• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Imam / امامت > غیر مقلدین کو اہل سنت کی مسجد میں آنے دینا درست ہے

غیر مقلدین کو اہل سنت کی مسجد میں آنے دینا درست ہے

Published by Admin2 on 2012/8/1 (988 reads)

New Page 1

مسئلہ نمبر ۸۲۴ تا ۸۲۶: ازقصبہ سرواڑ علاقہ کشن گڑھ متصل اجمیر ہوشیاروں کی مسجد مسئولہ جناب قاضی اکبر صاحب ۲۰ ذی القعدہ ۱۳۳۰ھ

کیا فرماتے ہیں علمائے دین ومفتیان شرع متین اس مسئلہ میں کہ:

(۱) غیر مقلدین کے پیچھے ہماری نماز ہوتی ہے یا نہیں؟

(۲) غیر مقلدین کو ہماری مقلدین کی مسجد میں آنے دینا درست ہے یا نہیں؟

 (۳) جس کسی محلہ کی مسجدمیں محلہ دارانِ حنفیہ نے متفق ہو کر اپنے محلہ کی مسجد میں ایک تو مؤذن اور ایک پیش امام مقرر کر رکھا ہواور نماز کے وقت مؤذن کی راہ دیکھتا ہے کہ وقت ہوجائے تو اذان کہے اور پیش امام مذکور باوضو مسجد مذکور میں یاخاص مصلّے پر بیٹھاہُواہو اس حالت میں بلا رضامندی پیش امام مقررہ کے دوسرا کوئی مسجد مذکور میں اسی محلہ کا یا دوسرے محلہ کا یا دوسرے گاؤں کا اذان دے یا نماز پڑھائے تو جائز ہے یانہیں ،اگر بلا رضامندی اذان دینا یا نماز پڑھنا مقرر کے سوائے ناجائز ہو اور محلہ داران مذکور منع کرتے ہوں اوروُہ نہ مانے تو شرع شریف سے اُن کے لئے کیا حکم ؟فقط

الجواب:

(۱) ان کے پیچھے نماز محض باطل ہے جیسے کسی یہودی کے پیچھے ،فتح القدیر میں ہے:ان الصلٰوۃ خلف اھل الاھواء لاتجوز  ۱؎۔واﷲ تعالٰی اعلماہل بدعت و بدمذہب کے پیچھے نماز جائز نہیں(ت) واﷲ تعالٰی اعلم

 (۱؂فتح القدیر         باب الامامۃ         مطبوعہ مکتبہ نوریہ رضویہ سکھر        ۱/ ۳۰۴)

 (۲)یہ تو معلوم ہوچکا کہ نماز میں اُن کا کوئی حق نہیں ،ان کی نماز نماز ہی نہیں،تو مسجد میں اُنھیں آنے کا حق نہیں اور ان کے آنے سے فتنہ ہوتا ہے اور فتنہ کا بند کرنا فرض ہے اوروہ قصداً مسلمانوں کو ایذا دیتے ہیں کم از کم اپنی آمین بالجہر کی آوازوں سے جو قصداً اعتدال سے بھی زائد نکالتے ہیں اور موذی کو مسجد سے روکے جانے کاحکم ہے ۔ درمختار میں ہے :یمنع منہ وکذاکل موذ ولو بلسانہ ۲؎۔واﷲ تعالٰی اعلم

ایسے شخص کو دخولِ مسجد سے منع کیا جائے اور اسی طرح ہر تکلیف دینے والے کومنع کیا جائے گا اگرچہ وہ زبان ہی سے ایذا دے۔(ت)

 (۲؎ دُرمختار        باب ما یفسد الصلٰوۃ         مطبوعہ مطبع مجتبائی دہلی        ۱/ ۹۴)

 (۳)امام معیّن موجود وحاضر ہے تو بے اس کی مرضی کے دوسرا زبردستی بلاوجہ شرعی امام بن جانا ناجائز و گناہ ہے۔حدیث میں فرمایا:الالایؤمن الرجل فی سلطانہ الا باذنہ۳؎۔کوئی آدمی سلطان اورحاکم (مراد صاحبِ تصرف ہے صاحب خانہ ہو یا صاحب مجلس یا امام مسجد کوئی بھی ہو ) کی اجازت کے بغیر امامت نہ کروائے۔(ت)

 (۳؎ صحیح مسلم        باب من احق بالامامۃ        مطبوعہ نور محمد اصح المطابع کراچی     ۱/ ۲۳۶)

اور مؤذن مقرر کئے ہوئے کے خلاف مرضی  بلاوجہ  شرعی  اذان دینا اس کے حق میں  ناحق دست اندازی ،اور نفرت دلانا ہے اور صحیح حدیث میں اس سے منع فرمایابشروا ولا تنفروا  ۱؎ (لوگوں کو خوش کرو  اور نفرت نہ پھیلاؤ۔ت)

 (۱؎ صحیح البخاری        کتاب الادب باب قول النبی صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم یسروا الخ    مطبوعہ قدیمی کتب خانہ کراچی    ۲/ ۹۰۴)

ایسے لوگ مفسد ہیں اگر نہ مانیں تو مسجد سے باہر کر دینے کاحکم ہے،ہاں اگر امام ناقابلِ امامت ہے مثلاً غلط خواں یا وہابی وغیرہ تو نہ وہ امام ہے نہ اُ سکا پڑھانا امامت ۔ یونہی اگر موذن ایسی حالت پر جس کی اذان کے لئے شرعاًحکم اعادہ ہے تو ایسوں کواذان وامامت سے باز رکھنا بجا ہے۔واﷲ تعالٰی اعلم


Navigate through the articles
Previous article تارک الجماعت کے پیچھے نماز کا حکم مقتدی عمامہ میں اور امام ٹوپی میں تو نماز مکروہ ہے Next article
Rating 2.80/5
Rating: 2.8/5 (274 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu