• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Imam / امامت > جو وہابی اپنے آپ کو حنفی کہتا ہو اسکی امامت کا حکم

جو وہابی اپنے آپ کو حنفی کہتا ہو اسکی امامت کا حکم

Published by Admin2 on 2012/7/19 (2055 reads)
Page:
(1) 2 »

New Page 1

مسئلہ نمبر ۵۷۸ ، ۵۷۹: از علی گڑھ کارخانہ مہر    مرسلہ حافظ عبداﷲ صاحب ٹھیکیدار     ۶جمادی الاولی ۱۳۱۱ھ

کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ کوئی مولوی مقلدین حنفیہ کو ذریۃً الشیطان اور کتاب و سنّت کا منکر لکھے اور غیر مقلدی کی اشاعت میں ہمہ تن مصروف ہو اور مسائل خلافیہ مقلدین کا سخت مخالف اور غیر مقلدین کا حامی اور معاون ہو اور مسائل حنفیہ کو مثلاً آمین بالخفا کو اپنی تحریرات میں خرافات لکھے اور بعض اوقات کسی مصلحت دنیوی سے اپنے آپ کو حنفی المذہب ظاہر کرے ایسے شخص کی اقتداء اور اس کے پیچھے نماز پڑھنا جائز ہے یا نہیں؟ اور ایسے شخص کو حنفی کہا جائے گا یا نہیں؟

دومؔ جس امام ِ شہر سے شہر کے مسلمان بوجہ شرعی ناراض ہوں اور اسکے پیچھے نماز نہ پڑھیں تو اس حالت میں اُس کا امام ہونا جائز ہے یا نہیں؟ بینوا توجروا۔

الجواب :اللھم انا نعوذ بک من الشیطٰن الرجیم

جو ذریۃ الشیطان کتاب و سنّت کا منکر حنفیہ کرام خصہم اﷲ تعالٰی باللطف والاکرام کا نام رکھتا ہے پر ظاہر کہ وُہ گمراہ خود کا ہے کو حنفی ہونے لگا اگر چہ کسی مصلحت دنیوی سے براہ تقیہ شنیعہ اپنے آپ کو حنفی المذہب کہے کہ اُس کے افعال و اقوال مذکورہ سوال اُس کی صریح تکذیب پر دال ،منافقین بھی تو زبان سے کہتے تھے :نشھد انّک لرسول اﷲ۱؎  ۔ہم گواہی دیتے ہیں کہ حضور اﷲ کے رسول ہیں۔

 (۱؎ القرآن         ۶۳/۱)

مگر ان ملاعنہ کے گفتار و کردار اس جُھوٹے اقرار کے بالکل خلاف تھے، قرآن عظیم نے اُن کے اقرار کو ان کے منہ پر مارا:

واﷲ یعلم انک لرسولہ واﷲ یشھد ان المنٰفقین لکٰذبون۲؎۔اﷲ خوب جانتا ہے کہ تم بیشک اس کے رسول اور اﷲ گواہی دیتا ہے کہ مبافق جھُوٹے ہیں۔

 (۲؎ القرآن        ۶۳/۱)

ایسے شخص کی اقتداء اور اُسے امام بنانا ہرگز روا نہیں کہ وہ مبتدع گمراہ بد مذہب ہے اور بد مذہب کی شرعاً توہین واجب اورامام کرنے میں عظیم تعظیم تو اُس سے احتراز لازم ۔علامہ طحطاوی حاشیہ دُرمختار میں نقل فرماتے ہیں:من شذعن جمھور اھل الفقہ والعلم والسوادالاعظم فقد شذفیما یدخلہ فی النار فعلیکم معاشر المؤمنین باتباع الفرقۃ الناجیۃ المسماۃ باھل السنۃ والجماعۃ فان نصرۃ اﷲ تعالٰی و حفظہ وتوفیقہ فی مواقتھم وخذلانہ وسخطہ ومقتہ فی مخالفتھم وھذہ الطائفۃ الناجیۃ قد اجتمعت الیوم فی مذاھب اربعۃ وھم الحنفیون والمالکیون والشافعیون والحنبلیون رحمہم اﷲ تعالٰی ومن کان خارجا عن ھذہ الاربعۃ فی ھذاالزمان فھومن اھل البدعۃ والنار۱؎۔یعنی جو شخص جمہور اہل علم وفقہ سوادِ اعظم سے جُدا ہوجائے وُہ ایسی چیز میں تنہا ہُوا جو اُسے دوزخ میں لے جائے گی۔تو اے گروہ مسلمین ! تم پر فرقہ ناجیہ اہلسنت وجماعت کی پیروی لازم ہے کہ خدا کی مدد اور اس کا حافظ و کارساز رہنا موافقت اہلسنت میں ہے اوراس کا چھوڑ دینا اور غضب فرمانا اور دشمن بنانا سُنیوں کی مخالفت میں ہے اور یہ نجات دلانے والا گروہ ا ب چار مذاہب میں مجتمع ہے حنفی، مالکی ، شافعی ، حنبلی اﷲ تعالٰی ان سب پر رحمت فرمائے۔ اس زمانہ میں ان چار سے باہر ہونے والا بدعتی جہنمی ہے۔

 (۱؎ حاشیۃ الطحطاوی علی الدرالمختار    کتاب الذبائح    مطبوعہ دارالمعرفۃ بیروت        ۴/۱۵۳)

اور ان لوگوں کے بدعتی ہونے کا روشن بیان ہم نے اپنے رسالہ النھی الاکیدمیں لکھا

من شاء فلیرجع الیھا (جو شخص تفصیل چاہتا ہے وہ ہمارے اس رسالہ کا مطالعہ کرے۔ت) اور حدیث میں ہے حضور پر نور سیّد عالم صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم فرماتے ہیں:من وقر صاحب بدعۃ فقد اعان علی ھدم الاسلام ۲؎ ۔رواہ ابن عساکر وابن عدی عن ام المؤمنین الصدیقہ و ابو نعیم فی الحلیۃ والحسن بن سفیان فی مسندہ عن معاذبن جبل والسنجری فی الابانۃ عن ابن عمر وکابن عدی عن ابن عباس والطبرانی فی الکبیر وابونعیم فی الحلیۃ عن عبداﷲ بن بسر رضی اﷲ تعالٰی عنھم موصولا والبیھقی فی الشعب عن ابراہیم بن مسیرۃ المکی التابعی الثقۃ مرسلا۔جو کسی بدعتی کی توقیر کرے اس نے دین ِاسلام کے ڈھانے میں مدد کی ۔اس کوابن عساکر اورابن عدی نے حضرت ام المومنین عائشہ صدیقہ رضی اﷲ تعالٰی عنہما سے اور ابو نعیم نے حلیہ میں ، حسین بن سفیان نے اپنی سند میں حضرت معاذ بن جبل رضی اﷲ تعالٰی عنہ سے،سنجری نے ابانہ میں حضرت ابن عمر رضی اﷲ تعالٰی عنہ سے،اور مثل ابن عدی کےحضرت ابن عباس سے،اورطبرانی نے کبیر میں،ابو نعیم نےحلیہ میں حضرت عبداﷲ بن بسر رضی اﷲ تعالٰی عنہم سے متصلاً روایت کیا ہے اور امام بیہقی نے شعب الایمان میں ابراہیم بن میسرہ مکی تابعی ثقہ سے اسے مرسلاً روایت کیا ہے(ت)

(۲؎ شعب الایمان        حدیث ۹۴۶۴    دارالکتب العلمیۃ بیروت        ۷/۶۱)

توایسے شخصوں کو امام کرنا گویا دینِ اسلام ڈھانے میں سعی کرنا ہے العیاذ باﷲ تعالٰی سنن ابن ماجہ میں جابر بن عبداﷲ رضی اﷲ تعالٰی عنہ سے مروی حضور اقدس صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم فرماتے ہیں:

لا یؤمّن فاجر مؤمنا الا ان یقھرہ بسلطانہ یخاف سیفہ اوسوطہ۱؎۔ہر گز کوئی فاجر کسی مومن کی امامت نہ کرے مگر یہ کہ وُہ اُسے اپنی سلطنت کے زور سے مجبور کردے کہ اس کی تلوار یا تازیانہ کا ڈر ہو۔(ت)

(۱؎ سنن ابن ماجہ        باب فرض الجمعۃ    مطبوعہ آفتاب عالم پریس لاہور        ص۷۷)

Page:
(1) 2 »

Navigate through the articles
Previous article سُود خور کے پیچھے نماز کا کیا حکم ہے؟ میوزک کے شوقین امام کی امامت کا حکم Next article
Rating 2.75/5
Rating: 2.7/5 (252 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu