• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Imam / امامت > وہابی امام کے پیچھے اہل سنت کا نماز پڑھنا کیسا ہے؟

وہابی امام کے پیچھے اہل سنت کا نماز پڑھنا کیسا ہے؟

Published by Admin2 on 2012/8/1 (1184 reads)

New Page 1

مسئلہ نمبر ۷۹۹تا ۸۰۷: ازقصبہ عمری ڈاک خانہ خاص ضلع مراد آباد    مسئولہ غلام مصطفی اسرار الحق انصاری قادری    ۱۲ محرم الحرام ۱۳۳۹ھ

کیا فرماتے ہیں علمائے دین ومفتیان شرع متین صورت ہائے مفصلی ذیل میں کہ:

(۱) وہابی امام کے پیچھے اہلسنت وجماعت کی اقتداء ِ نماز خواہ پنجگانہ یا تراویح یا جمعہ یا عیدین یا نوافل یا نماز جنازہ میں درست حکم ہے یا کیاحکم ہے؟

(۲) زید مولویانِ فرقہ وہابیہ دیوبند کو عالم ِ دین سمجھتا ہے اور اُن کی تعظیم و تکریم بھی کرتا ہے لیکن خود عالم نہیں اب زید مذکوراہلسنت وجماعت کی امامت کرسکتا ہے یا نہیں اور اُس کی امامت سے نماز سنّی کی صحیح ہے یا کیا؟

(۳)زید فرقہ وہابیہ دیوبندیہ کو بُرا سمجھتا ہے اور کہتا ہے لیکن اُن کی امامت سے نماز بلا تکلف پڑھتا ہے اور عمروسُنی حنفی ہے اور وہابیہ کے پیچھے نماز پڑھنے سے احتزار کرتا ہے بخیال نہ ہونے نماز جائز کے ،لہذا زید مذکور کی امامت سے عمرو مذکورکی نماز صحیح ہوگی یا نہیںاور کیوں ؟

(۴)امامِ جمعہ وہابی عقائد کا ہے اور صرف ایک ہی مسجد میں جمعہ ہوتا ہے آیا سنّی اُس کی امامت میں نمازِ جمعہ پڑھ سکتا ہے یا نہیں اور اگر نہیں تو کیا نمازِ ظہر ادا کرے؟

(۵) اگر امامِ جمعہ نمبران(۲)یا (۳) مذکورہ میں سے کوئی ہو تو اہل سنّت وجماعت اُس کے پیچھے نماز پڑھ سکتا ہے یا نہیں اورنماز صحیح ہوگی یا کیا ۔نیز نمازِ عیدین کے بارے میں ایسی صورت میں کیا حکم ہے؟

(۶) اما م سنّی المذہب ہے اور چار مقتدی جن میں سے ایک سنّی کامل ہے باقی تین صورتہائے متذکرہ نمبر (۲) اور (۳) کے ہیں ایسی حالت میں جمعہ قائم کرسکتے ہیں یا نہیں؟

(۷) نمازِ مغرب یا کسی وقت کی بہ جماعت نماز ساتھ امام صورتہائے متذکرہ ان (۱) یا (۲) یا (۳) کے ہورہی ہے توکیا سنّی المذہب شریک جماعت ہوسکتا ہے یا نہیں اور تنہا پڑھنے کی حالت میں نماز صحیح ہوگی یا نہیں؟

(۸) حافظ نا بینا کی امامت جائز ہے یا نہیں نماز پنجگانہ یا تراویح میں بشرطیکہ سوائے اس کے اورکوئی حافظِ قرآن موجود نہیں ہے البتہ ناظرہ خواں چند ہیں؟

(۹) صورت ہائے مذکورۃ الصدر نمبران (۲) یا (۳) میں سے اگر امام ہوتونماز تراویح میںاُس کی اقتداء جائز ہے یا نہیں؟

الجواب:

(۱) وہابی کے پیچھے کوئی نماز فرض خواہ نفل کسی کی نہیں ہوسکتی نہ اُ س کے پڑھنے سے نماز جنازہ ادا پو اگرچہ نمازِ جنارہ میں جماعت و امامت شرط نہیں ولہذا اگر عورت امام اور مقتدی ہے نماز جنازہ کا فرض ادا ہو جائے گاکہ اگ رچہ مقتدیوں کی اُس کے پیچھے نہ ہوئی خود اُس کی ہوگئی ،اور اسی قدر فرض کفایہ کی ادا کافی ہے مگر وہابی تو نماز خود باطل ہے لانہ لا دین لہ ولا صلٰوۃ لن لا دین لہ(کیونکہ اس کا تو کوئی دین نہیں اور جس کا دین نہیں اس کی نماز نہیں۔ت) نہ تو اُس کی اپنی ہوسکتی ہے نہ اُس کے پیچھے کسی کی اگر چہ اس کا ہم مذہب ہو یا اور کسی قسم بدمذہب ہو سنّی ہو تو سنّی ، واﷲ تعالٰی اعلم۔

 (۲) دیوبندیہ کی نسبت علمائے کرام حرمین شریفین نے بالاتفاق فرمایا کہ وُہ مرتد ہیں۔اور شفائے قاضی عیاض وبزازیہ و مجمع الانہر ودُرمختار وغیرہا کے حوالے سے فرمایامنشک فہ کفرہ وعذابہ فقد کفر۱؎ (جس نے اس کے کفر وعذاب میں شک کیا وہ بھی کافر ہوگیا۔ت)

 (۱؎ دُرمختار        باب المرتد        مطبوعہ مطبع مجتبائی دہلی        ۱ /۳۵۶)

جو اُن کے اقوال پر مطلع ہوکر ان کے کفر میں شک کرے وہ بھی کافرا ور ان کی حالت کفر وضلال اور ان کے کفری وملعون اقوال طشت ازبام ہوگئے ہر شخص کہ نرا جنگلی نہ ہو اُن کی حالت سے آگاہ ہے پھر انہیں عالم ِدین جانے تو ضرور متہم ہے اور اس کے پیچھے نماز باطل محض ۔واﷲ تعالٰی اعلم۔

(۳) ابھی گزرا کہ دیو بندیہ کے کافر ہونے میں جو شک کرے وُہ بھی کافر ہے صرف انھیں بُرا جاننا کافی نہیں تو جو انھیں قابل امامت سمجھتا ہے اُس کے پیچھے نماز بیشک باطل محض ہے فانہ منھم (کیونکہ وہ بھی انہی میں سے ہے۔ت) واﷲ تعالٰی اعلم

(۴) اہلسنت پر فرض ہے کہ اپنا امام سنّی صحیح العقیدہ جمعہ و عیدین کے لئے مقرر کریں وہابی کے پیچھے نماز باطل محض ہے اور شہروں میں جمعہ کا ترک حرام ہے۔واﷲ تعالٰی اعلم۔

(۵) اس کا جواب انھیں نمبروں میں گزرا۔

(۶) ایسی صورت میں جمعہ قائم نہیں ہوسکتا کہ اس کے لئے امام کے سوا کم از کم تین مقتدی درکار ہیں اور یہاں ایک ہی ہے باقی تین نہیں اینٹ پتھر کی مورتیں ہیں۔واﷲ تعالٰی اعلم

(۷) بار ہا بتا دیا گیا کہ انکے پیچھے نماز باطل اور خود ان کی نماز باطل وہ نماز ہی نہیں لغو حرکات ہیں مسلمان اُسی وقت اپنی جماعت قائم کریں اور جماعت نہ ملے تو اپنی تنہا پڑھے۔

(۸) نابینا کی امامت جائزہے ،ہاںاگر اُس سے افضل موجود ہو تو خلاف ِ اولیٰ ہے۔واﷲ تعالٰی اعلم

(۹) کتنی بار کہا جائے کہ کسی نماز میں اصلاًجائز نہیں۔واﷲ تعالٰی اعلم۔


Navigate through the articles
Previous article باقاعدہ امام نہ ہو تو کیسے شخص کو امام بنایا جائے؟ نجومی شخص امام ہو سکتا ہے کیا؟ Next article
Rating 2.83/5
Rating: 2.8/5 (236 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu