• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Imam / امامت > خاوند امام ہو اور عورت مقتدی ،کیا حکم رکھتا ہے؟

خاوند امام ہو اور عورت مقتدی ،کیا حکم رکھتا ہے؟

Published by Admin2 on 2012/7/21 (903 reads)

New Page 1

مسئلہ نمبر ۶۲۳: از شہر کہنہ    مرسلہ سید عبدالواحد متھراوی    ۲۰ذیقعدہ ۱۳۱۷ھ

عورت کا اپنے خاوند کے ساتھ ایک ہی مصلّے پر فرض نماز پڑھنا بایں صورت کہ خاوند امام ہو اور عورت مقتدی ،کیا حکم رکھتا ہے؟

الجواب: اگر عورت اس قدر پیچھے کھڑی ہے کہ اس کی ساق مرد کی ساق یا کسی عضو کے محاذی نہیں تو اقتدا صحیح ہے اور دونوں کی نماز ہوجائے گی اور اگر برابر ہے کہ بیچ میں کوئی حائل ہے نہ کوئی اتنا فاصلہ جس میں ایک آدمی کھڑاہوسکے اور عورت کی ساق مرد کی ساق یا کسی عضو کے محاذی ہے تو اس صورت میں اگر مرد نے اُس کی امامت کی نیت نہ کی تو مرد کی نماز صحیح ہے اور عورت کی فاسد ،اور اگر مرد نے تحریمہ نیتِ امامتِ زن کی تھی تو دونوںکی گئی ۔فتاویٰ امام قاضی خان میں ہے :

المرأۃ اذاصلت مع زوجھا فی البیت ان کان قدماھا بحذاء قدم الزوج لاتجوز صلاتھما بالجماعۃ وان کان قدماھاخلف قدم الزوج الا انھا طویلۃ تقع رأس المرأۃ فی السجود قبل رأس الزوج جازت صلاتھما لان العبرۃ للقدم ۱؎۔کسی خاتون نے جب اپنے خاوند کے ساتھ گھر میں نماز ادا کی ہو اگر اس کے قدم خاوند کے قدم کے مقابل ہوں تو دونوں کی نماز باجماعت جائز نہ ہوگی اور اگر اس کے قدم خاوند کے قدم سے پیچھے اگر خاتون کا قد لمبا ہونے کے وجہ اس کا سر حالتِ سجدہ میں خاوند کے سر سے آگے ہوتا تو پھر بھی دونوں کی نماز درست ہوگی کیونکہ اعتبار قدموں کا ہے۔(ت)

 (۱؎ فتاوی قاضی خان     فصل فیمن یصح الاقتداء الخ    مطبوعہ نولکشور لکھنؤ    ۱/۴۵)

ردالمحتار میں ہے:الزیلعی قال المعتبر فی المحاذاۃ الساق والکعب فی الاصح وبعضھم اعتبرالقدم اھ فعلی قول البعض لو تأخرت عن الرجل ببعض القدم تفسد وان کان ساقہا وکعبھا متاخراً عن ساقہ وکعبہ وعلی الاصح لاتفسدوان کان بعض مھا محاذیا لبعض قدمہ ۲؎ الخزیلعی کہتے ہیں کہ اصح قول کے مطابق محاذات میں پنڈلی اور ٹخنے کا اعتبار ہے اور بعض نے قدم کا اعتبار کیا ہے اھ تو بعض کے قول پر اگر قدم کا کچھ حصہ مرد سے پیچھے ہوا نماز فاسد ہوگی اگر چہ اس کی پنڈلی اور ٹخنے مرد کی پنڈلی اور ٹخنے سے پیچھے ہوں، اور اصح یہ ہے کہ نماز فاسد نہیں ہوگی اگر چہ بعض قدم عورت کا مرد کے بعض قدم کا محاذی ہو الخ(ت)

(۲؎ ردالمحتار        باب الامامۃ        مطبوعہ مصطفی البابی مصر    ۱/۴۲۳)

درمختار میں ہے :حاذتہ مشتھاۃ ولاحائل بینھما اقلہ قدرذراع فی غلظ اصبع اوفرجۃ تسع رجلا فی صلاۃ مطلقۃ مشترکۃ تحریمۃ واداء واتحدت الجھۃ فسدت صلاتہ لومکلفا ان نوی الامام وقت شروعہ لابعدہ امامتہا والا ینوھا فسدت صلاتھا۳؎اھ مختصرامرد کے محاذی ایسی خاتون ہوگئی جو صاحبِ شہوت ہو اور ان کے درمیان کوئی مرد اور آڑحائل نہ ہو،آڑ کم ازکم بلندی میں ایک ہاتھ کے برابر موٹائی میں ایک انگلی کے برابر کا اعتبار ہے یا یہ کہ دونوں کے درمیان فاصلہ اتنا چھوٹا ہو جو ایک آدمی کی گنجائش رکھتا ہو (کہ آڑ اور فاصلہ کی صورت میں نماز فاسد نہ ہوگی) اوریہ کہ نماز مطلق (یعنی رکوع سجدہ والی ) ہو ۔تکبیر تحریمہ وادا میں دونوں مشترک ہوں اور جہت بھی ایک ہو تو مرد کی فاسد ہوجائے گی اگر وہ مکلف ہو(یعنی عاقل بالغ ہو) اورامام نے شروع نماز کے وقت اس خاتون کی امامت کی نیت کی ہو نہ کہ نمازشروع کرنے کے بعد ،اور اگرامام نے عورت کی امامت کی نیت نہیں کی تو اس خاتون کی نماز فاسد ہوگی اھ اختصاراً (ت) واﷲ تعالٰی اعلم۔

 (۳؎ درمختار        باب الامامۃ        مطبوعہ مطبع مجتبائی دہلی        ۱/۸۴)


Navigate through the articles
Previous article مردے نہلانے اور قرآن پر اجرت لینے والی کی امامت؟ سود خور اور رشوت خور کے پیچھے نماز کیسی ہے؟ Next article
Rating 2.72/5
Rating: 2.7/5 (268 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu