• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Timing of Prayers / اوقات نماز > سایہ اصلی دو مثل نہ ہو تو عصر کی جماعت ٹھیک ہے

سایہ اصلی دو مثل نہ ہو تو عصر کی جماعت ٹھیک ہے

Published by Admin2 on 2012/5/22 (1825 reads)
Page:
(1) 2 »

New Page 1

مسئلہ (۲۷۳)    از کلکتہ فوجداری بالاخانہ نمبر ۳۶ مرسلہ جناب مرزا غلام قادر بیگ صاحب    ۱۸ جمادی الآخرہ ۱۳۰۸ھ

کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ یہاں کلکتہ میں آج کل آفتاب 61/2بجے طلوع ہوتا ہے اور پونے چھ بجے غروب اور نمازِ عصر پونے چار بجے ادا کی جاتی ہے کہ اُس وقت سایہ سوائے سایہ اصلی کے دو مثل کسی طرح نہیں ہوتا اس صورت میں نماز مذہب مفتی بہ کے موافق ہوئی یا نہیں اور ایسی حالت میں جماعت میں شریک ہونا چاہیئے یا جماعت کا ترک اختیار کیا جائے صرف حکم چاہتا ہوں مجھے دلائل کی ضرورت نہیں، بینوا توجروا۔

الجواب : حضرت سیدنا امام اعظم رضی اللہ تعالٰی عنہ کے نزدیک جب تک سایہ ظل اصلی کے علاوہ دو مثل نہ ہوجائے وقتِ عصر نہیں آتا اور صاحبین کے نزدیک ایک ہی مثل کے بعد آجاتا ہے اگرچہ بعض کتب فتاوٰی وغیرہ تصانیف بعض متاخرین مثل برہان طرابلسی وفیض کرکی ودرمختار میں قول صاحبین کو مرجح بتایا مگر قولِ امام ہی احوط واصح اور ازروئے دلیل ارجح ہے، عموماً متون مذہب قولِ امام پر جزم کیے ہیں اور عامہ اجلہ شارحین نے اُسے مرضی ومختار رکھا اور اکابرائمہ ترجیح وافتا بلکہ جمہور پیشوایانِ مذہب نے اُسی کی تصحیح کی، امام(۱)ملک العلما ابوبکر مسعود نے بدائع اور امام(۲) سرخسی نے محیط میں فرمایا: ھو الصحیح ۳؎ (یہی صحیح ہے)۔ امام(۳) اجل قاضیخان نے اسی کو تقدیم دی اور وہ اسی کو تقدیم دیتے ہیں جو اظہر من حیث الدرایۃ اور اشہر من حیث الروایۃ ہو ۴؎ ۔

 (۳؎ البحرالرائق بحوالہ بدائع کتاب الصّلوٰۃ        مطبوعہ ایچ ایم سعید کمپنی    ۱/۲۴۵)

(۴؎ فتاوٰی قاضی خان    مقدمۃ الکتاب    مطبوعہ نولکشور لکھنؤ انڈیا    ۱/۲)

کمانص علیہ فی خطبۃ الخانیۃ (جیسا کہ خانیہ کے خطبہ میں یہ بات صراحۃً مذکور ہے۔ ت) اور وہی قول معتمد ہوتا ہے کمافی الطحطاوی والشامی (جیسا کہ شامی اور طحطاوی میں ہے۔ ت) یونہی(۴) امام طاہر بخاری نے خلاصہ میں اسے تقدیم دی۔ امام اجل(۵) برہان الدین صاحبِ ہدایۃ نے ہدایہ اور امام(۶) اجل ابوالبرکات نسفی نے کافی اور امام(۷) زیلعی نے تبیین الحقائق میں اسی کی دلیل مرجح رکھی، امام(۸) اجل محبوبی نے اسی کو اختیار فرمایا۔ امام(۹) صدرالشریعۃ نے اسی پر اعتماد کیا وہ چند متأخرین اعنی مصنفین برہان وفیض ودرمختار ان اکابر میں ایک کی بھی جلالتِ شان کو نہیں پہنچتے۔ فتاوٰی(۱۰) غیاثیہ وجواہر(۱۱) اخلاطی میں فرمایا: ھو المختار (یہی مختار ہے) علامہ(۱۲) قاسم نے تصحیح قدوری میں اسی کی تحقیق کی، امام(۱۳) سمعانی نے خزانۃ المفتین میں اسی پر اقتصار فرمایا قول خلاف کا نام بھی نہ لیا، امام(۱۴) محمود عینی نے اسی کی تائید فرمائی، ملتقی(۱۵) الابحر میں اسی کو مقدم رکھا اور وہ اسی کو تقدیم دیتے ہیں جو ارجح ہو کماذکر فی خطبتہ (جیسا کہ اس کے خطبے میں ذکر کیا گیا ہے۔ اور وہی مختار للفتوٰی ہوتا ہے کمافی شرحہ ۱؎ مجمع الانھر (جیسا کہ اس کی شرح مجمع الانہر میں ہے 

(۱؎ مجمع الانہر شرح ملتقی الابحر خطبہ کتاب    مطبوعہ داراحیاء التراث العربی بیروت    ۱/۷)

مراقی(۱۶) الفلاح میں ہے ھو الصحیح وعلیہ جل المشایخ والمتون ۲؎(یہی صحیح ہے اور اسی پر بزرگ مشایخ ومتون مذہب ہیں)

(۲ ؎ مراقی الفلاح مع حاشیۃ الطحطاوی کتاب الصلوٰۃمطبوعہ نور محمد کارخانہ کتب کراچی ص۹۴)

طحطاوی(۱۷) علی المراقی میں ہے صححہ جمھور اھل المذھب ۳؎ (جمہور ائمہ مذہب نے اسی کی تصحیح فرمائی)

(۳؎ مراقی الفلاح مع حاشیۃ الطحطاوی کتاب الصلوٰۃمطبوعہ نور محمد کارخانہ کتب کراچی ص۹۴)

نقایہ(۱۸) میں روایت خلاف کی تضعیف فرمائی شرح(۱۹) المجمع للمصنف میں ہےانہ المذھب واختارہ اصحاب المتون وارتضاہ الشارحون ۴؎ (مذہب یہی ہے اور اسی کو اصحابِ متون نے اختیار فرمایا اور اسی کو شارحین نے مرضی وپسندیدہ رکھا)

( ۴؎ البحرالرائق بحوالہ شرح المجمع کتاب الصلوٰۃ مطبوعہ ایچ ایم سعید کمپنی کراچی۱/۲۴۵)

ینابیع(۲۰) وعلمگیری(۲۱) میں ہے ھو الصحیح ۵؎ (یہی صحیح ہے)

(۵؎ الفتاوٰی الہندیۃ الباب الاول فی المواقیت مطبوعہ نورانی کتب خانہ پشاور ۱/۵۱)

جامع(۲۲) الرموز میں اسی کو مفتٰی بہ بتایا، السراج(۲۳) المنیر میں ہے علی قولہ الفتوی ۶؎ (امام ہی کے قول پر فتوٰی ہے)

(۶؎ السراج المنیر)

Page:
(1) 2 »

Navigate through the articles
Previous article زوال کا زیادہ سے زیادہ وقت کتنا ہے؟ نماز مغرب کا وقت کس وقت شروع ہوتا ہے؟ Next article
Rating 2.71/5
Rating: 2.7/5 (258 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu