• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Jamaat / باجماعت نماز > عین مغرب کی نماز کے وقت دوسری جماعت کھڑی کرنا کیسا

عین مغرب کی نماز کے وقت دوسری جماعت کھڑی کرنا کیسا

Published by Admin2 on 2012/8/7 (952 reads)

New Page 1

مسئلہ۸۶۷ : زید نے وقت مغرب ایک مسجد میں داخل ہوکردیکھا کہ جماعت ہورہی ہے اور امام قرأت بجہر پڑھ رہاہے زید نے اس امام کی اقتداء نہ کی اور اس آن واحد میں علیحدہ اپنی قرأت بجہر شروع کردی اور دوسری جماعت قائم کی پس زید کاکیاحکم ہے اور جماعت ثانی کاجوبحالت موجودگی جماعت اول قائم ہوئی ہے کیا حکم ہے اور دوشخص ایک آن میں قرأت بجہر کرسکتے ہیں یانہیں؟ بینوا توجروا۔

الجواب

تفریق جماعت حاضرین حضرت حق سبحٰنہ، وتعالٰی کو نہایت ناپسند ہے حتی کہ انتہادرجہ کی ضرورت میں یعنی جب عساکر مسلمین ولشکر کفارمیں صف آرائی ہو مورچہ بندی کرچکے ہوں اور وقت نماز آجائے اس وقت بھی نمازِخوف کی وہ صورت قرآن مجید میں تعلیم فرمائی جس سے تفریق جماعت نہ ہونے پائے اور ایک ہی امام کے پیچھے نماز ہو ورنہ ممکن تھا کہ نصف برسرمعرکہ رہیں اور نصف باقی اپنی جماعت کرلیں پھر یہ نصف مقابلہ پر چلے جائیں اور وہ آکر اپنی نمازپڑھ لیں اتحادجماعت کی عنداﷲ ایسی ہی توکچھ سخت ضرورت ہے جس کے لئے عین نماز میں مشی کثیر جومفسد صلوٰۃ ہے روارکھی گئی ۔ علاوہ بریں صدہاآیات واحادیث اس فعل کی مذمت پردال ہیں اور حکمت ایک جماعت کی مشروعیت کہ ایتلاف مسلمین ہے کہ نہایت محبوب الٰہی ہے یہ فعل بالکلیہ اس کے مناقض ہے کما لایخفی (جیسا کہ مخفی نہیں۔ت) جس زمانے میں نظم خلافت حقہ گسیختہ اور بنائے امامت راشدہ ازہم ریختہ ہوگئی تھی اورسلطنت فساق وفجار بلکہ بدمذہبان فاسدالعقیدہ کوپہنچی تھی وہ لوگ امامت کرتے اور صحابہ وتابعین وکافہ مسلمین بمجبوری ان کے پیچھے نماز پڑھتے اس وقت بھی ان اکابردین نے تفریق جماعت گوارا نہ کی پس اس دوسری جماعت کی شناعت میں کوئی شبہہ نہیں اور فاعل اس کا عوض ثواب کے مستوجب طعن وملام ہوا خصوصاً جبکہ وہ اس تفریق کاسبب کسی بغض دنیاوی کے جواسے امام اول سے تھا مرتکب ہوا یابوجہ اپنے فاسدالعقیدہ ہونے کے عناداً امام اول کو بدمذہب ومبتدع ٹھہراکر اس کی اقتدا سے استنکاف کیاکہ ان صورتوں میں تشنیع اس پر اشدواکد ہے مگریہ کہ درحقیقت امام اول سے بدعت تابحدکفر وارتداد مرتقی ہوگئی ہو مثلاً سیدالمرسلین صلی اللہ علیہ وسلم کی عیاذاً باللہ توہین کرتاہو، حضور کے ختم نبوت میں کلام رکھتاہو حضوروالا کے بعد کسی کے حصول نبوت میں حرج نہ جانتاہو حضوراقدس کی تعظیم جوبعد تعظیم الٰہی کے تمام معظمین کی تعظیم سے اعلٰی واقدم ہے مثل اپنے بڑے بھائی کی تعظیم کے جانتاہو وعلٰی ہذاالقیاس دیگرعقائد زائغہ مکفرہ رکھتاہو اس تقدیر پرتوالبتہ یہ فعل زید کانہایت محمود ہوگا اور وہ اس پراجرجزیل پائے گا کہ صورت مذکورہ میں وہ جماعت عنداﷲ جماعت ہی نہ تھی کہ ایسے شخص کے پیچھے نماز رأساً باطل ہے۔

فی التنویر ویکرہ امامۃ المبتدع لایکفر بھا وان کفر بھا فلایصح الاقتداء بہ اصلا۱؎۱ھ ملخصا۔تنویر میں ہے اس بدعتی کی امامت مکروہ ہے جس کی بدعت حد کفر تک نہ پہنچے اوراگر حد کفر تک پہنچ جائے تو اس کی اقتداء بالکل درست نہ ہوگی اھ تلخیصا(ت)

 (۱؎ درمختار    باب الامامۃ        مطبوعہ مطبع مجتبائی دہلی    ۱ /۸۳)

اور اگر صورت مرقومہ میں امام ثانی مقتدا ومتبوع حضار کاہو اور جس وقت وہ شخص امامت کررہاہے عین اسی حالت میں اس کا دوسری جماعت قائم کردینااور اس کے پیچھے نماز سے احتراز مجمع میں ظاہر کرنا باعث اس کے زجروتوبیخ یاحاضرین کی نگاہ سے اس کے گرجانے کاہو تو اب یہ فعل اور بھی موکدوضروری ہوجائے گا اسی طرح اگرکفروارتداد کے سوا اور کوئی وجہ ایسی ہو جس کے سبب اس کے پیچھے نماز باتفاق روایات باطل محض ہوتی ہو تو جب بھی یہ جماعت ثانیہ قطعاً جائز ہوگی

لماذکرنا ان الجماعۃ الاولٰی لیست بجماعۃ فی الحقیقۃ لبطلان الصلاۃ بالاقتداء بالامام الاول (جیسا کہ ہم نے ذکر کیا ہے کہ پہلی جماعت درحقیقت جماعت ہی نہیں کیونکہ امام اول کی اقتداء میں نماز ہی باطل ہے۔ت)

لیکن اس فعل میں اگرکوئی غرض صحیح شرعی نہ ہو تو اس تقدیر پراس سے احترازاولٰی ہے ختم جماعت کاانتظار کرکے اپنی جماعت کرلےوھذا کلہ ظاھر جدالاخفاء فیہ عند عقل سلیم وراء نبیہ واﷲ تعالٰی اعلم وعلمہ جل مجدہ اتم وحکمہ عزشانہ احکم

 (یہ تمام کاتمام خوب واضح ہے ہرصاحب عقل سلیم اور سمجھدارپرکچھ مخفی نہیں واﷲ تعالٰی اعلم وعلمہ جل مجدہ اتم وحکمہ عزشانہ احکم۔ت)


Navigate through the articles
Previous article دوسری جماعت کے بارے میں کیا حکم ہے امام کےساتھ ایک مقتدی ہوتواسےکس طرح پیچھےکھینچے Next article
Rating 2.88/5
Rating: 2.9/5 (290 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu