• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Death / Funeral / Graves / موت / جنازہ / قبر > چہلم کے کھانے کی دعوت قبول کرنی چاہیئے یا نہیں؟

چہلم کے کھانے کی دعوت قبول کرنی چاہیئے یا نہیں؟

Published by Admin2 on 2014/10/22 (1235 reads)
Page:
(1) 2 3 »

New Page 1

مسئلہ۲۶۹: از کلی ناگر ۔ پرگنہ پورن پور، ضلع پیلی بھیت ، مکان علن خاں نمبردار، مرسلہ اکبر علی شاہ ۱۶جمادی الاولٰی ۱۳۱۱ھ

کیا فرماتے ہیں علمائے دین ومفتیان شرع متین اس مسئلہ میں کہ اگر کوئی شخص مرے ا وراس کے گھر والے چہلم کا کھاناپکائیں اور جو برادر یا غیر ہوں ان سے کہیں کہ تمھاری دعوت ہے تووہ دعوت قبول کی جائے یانہیں؟ اور کھانا کیساہے؟ بینوتوجروا

الجواب

اللھم ہدایۃ الحق والصواب۔عرف پر نظر شاہد کہ چہلم وغیرہ کے کھانے پکانے سے لوگوں کا اصل مقصود میّت کوثواب پہنچانا ہوتا ہے، اسی غرض سے یہ فعل کرتے ہیں، ولہٰذا اسے فاتحہ کا کھانا چہلم کی فاتحہ وغیرہ کہتے ہیں، شاہ عبدالعزیز صاحب تفسیر فتح العزیز میں فرماتے ہیں:وارد ست کہ مردہ دریں حالت مانند غریقے است کہ انتظار فریادرسی مے بردو صدقات وادعیہ وفاتحہ درین وقت بسیار بکار اومی آید  ازیں ست کہ طوائف بنی آدم تایک سال وعلی الخصوص تایک چلہ بعد موت درین نوع امداد کوشش تمام می نمایند۔۱؎وار د ہے کہ مردہ اس حالت میں کسی ڈوبنے والے کی طرح فریاد رسی کا منتظر ہوتا ہے اور اس وقت میں صدقے، دعائیں اور فاتحہ اسے بہت کام آتی ہیں، یہی وجہ ہے کہ لوگ مرنے سے ایک سال تک خصوصاً چالیس دن تک اس طرح مدد پہنچانے کی بھرپور کوشش کرتے ہیں

 (۱؎ تفسیر عزیزی    زیر آیۃ والقمر اذ اتسق الخ    مسلم بک ڈپو۔ لال کُنواں دہلی    ص۶۰۲)

اور شک نہیں کہ اس نیت سے جو کھانا پکایا جائے مستحسن ہے اور عند التحقیق صرف فقراء ہی پر تصدق میں ثواب نہیں بلکہ اغنیاء پر بھی مورث ثواب ہے، حضور پر نور سید عالم صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم فرماتے ہیں : فی کل ذات کبد رطبۃ اجر ۲؎ ہر گرم جگر میں ثواب ہے، یعنی زندہ کو کھانا کھلائے گا، پانی پلائے گا ثواب پائے گا۔اخرجہ البخاری ومسلم عن ابی ھریرۃ واحمد عن عبداﷲ بن عمروہ ابن ماجۃ عن سراقۃ بن مالک رضی اﷲ عنہم (اسے بخاری ومسلم نے حضرت ابو ہریرہ سے ، امام احمد نے حضرت عبداﷲ بن عمرو سے، اور ابن ماجہ نے حضرت سراقہ بن مالک سے روایت کیا رضی اﷲ تعالٰی عنہم۔ ت)

(۲؎ سنن ابن ماجہ    باب فضل صدقہ الماء        ایچ ایم سعید کمپنی کراچی    ص۲۷۰)

حدیث میں ہے حضور اقدس صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم نے فرمایا:فیما یاکل ابن آدم اجر وفیما یاکل السبع اوالطیر اجر ۱؎۔ رواہ الحاکم عن جابر بن عبداﷲ رضی اﷲ تعالٰی عنہما وصحح سندہ۔جو کچھ آدمی کھا جائے اس میں ثواب ہے اور جودرندہ کھا جائے اس میں ثواب ہے جو پرند کو پہنچے ا س میں ثواب ہے (حاکم نے اسے حضرت جا بر بن عبداﷲ رضی اﷲ تعالٰی عنہما سے روایت کیا اور اس کی سند کو صحیح کہا۔ ت)

 (۱؎ مستدرک علی الصحیحین       کتاب الاطعمہ      دارالفکر بیروت        ۴ /۱۳۳)

بلکہ حضور اقدس صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم فرماتے ہیں:مااطعمت زوجک فھو لک صدقۃ ومااطعمت ولدک فھو لک صدقۃ ومااطعمت خادمک فھو لک صدقۃ وما  اطعمت نفسک فھو لک صدقۃ۔ ۲؎ اخرجہ الامام احمد والطبرانی فی الکبیر بسند صحیح عن المقدام بن معدی کرب رضی اﷲ تعالٰی عنہ۔جو کچھ تو اپنی عورت کو کھلائے وہ تیرے لیے صدقہ ہے اور جو کچھ تو اپنے بچوں کو کھلائے وہ تیرے لیے صدقہ ہے اور جو کچھ تو خود کھائے وہ تیرے لیے ْصدقہ ہے (اسے امام احمد نے مسند میں اور طبرانی نے کبیر میں بسند صحیح حضرت مقدام بن معدی کرب رضی اﷲ تعالٰی عنہ سے روایت کیا ۔ت)

 (۲؎ المعجم الکبیر مروی از مقدام بن معدی کرب    حدیث ۶۳۴     مکتبہ فیصلیہ بیروت        ۲۰ /۲۶۸)

(مسند احمد بن حنبل    حدیث المقدام بن معدیکرب        دارالفکر بیروت        ۴ /۱۳۱)

Page:
(1) 2 3 »

Navigate through the articles
Previous article گیارھویں شریف کس چیز پر دینی افضل ہے
Rating 2.59/5
Rating: 2.6/5 (206 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu