• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Namaz / Salat / Prayer / نماز > امام کے پیچھے قراءت،آمین،تراویح اور وتر کے احکام

امام کے پیچھے قراءت،آمین،تراویح اور وتر کے احکام

Published by Admin2 on 2012/7/11 (1244 reads)

New Page 1

مسئلہ نمبر ۴۱۴ تا ۴۱۷: ازکاہنور ضلع روہتک محلہ سیمان     مرسلہ بھورے خان    ۱۲ جمادی الاولٰی ۱۳۳۶ھ

(۱) امام کے پیچھے مقتدی سورہ فاتحہ پڑھے یا نہ پڑھے؟

(۲) آمین با آوازِ بلند کینا درست ہے یا نہیں

(۳) بجائے بیس رکعت تراویح کے آٹھ رکعت پڑھے تو درست ہے؟

(۴) بجائے تین وتر کے ایک وتر پڑھنا درست ہے یا نہیں؟

الجواب

(۱) مقتدی کو قرآن مجید پڑھنا مطلقاً جائز نہیں ، اﷲ عزوجل فرماتا ہے:

واذاقرئ القراٰن فاستمعو لہ وانصتوا لعلکم ترحمون۱؎۔

اور جب قرآن پڑھا جائے تو اسے غور سے سنو اورخاموش رہو تاکہ تم پر رحم کیا جائے۔(ت)

 (۱؎ القرآن        ۷/ ۲۰۴)

نبی صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم فرماتے ہیں:انما جعل الامام لیؤتم بہ فاذاکبرفکبروا اذاقرأفانصتوا۲؎۔امام اس لئے بنایا جاتا ہے کہ اس کی اتباع کی جائے جب تکبیر تحریمہ کہے تم تکبیر کہو جب قرأت کرے خاموش رہو۔(ت)

 (۲؎ مصنّف ابن ابی شیبہ     فی الامام یصلی جالسا    مطبوعہ ادارۃ القرآن والعلوم الاسلامیہ کراچی    ۲/ ۳۲۶)

عبداﷲ بن مسعود رضی اﷲ تعا لٰی عنہ فرماتے ہیں:

''مجھے تمنا ہے کہ جوامام کے پیچھے پڑھے اس کے منہ میں آگ ہو''۔

عبداﷲبن عباس رضی اﷲ تعالٰی عنھما  فرماتے ہیں:

''قدرت پاتا تو اسکی (امام کے پیچھے پڑھنے والے کی) زبان کاٹ دیتا''واﷲ تعالٰی اعلم

(۲) آمین با آواز بلند کہنا نماز میں مکروہ و خلاف ِسنت ہے، اﷲ عزوجل فرماتا ہے:وادعوا ربکم تضرعا وخفیۃ۳؎۔تم اپنے رب کو عاجزی اور تواضع سے آہستہ آہستہ پکارو۔(ت)

 (۳؎ القرآن        ۷/ ۵۵)

نبی صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم فرماتے ہیں:واذقال ولاالضالین فقولوااٰمین فان الامام یقولھا ۴؎۔جب امام ولا الضالین کہے تو تم آمین کہو کیونکہ امام اسے کہہ رہا ہے۔(ت)

 (۴؎ سنن انسائی     جہر الامام بآمین     مطبوعہ المکتبہ السلفیۃ لاہور            ۱/ ۱۱۳)

نوٹ : حدیث شریف کے الفاظ سنن نسائی میں ابو ہریرہ کے حوالہ سے یوں منقول ہیں:

اذاقال الامام غیرالمغضوب علیہم ولاالضالین فقولوا اٰمین فان الملٰئکۃ تقول اٰمین وان الامام یقول اٰمین۔

اور فتح الباری جلد دوم مطبوعہ بیروت صفحہ ۲۱۹ میں یوں منقول ہیں:

اذقال الامام ولاالضالین فقولو اٰمین فان الملٰئکۃ تقول اٰمین و ان الامام یقول اٰمین ۔الحدیث۔نذیر احمد سعیدی۔

 (۳) تراویح بیس رکعت سنت مؤکدہ ہیں سنّت مؤکدہ کا ترک بد ہے۔نبی صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم فرماتے ہیں:علیکم بسنتی و سنۃ الخلفاء الراشدین عضوا علیھا بالنواجذ ۱؎۔تم پر میری اور میرے خلفاءِ راشدین کی سنت لازم ہے اسے اپنی داڑھوں کے ساتھ مضبوطی سے تھام لو:(ت)

 (۱؎ سنن ابی داؤد        باب فی لزوم السنۃ         مطبوعہ آفتاب پریس لاہور            ۲/ ۲۷۹)

دوسری حدیث میں ہے:انہ سیحدث بعدی اشیاء وان من احبھا الی لما احدث عمر ۲؎۔ واللہ تعالی اعلم ۔میرے بعد بہت سی اشیاء ایجاد ہوں گی ان میں سے مجھے وہ سب سے زیادہ پسند ہیں جو عمر ایجاد کریں گے۔(ت)

 (۲؎ کنزالعمال فی سنن الاقوال والافعال،    فضائل فاروق اعظم رضی اﷲ تعالٰی ،    مکتبہ التراث الاسلامی مؤسسۃ الرسالۃ بیروت    ۱۲/ ۵۸۷ )

نوٹ:حدیث کے الفاظ کنزالعمال میں یوں منقول ہیں:

ان رسول اﷲ صلی اﷲ علیہ وسلم قال سیحدث بعدی اشیاء فاحبھا الی ان تلزمو اما احدث عمر رضی اﷲ عنہ۔    نذیر احمد سعیدی

 (۴) ایک رکعت وتر خواہ نفل باطل محض ہے۔ حضور اقدس صلی اﷲتعالٰی علیہ وسلم کا آخری فعل تین رکعت وتر ہے:

وانما یؤخذ بالاٰخر فہو الاخر من فعل رسول اﷲ صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم۔آپ کے آخری عمر کے اعمال پر عمل کیا جاتا ہے اور آپ صلی اﷲ علیہ وسلم کا آخری عمل یہی ہے (ت)

اتنا یاد رہے کہ یہاں ان مسائل میں مخالفت کرنے والے غیر مقلدین وہابیہ ہیں جن پر بوجوہ کثیرہ ان کے ضالہ کے سبب کفر لازم ، جس کی قدرے تفصیل ہمارے رسالہ الکوکبۃ الشھابیۃ میں ہے وہ کہ مسلمان ہی نہیں اُنھیں ایسے فروعی مسائل اسلامی میں نیا دخل دینے کا کیا حق ، اُن سے تو اصول پر گرفت کی جائے گی کہ مقتدی فاتحہ پڑھے نہ پڑھے آمین جہر سے کہے یا آہستہ، تراویح آٹھ رکعت ہوں یا بیس ، وتر ایک ہو یا تین یہ تو سب اس پر موقوف ہیں کہ نماز بھی صحیح ہو جس کا اسلا م صحیح نہیں اس کی نمازکیسے صحیح ہو سکتی ہے وہ ان مسائل میں اِس طرف عمل کرے تو اُس کی نماز باطل ، اُس طرف عمل کرے تو باطل ، پھر لایعنی فضول زق زق سے کیا فائدہ ! اور مسلمان کو ہوشیار رہنا چا ہئے کہ نہ ان سے ملناجائز ، نہ اُن کی بات سننی جائز ، نہ اس کے پاس بیٹھنا جائز ۔ اﷲ عزوجل فرماتا ہے:

واماینسینک الشیطٰن فلا تقعد بعد الذکرٰی مع القوم الظٰلمین۱؎۔اور جب کہیں تجھے شیطان بھلا دے تو یاد آئے پر ظالموں کے پاس مت بیٹھ۔(ت)

 (۱؎ القرآن        ۶/ ۶۸)

نبی صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم فرماتے ہیں:ایاکم و ایاھم لا یضلو نکم ولا یفتنونکم ۲؎۔تم ان سے سخت بچو کہ نہ وہ تمھیں گمراہ کریں نہ ہی فتنہ میں ڈالیں۔

 (۲؎ صحیح مسلم        باب النہی عن الروایۃ عن الضعفاء الخ    مطبوعہ نور محمد اصح المطابع کراچی        ۱/ ۱۰)


Navigate through the articles
Previous article نماز میں سبحانک اللہم پڑھنا فرض ہے یا واجب؟ بعد نماز امام سے قبل مقتدی دعا مانگ سکتا ہے؟ Next article
Rating 2.86/5
Rating: 2.9/5 (286 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu