• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Timing of Prayers / اوقات نماز > مغرب کے ایک گھنٹے بیس منٹ بعد وقت عشاء آجاتا ہے

مغرب کے ایک گھنٹے بیس منٹ بعد وقت عشاء آجاتا ہے

Published by Admin2 on 2012/5/23 (1332 reads)

New Page 1

مسئلہ (۲۷۹) از ریاست رام پور متصل تالاب کنڈا محلہ میاں نگاناں مکان جناب سیدغلام چشتی صاحب مرسلہئ جناب مولٰنا مولوی محمد یحییٰ صاحب    ۱۲ صفر ۱۳۲۲ھ

کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ قطع نظر شفق سُرخ وسپید کے باتفاق علمائے حنفیہ بعد غروبِ آفتاب کے ایک گھنٹے بیس منٹ کے بعد ہمیشہ وقت عشاء کا آجاتا ہے یا نہیں؟ بینّوا توجّروا۔

الجواب: عشائے متفق علیہ کا وقت ہمیشہ ایک گھنٹہ بیس منٹ بعد ہوجانے کا جبروتی حکم کہ بعض بے علموں نے محض جزافاً لکھ دیا اور گنگوہ ودیوبند کے جاہل وناواقف مُلّاؤں نے اُس کی تصدیق وتوثیق کی۔ بریلی، بدایوں، رامپور، شاہجہان پور، مراد آباد، بجنور، بلند شہر، پیلی بھیت، دہلی، میرٹھ، سہارنپور، دیوبند، گنگوہ وغیرہا بلاد شمالیہ بلکہ عامہ مواضع واضلاع ممالک مغربی وشمالی واودھ وپنجاب وبنگال ووسط ہندو راجپوتانہ غرض معظم آبادی ہندوستان میں محض غلط وباطل اور حلیہ صدق وصواب سے عاری وعاطل ہے ہمارے بلاد اور اُن کے قریب العرض شہروں میں عشا کا اجماعی وقت غروب شرعی شمس کے ایک گھنٹا اُنیس منٹ بعد سے ایک گھنٹا پنتیس۳۵ منٹ بعد تک ہوتا ہے پھر جس قدر شمال کو جائیے وقت بڑھتا جائے گا یہاں تک کہ اقصائے شمالی ہند میں تحویل سرطان کے آس پاس بعد غروب شمس پونے دو۲ گھنٹے سے بھی زائد ایک گھنٹا اڑتالیس۴۸ منٹ تک پہنچتا ہے، دو۲ منٹ کم آدھے گھنٹے کی غلطی ہے کہ شفق احمر وابیض میں اختلافِ ائمہ بھی اُس کی جھونک نہیں اٹھاسکتا ہم اپنے بلاد میں سب سے جلد آنے والے عشا کہ حوالی اعتدالین یعنی ۲۱ مارچ و ۲۴ ستمبر کے اردگرد ہوتی ہے اور سب سے دیر میں ہونے والی عشا کہ تحویلِ سرطان ۲۲ جُون پر ہوتی ہے حساب ہندسی سے پیش کریں جس سے واضح ہوجائے گا کہ اُن بے علم مفتیوں نے شرعِ الٰہی پر جاہلانہ حکم لگادینے میں کس قدر جرأت کی تحویل حمل غروب نجومی وہات انکسار افقی تقریباً قہ تعدیل الایام زائد قہ ح فرق طول شرقی مدارح قہ ح مجموع وت یہ یعنی ۲۱ مارچ کو یہاں غروب شمس تقریباً سواچھ بجے ہے العشاء  (جیب غایۃ الانخفاص ساحہ لرمثل تمام العرض لعدم المیل= نت حہ مرح نخ) = (جیب انخفاض الوقت لح حہ=لح حہ لب الرم )= لد حہ مد مویح -(جیب اوسط=جیب تام العرض لعدم المیل= نت قہ مر مد منحطا)= لح حہ نہ لب سہم قوسہ سط حہ الولح فضل الدائر x ء = ء ت لرمہ تمامہ الی رت نہ الب نہ+(تعدیل الایام وفرق طول زائدین=ماقہ) رت لح ہہ یعنی اُس تاریخ سات بج کر سو ا تینتیس منٹ پر وقتِ عشا آیا اس میں سے سوا چھ گھنٹے تفریق کیے تو ایک گھنٹا سوا اٹھارہ منٹ رہے تحویل سرطان غروب نجومی وت مذح انکسار قہء تعدیل الایام وفرق طول زائدین قہ مجموع رت ح یعنی ۲۲ جون کو یہاں غروب شمس سات بج کر تین منٹ پر ہے وبروجہ ادق تمام العرض حہ سالر۔ میل اعظم الح حہ الر= لح ح ی غایۃ الانحطاط جیبہ لرء حہ لرالونصف قطرہ مو+ انکسار معدل لب قہ نا= مع قہ لرانحطاط الوقت حبیبہ قہ مذلۃ تفاضل الحبیبین لو صہ ح مب ناجیب تمام المیل سوحہ لح= نہ حہ م ء x جیب تمام العرض نب حہ مرح نح منحط= مح حہ الہ لح لح جیب اوسط پس تفاضل حبیبین÷ جیب اوسط منحط = مدحہ نح ط مہ سہم قوسہ عہ حہ الدلوہ فضل الدائر x قہء = ہ ت الح تمام وت نح الب + تعدیل الایام انہ لب + فصل شرقی ح قہ ما = رت ح ہ یوں بھی وہی سات پر تین منٹ آئے۔العشاء لرحہء لرالو۔ح حہ لب الرم = ح حہ لب ط مو÷مح قہ الہ لح لح= الب حہ نرسوسہم قوسہ ناحہ نح وفضل الدائر x ء قہ = ح ت الرلب تمامہ ح ت لب الح+ الب قہ+ قح ما= ح ت لر مایعنی اُس تاریخ ۸ بج کر سواسینتیس منٹ پر عشا ہُوئی تفریق وقت غروب کرنے پر ایک گھنٹے چونتیس منٹ سے قدرے زائد وقت ہُوا بعینہٖ یہی مقداریں وقت صبح کی ہیں ہاں ہمارے بلاد میں صرف بقدر ثلث سال بھر یعنی تقریباً نصف دلو سے نصف حمل اور نصف سنبلہ سے نصف عقرب تک یہ اوقات ایک گھنٹا بیس منٹ کے قریب قریب رہتے ہیں باقی تمام سال میں اُس سے زائد تو دہلی، رامپور، میرٹھ، مظفرنگر، دیوبند، گنگوہ، سہارن پور میں کہ سب بریلی سے شمال کوہیں اور باہم ہر پچھلا پہلے سے زیادہ شمالی ہے ہمیشہ ایک گھنٹا بیس منٹ کیونکر معقول ہے اگرچہ مفتیان جاہل ومخطیان غافل اپنی بیخردی سے تصدیقیں کریں شہادتیں دیں اُس کو اپنے بے بصربے خبر عمائد کا معمول یہ بتائیں وہ بھی نہ فقط عشا بلکہ وقت صبح میں بھی جس کاحاصل یہ کہ سال کے دو۲ تہائی حصّے میں اُن کبر اواذباب سب کے روزے نذر جہل بے حساب اور اُن کی سحری کے ختم بلکہ کبھی شروع سے بھی پہلے جلوہ صبح صادق بے حجاب نسأل اللّٰہ العفو والعافیۃ ولاحول ولاقوۃ الّا باللّٰہ العلی العظیم واللّٰہ سبحٰنہ وتعالٰی اعلم وعلمہ جل مجدہ اتم واحکم۔


Navigate through the articles
Previous article نماز مغرب کا وقت کس وقت شروع ہوتا ہے؟ ظہر وعصر کے اوقات و مسجد بازار میں اذان کی تکرار Next article
Rating 2.68/5
Rating: 2.7/5 (260 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu