• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Qir'at/ Reciting / قراءت > نماز میں ضاد کو مشتبہ بظاء پڑھے تو اس کی نماز کیسی؟

نماز میں ضاد کو مشتبہ بظاء پڑھے تو اس کی نماز کیسی؟

Published by Admin2 on 2012/7/16 (1010 reads)

New Page 1

مسئلہ نمبر ۴۶۷: کیا فرماتے علمائے دین اس مسئلہ میں کہ اگر کوئی شخص نماز میں ضاد کو مشتبہ بظاء پڑھے تو اس کی نماز صحیح ہوگی یا نہیں؟ اور اس شخص کا کیا حکم ہے؟ بینوا توجروا۔

الجواب

اللھم ھدایۃ الحق والصواب

یہ حرف دشوار ترین حرف ہے اور اس کی ادا خصوصاً عجم پر کہ اُن کی زبان کا حرف نہیں، سخت مشکل ، مسلمانوں پر لازم کہ اُس کا مخرج صحیح سے اداکرنا سیکھیں اور کوشش کریں کہ ٹھیک ادا ہو اپنی طرف سے نہ ظاد کا قصد کریں نہ دواد کا دونوں محض غلط ہیں اور جب اس نے حسبِ وسع وطاقت جہد کیا اورحرف صحیح ادا کرنے کا قصد کیا پھر کچھ نکلے اس پر مواخذہ نہیں

لا یکلف اﷲ نفساً الّا وسعھا ۱؎۔

 (اﷲ تعالٰی کسی ذی نفس کو اسکی طاقت سے بڑھ کر مکلف نہیں ٹھہراتا۔ت)

(۱؎ القرآن        ۲/۲۸۶)

خصوصاً ظاء سے اس حرف کا جُدا کرنا تو سخت مشکل ہے پھر ایسی جگہ ان سخت حکموں کی گنجائش نہیں تکفیر ایک امرِ عظیم ہے۔لا یخرج الانسان من الاسلام الاحجود ما ادخلہ فیہ(انسان کو اسلام سے خارج نہیں کرتی مگر جب اس چیز کا انکار کرے جو اسے دین میں داخل کرتی ہے(ت)۔

اور جمہور متاخرین کے نزدیک فسادنماز کا بھی حکم نہیں۔

فی ردالمحتار ان کان الخطأ بابدال حرف بحرف فان امکن الفصل بینھما بلا کلفۃ کالصاد مع الطاء فاتفقوا علی انہ مفسد و ان لم یکن الا بمشقۃ کالظاء مع الضاد فاکثرھم علی عدم الفساد لعموم البلوی ۲؎۔اھ ملخصا۔ردالمحتار میں ہے اگر ایک حرف کو دوسرے حرف سے بدل کر خطا کرے تو ان دوکے درمیان بغیر مشقت کے امتیاز ممکن ہو جیسا صاد اور طاء کے درمیان تو سب کا اتفاق ہے کہ نماز فاسد ہوجائے گی اور اگر امتیاز کرنے میں مشقت ہو مثلاً ظاء اور ضاد،تو اکثر علماء کی رائے یہی ہے عموم بلوی کے پیشِ نظر نماز فاسد نہ ہوگی اھ ملخصا۔

 (۲؎ردالمحتار        مطلب مسائل زلۃ القاری        مصطفی البابی مصر    ۱/۴۶۶)

وفی الدرالمختار الامایشق تمیزہ کالضادوالظاء فاکثرھم لم یفسدھا۳؎۔اور درمختارمیں ہے مگر جن حروف میں امتیاز مشکل ہو جیسے ضاد اور ظاء تو اکثر کے نزدیک نماز فاسد نہ ہوگی۔(ت)

 (۳؎ دُرمختار ، باب ما یفسدالصلٰوۃ الخ  ،  مجتبائی دہلی،  ۱/۹۱)

اور ائمہ متقدمین بھی علی الاطلاق حکم فساد نہیں دیتے عجب کی بات ہے کہ ابنائے زمانہ ان باتوں میں بے طورجھگڑتے اور ایک دوسرے کی تکفیر کرتے ہیں حالانکہ اصول ایمان و امہات عقائد میں جو فتنے طوائف جدید ملا رہیں ہے ان سے کام نہیں رکھتے اور لطف یہ ہے کہ وہ جہال جن سے سہل حرف بھی ٹھیک ادا نہیں ہوتے ضاد اور دوادپر کٹے مرتے ہیں۔اﷲ تعالٰی ہم اہل اسلام کو نیک توفیق عطا فرمائے ۔ ہاں اگر کوئی معاند بد باطن بقصد تغییر کلام اﷲو تبدیل وحی منزل من اﷲ اس حرف خواہ کسی حرف کو بدلے گا تو وہ بےشک اپنے اس قصد خبیث کے سبب حکمِ کفر کا مستحق ہوگا۔ اس میں ظاد و دواد و  سین ساد سب برابر ہیں

وھذا ھو محمل التعمد المذکور فی کلام الامام الفضلی رحمۃ اﷲ تعالٰی علیہ (امام فضلی رحمۃ اﷲ تعالٰی علیہ کے کلام میں مذکور تعمد کا محمل یہی ہے۔ت) واﷲ تعالٰی اعلم


Navigate through the articles
Previous article سورت کے ساتھ اسمائے الٰہی کا ملانا کیسا ہے؟ قراءت میں غلطی کی صورت میں نماز ہوگی یا نہیں؟ Next article
Rating 2.65/5
Rating: 2.7/5 (251 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu