۔اگر شیطان تجھے بھُلادے تویاد آنے کے بعد ظالموں کے ساتھ نہ بیٹھنا۔(ت)

(۱؎ القرآن        ۶ /۶۷)

مگر بعد موت ہر سنّی صحیح العقیدہ کو غسل وکفن دینا، اس کے جنازے کی نماز پڑھناالّامااستثنٰی ولیس ھذامنھم (اگر وہ جن کا استثناء کیا گیا ہے اور یہ ان میں سے نہیں۔ت) فرض قطعی علی الکفایہ ہے۔ اگر سب چھوڑ دیں جن جن کو اطلاع تھی سب گنہگار و تارک فرض ومستحق عذاب ہوں گے۔ جس نے تین مسلمانوں جو بے نماز دفن کرادیا فاسق، مرتکبِ کبیرہ، مستوجب سزائے شدید ہوا، بے نماز کے نماز کو فرض جانتاہو  اس کی تحقیر نہ کرتا اگرچہ نفس وشیطان کے پھندے میں آکر نہ پڑھتا ہو مرتکب کبائر ہے، مستحقِ عذابِ نار ہے، مگر کافر نہیں، باغی نہیں، ڈاکو نہیں، ایک تباہ کار مسلمان ہے۔  رسول اﷲ صلی اﷲتعالٰی  علیہ وسلم فرماتے ہیں :الصلٰوۃ واجبۃ علیکم علٰی کل مسلم یموت براکان اوفاجراوان ھو عمل الکبائر ۲؎۔تم پر ہر مسلمان کی نمازِ جنازہ فرض ہے نیک ہو یا بدکار اور اگرچہ وہ گناہ کبیرہ کا مرتکب ہو ۔(ت)

(۲؎ سنن ابو داؤد    کتاب الجہاد        مطبوعہ آفتاب عالم پریس ،لاہور        ۱/۳۴۳)

اور فرماتے ہیں صلی اﷲ تعالٰی  علیہ وسلم :الدواوین ثلثۃ فدیوان لایغفراﷲ منہ شیئا ، ودیوان لایعبأ اﷲ منہ شیئا، ودیوان لایترک اﷲ منہ شیئا،فامّا الدیوان الذی لایغفراﷲ منہ شیئا، فلاشراک اﷲباﷲ، واماالدایون الذی لایعباء اﷲ منہ شیئاا فظلم العبد نفسہ فیما بینہ وبین ربہ من صوم یوم ترک اوصلاۃ ترکھا فان اﷲتعالٰی یغفرذلک ان شاؤیتجاوز، وامادیوان الذی لایترک اﷲ منہ شیئافمظالم العباد بینھم القصاص لامحالۃ۱؎ رواہ الامام احمد والحاکم فی المستدرک عن ام المؤمنین الصدیقۃ رضی اﷲ تعالٰی عنھا۔دفتر تین ہیں، ایک دفتر میں سے اﷲتعالٰی  کچھ معاف نہ فرمائے گا، اور دوسرے کی اﷲ کو کچھ پرواہ نہیں، اور تیسرے میں اﷲ کچھ نہ چھوڑے گا، وہ دفتر جس میں اﷲ تعالٰی  کچھ معاف نہ فرمائے گا دفترِ کفر ہے۔ اورجس کی اﷲ کو کچھ پرواہ نہیں وہ بندے کا اپنے رب کے معاملے میں اپنی جان پر  ظلم کرنا کہ کسی دن کا روزہ چھوڑ دیا یا نماز چھوڑ دی اﷲ تعالٰی  چاہے گا تو معاف فرمادے گا اور درگزر فرمائیگا۔اور وُہ دفتر جس میں سے اﷲ تعالٰی  کچھ نہ چھوڑے گا وُہ بندوں کے باہم ایک دوسرے پر ظلم ہیں ان کا بدلہ ضرورہونا۔ اسے امام احمد نے اورمستدرک میں حاکم نے ام المومنین صدیقہ رضی اﷲتعالٰی  عنہا سے روایت کیا ۔

 (۱؎ مسند احمد بن حنبل     مروی عائشہ صدیقہ رضی اﷲ تعالٰی  عنہا    مطبوعہ دارالفکر بیروت       ۶ /۲۴۰

    المستدرک علی الصحیحین    کتاب الاھوال     مطبوعہ دارالفکر بیروت     ۴ ۵۷۵ )

نیز فرماتے ہیں صلی اﷲتعالٰی  علیہ وسلم :خمس صلوات کتبھن اﷲعلی العباد، فمن جاء بھن فلم یضع منھن شیئا استخفافابحقھن کان لہ عنداﷲ عھد ان یدخل فی الجنۃ، ومن لم یات بھن فلیس لہ عنداﷲ عھد، ان شاء عذبہ وان شاء ادکلہ الجنۃ ۲ ؎۔ رواہ الائمۃ مالک واحمد وابوداؤد والنسائی وابن ماجۃ وابن حبان والحاکم والبیہقی بسندصحیح عن عبادۃ بن الصامت رضی اﷲ تعالٰی عنہ۔پانچ نمازیں اﷲ تعالٰی  نے بندوں پرفرض ہیں جو ا نہیں بجالائے اوراُن کے حق کو ہلکا جان کر اُن میں سے کچھ ضائع نہ کرے اﷲ کے پاس عہد ہوکہ اُسے جنّت میں داخل فرمائے اور جو انہیں بجانہ لائے اُس کے لئے اﷲ کے پاس عہد نہیں کہ چاہے اسے عذاب کرے چاہے  اسے جنّت میں داخل کرے۔ اسے امام مالک،امام احمد، ابوداؤد، نسائی، ابنِ ماجہ، ابنِ حبان، حاکم اوربیہقی نے بسندِ صحیح حضرت عبادہ بن صامت رضی اﷲتعالٰی  عنہ سے روایت کیا۔

 (۲؎ سنن ابوداؤد    باب فیمن لم یوتر      مطبوعہ  آفتاب عالم پریس لاہور   ۱ /۲۰۱

مسند احمد بن حنبل    مروی از عبادہ بن الصامت    مطبوعہ  دارالفکر بیروت    ۵/ ۳۱۵)

دُرمختار میں ہے :ھی فرض علٰی کل مسلم مات خلا اربعۃ بغاۃ وقطاع طریق اذاقتلوافی الحرب وکذا مکابرفی مصرلیلابسلاح وخناق وقاتل احد ابویہ الحقق فی النھر بالبغاۃ ۱ ؎ (ملخصا) واﷲ تعالٰی اعلم۔ہرمسلمان کی نمازِ جنازہ فرض ہے سوائے چار کے، باغی، رہزن، جبکہ یہ لڑائی میں مارے گئے ہوں۔ اسی طرح رات کو شہر کے اندر ہتھیار لے کر لوٹ مار کرنے والا، گلادباکر مارنےوالا، اپنے ماں باپ میں سے کسی کو قتل کرنے والا، نہر میں اسے بھی باغیوں سے لاحق کیا ہے(ملخصاً) واﷲ تعالٰی  اعلم(ت)

 (۱؎ درمختار        باب صلٰوۃ الجنائز        مطبوعہ مطبع مجتبائی دہلی        ۱ /۱۲۲)


Navigate through the articles
Previous article مرتے وقت صرف لا الہ الا اللہ کہنا کافی ہے؟ بعد جنازہ فاتحہ و سورہ اخلاص کا ثبوت Next article
Rating 2.68/5
Rating: 2.7/5 (206 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu