• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Qir'at/ Reciting / قراءت > ضاد کو ظاد پڑھنے کا حکم

ضاد کو ظاد پڑھنے کا حکم

Published by Admin2 on 2012/7/16 (2179 reads)
Page:
(1) 2 »

New Page 1

مسئلہ نمبر۴۵۷ : از سہسرام مرسلہ مولوی محمد نورصاحب ولایتی    ۱۳۰۹ھ

خلاصہ فتوٰی مرسلہ مولوی صاحب مذکور کہ بہر تصدیق نزد فقیر آمدہ

ماہرین شریعت پر پوشیدہ نہ رہے کہ ضاد کا مشتبہ الصوت ہونا ساتھ ظائے معجمہ کے جملہ کتب تفسیر و فقہ و صرف و تجوید سے ثابت ہے کہ بخلاف دال کے ضاد اور دال میں سات صفتوں کا فرق ہے اور قاعدہ کلیہ جملہ کتبِ فقہیہ کا یہ ہے کہ جن دونوں حرفوں میں فرق بآسانی ممکن ہے اُس کے بدل جانے سے نماز فاسد ہوتی ہے اور اگر فرق دو حروف میں مشکل ہے تو اکثر کا مذہب یہ ہے نماز فاسد نہیں ہوتی اور یہی مذہب متاخرین کا معتدل و پسندیدہ ہے او ر مذہب متقدمین کا یہ ہے کہ ضاد کے ظاء پڑھنے سے بھی نماز فاسد ہوتی ہے پس لفظ ولاالضالین کی جگہ  دالین پڑھنے سے سب کے نزدیک نماز فاسد ہوتی ہے اور ظاء پڑھنے سے اکثر کے نزدیک فاسد نہیں ہوتی ،اور اسی پر فتوٰی ہے، حاصل یہ کہ جس شخص سے مخرج ضاد کا نہ آوے وہ ظاء پڑھے ھذاھوالحق والصواب تو مسلمانوں کو چاہئے کہ بہت جلد اس کے عامل ہوجائیں واﷲ اعلم بالصواب فی الواقع بمذہب مختار جمہور ضاد کی ظاء پڑھے یا ذال نماز فاسد نہ ہو گی واﷲ اعلم ۔

                                ابو الحسنات محمد عبدالحی لکھنوی

الجواب

اللھم ھدایۃ الحق والصواب- بسم اﷲ الرحمٰن الرحیم

اس قدر تجوید جس کے باعث حروف کوحرف سے امتیاز اور تلبیس و تبدیل سے احتراز حاصل ہو واجبات عینیہ و اہم مہمات دینیہ سے ہے آدمی پر تصحیح مخارج میں سعی تام اورہر حرف میں اُس کے مخرج سےٹھیک ادا کرنے کا۔

قصد و اہتمام لازم کہ قرآن مطابق ما انزل اﷲ تعالٰی پڑھے ،نہ معاذاﷲ مداہنت و بے پروائی کہ آجکل کے عوام بلکہ یہاں کے کثیر بلکہ اکثر خواص نے اپنا شعار کرلیا ،فقیر نے بگوشِ خود بعض مولوی صاحبوں کو پڑھتے سنا قل ھو اﷲ اھدحالانکہ نہ ہر گز اﷲ الاحد نے اھد فرمایا نہ امین وحی علیہ الصلوٰۃ والسلام نے اھد پہنچایا نہ صاحب قرآن صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم نے اھد پڑھایا ، پھر اسے قرآن کیونکر کہا جائے فانا ﷲ وانا الیہ راجعون حاشا فتوی متاخرین پروانہ  بے پروائی نہیں ، باوصف قدرتِ تعلیم تعلم نہ کرنا اور براہ سہل انگاری غلط خوانی قرآن پر مصر ومتمادی رہنا کو ن جائز رکھے گا، اتقان شریف میں ہے۔من المھمات تجوید القراٰن وھواعطاء الحروف حقوقھا و ردالحرف الی مخرجہ واصلہ ولاشک ان الامۃ کما ھم متعبدون بفھم معانی القراٰن واقامۃ حدودہ ھم متعبدون بتصحیح الفاظہ واقامۃ حروفہ علی الصفۃ المتلقاۃ عن ائمۃ القرأۃ المتصلۃ بالحضرۃ النبویۃ وقد عدالعلماء القرأۃ بغیر تجوید  لحنا۱؎۔اہم چیزوں میں سے تجویدِ قرآن سیکھنا بھی ہے اور تجوید حروف کو ان کے حقوق دینا اور ان کو ان کے اصل اور مخرج کی طرف لوٹانا ہے، اور اس میں کوئی شک نہیں جس طرح امّت مسملہ معانیِ قرآن کے فہم اور اسکی حدود کے قیام کو عبادت جانتے ہیں اسی طرح اس کے الفاظ کی تصحیح اور اسکے حروف کی اس صفت جوائمہ قراء سے منقول ہے پر ادائیگی کو بھی عبادت جانتے ہیں اور ان قراء کی قرأت کا سلسلہ نبی اکرم صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم تک پہنچتا ہے ،اور علماء نے تجوید کے بغیر قرآن پڑھنے کو  غلط پڑھنا قرار دیا ہے(ت)

 (۱؎ الاتقان فی علوم القرآن  الفصل الثانی من المہمات تجوید القرآن   مطبوعہ مصطفی البابی مصر    ۱/ ۱۰۰)

اس احسن الفتاوٰی فتاوٰی بزاریہ وغیرہا میں ہے:ان اللحن حرام بلاخلافغلط پڑھنا بالاجماع حرام ہے۔

 (۲؎ فتاوٰی بزازیہ علی حاشیۃ الفتاوی الہندیہ الثانی فی العبادات من کتاب الکراہیۃ مطبوعہ نورانی کتب خانی پشاور ۶/ ۳۵۳)

ولہذا ائمہ دین تصریح فرماتے ہیں کہ آدمی سے اگر کوئی حرف غلط ہوتا ہو تو اس کی تصحیح و تعلم میں اس پر کوشش واجب بلکہ بہت علماء نے اس سعی کی کو ئی حد مقرر نہ کی اور حکم دیا کہ عمر بھر روزوشب ہمیشہ جہد کئے جائے کبھی اس کے ترک میں معذور نہ ہوگا۔علامہ ابراہیم حلبی غنیہ میں فرماتے ہیں:یجب علیہ بذل الجھد دائما فی تصحیح لسانہ ولایعذر فی ترکہ ۱؎۔غلط لفظ کی تصحیح کے لئے ہمیشہ کوشاں رہنا ضروری ہے ترک کی صورت میں معذور نہیں سمجھا جائے گا (یعنی اس میں جہد کو ترک کرنا قابل قبول نہیں (ت)

(۱؎ غنیۃ المستملی شرح منیۃ المصلی فصل فی زلۃ القاری     مطبوعہ سہیل اکیڈمی لاہور        ص۴۸۳)

نوٹ:غنیۃ کی عبارت جو مجھے ملی ہے وہ اس طرح ہے: یجب علیھم الجھد دائما وصلٰوتھم جائزۃ مادامواعلی الجھد - اور اس سے کچھ قبل یہ الفاظ ہیں :ینبغی ان یجتھد ولا یعذر فی ذلک الخ -البتہ صغیری شرح منیۃ المصلی مطبوعہ دہلی بعینہٖ یہی الفاظ متن ص ۲۵۰ پر موجود ہیں۔        نذیر احمد سعیدی

قہستانی و طحطاوی وغیرہما میں ہے:قولہ دائما ای اٰناء اللیل واطراف النھار۲؎۔دائماً سے رات کا کچھ حصّہ اور دن کے اطراف مراد ہیں۔(ت)

 (۲؎ حاشیۃ الطحطاوی علی الدرالمختار        باب الامامۃ    مطبوعہ دارالمعرفۃ بیروت         ۱/ ۲۵۱)

Page:
(1) 2 »

Navigate through the articles
Previous article غلط قرآن پڑھنے والے کو امام بنانا کیسا ہے؟ ایک سُورت چھوڑ کر پڑھنا کیسا ہے؟ Next article
Rating 2.84/5
Rating: 2.8/5 (225 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu