• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Death / Funeral / Graves / موت / جنازہ / قبر > قبر شق بنانا جائز ہے یا نہیں؟

قبر شق بنانا جائز ہے یا نہیں؟

Published by Admin2 on 2014/5/29 (728 reads)

New Page 1

مسئلہ ۸۹: از شہر بریلی، مدرسہ اہلسنت وجماعت، مسئولہ مولوی رجب الدین یکے از طلبائے مدرسہ مذکور ۴ ذی الحجہ ۱۳۲۱ھبسم اﷲ الرحمٰن الرحیم ،کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ ایک شخص یہ کہتا ہے کہ قبر شق اکثر ملک میں جو اہل اسلام بناتے ہیں ، خلاف اور ناجائز طریقے سے بناتے ہی جس کا نقشہ یہ ہے۔

بلکہ قبر شق کی صور ت میں وہ یہ بتاتاہے کہ نقشہ مذکورہ کے درمیان اورایک بہت چھوٹی سی مثل نہر کے شق بناکر۔ اُ س نہر صغیر میں نقش قبلہ رُخ دائیں کروٹ پر رکھیں۔ اور شق اسی کو کہتے ہیں ۔ نقشہ یہ ہے: 

آیا یہ صورت ثانی جو شخص مذکورہ نے ایجاد کی ہے وہ صحیح ہے یا نہیں، اور شق سے یہی مراد ہے؟ اور عبارت علمگیری میں ہے:ان تحفر حفیرۃ کالنھر وسط القبر ۱؎ ( قبر کے درمیان میں نہر کی طرح ایک گڑھا کھود ا جائے ۔ت) اس حفیرہ سے یہی صورت ثانیہ مراد ہے یا اول اُ س کا یہ قول جو اکثر ملکوں میں مروج ہے یہ حفیرہ ہے یعنی قبر اور بعد کھود نے قبر کے نہر صغیر بنا کر مُردہ کواس میں رکھے اسی کو شق کہتے ہیں جو کہ نہر کے نیچے آدھ گز سے بھی کم ہوگی۔ پس حضرات مفیتانِ عظام وعلمائے کرام کثرہم اﷲ تعالٰی اس مسئلہ میں غور فرماکر موافق مذہب حنفی بحوالہ کتب فتوٰی دیں عند اﷲ اجرِ عظیم پائیں۔

(۱ ؎ فتاوٰی ہندیۃ        الفصل السادس فی القبر و الدفن الخ    نورانی کتب خانہ پشاور    ۱ /۱۶۶)

الجواب

شق کی معنی یہ ہے کہ اول ایک مستطیل زیادہ عریض وطویل کھودیں پھر اس کے وسط میں دوسرا مستطیل اُس سے چھوٹا اور طویل میں قامت میّت سے کچھ زائد اور عریض میں نصف قامت کے برابر اور عمق میں سینہ تک یا قدآدم کھودیں۔ اس دوسرے مستطیل میں میّت کو قبلہ رُو رکھیں اور اس کے اوپر مستطیل اول کے اندر تختوں وغیرہ سے بند کرکے مستطیل اول کی جگہ مٹی سے بھردیں اور سطح زمین سے پاؤ گز بلند مٹی رکھیں۔ یہی طریقہ شق کا ہے او ریہی ہندوستان میں معمول ہے۔ اوریہی عبارتِ علمگیریہ کا مفہوم ہے۔ پہلی صورت کہ صرف ایک مستطیل کھودیں او راس میں میّت کو رکھ کر مٹی بھردیں یا تختے رُوئے زمیں پر رکھ کر اُن میں مٹی ڈال دیں، نہ شق ہے نہ ہندوستان خواہ کسی ملک میں رائج ہے۔ عالمگیریہ میں ہے :صفۃ الشق ان تحفر حفیرۃ کالنھروسط القبر  ویبنی جانباہ باللین اوغیرہ ویوضع المیّت فیہ ویسقف کذافی معراج الدرایۃ ۲؎۔ واﷲ تعالٰی اعلمشق کی صورت یہ ہے کہ قبر کے بیچ میں نہرکی طرح مسطیل ایک گڑھا کھودا جائے جس کے دونوں کنارے کچّی اینٹوں یا کسی اور چیز سے بنادیں او راس میں میّت کو رکھ کر اُوپر سے چھت کی طرح بند کردیں۔ا یسا ہی معراج الدرایۃمیں ہے۔ واﷲ تعالٰی اعلم (ت)

( ۲؎ فتاوٰی ہندیۃ   الفصل السادس فی القبر و الدفن الخ    نورانی کتب خانہ پشاور    ۱ /۱۶۶)


Navigate through the articles
Previous article بعد جنازہ فاتحہ و سورہ اخلاص کا ثبوت قبر پر عاشورہ کے دن پانی چھڑکنا کیسا ہے؟ Next article
Rating 2.84/5
Rating: 2.8/5 (227 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu