• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Jamaat / باجماعت نماز > نو برس کا لڑکا صف میں کھڑا ہو سکتا ہے یا نہیں؟

نو برس کا لڑکا صف میں کھڑا ہو سکتا ہے یا نہیں؟

Published by Admin2 on 2012/8/14 (873 reads)

New Page 1

مسئلہ ۹۳۴: یکم جمادی الاخری ۱۳۰۹ھ

کیافرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ ایک سمجھ وال لڑکا آٹھ نوبرس کاجونمازخوب جانتاہے اگرتنہاہو تو آیا اسے یہ حکم ہے کہ صف سے دورکھڑا ہویاصف میں بھی کھڑاہوسکتاہے؟ بینواتوجروا

الجواب

صورت مستفسرہ میں اسے صف سے دور یعنی بیچ میں فاصلہ چھوڑکرکھڑا کرنا تومنع ہےفان صلاۃ الصبی الممیز الذی یعقل الصلاۃ صحیحۃ قطعا وقدامر النبی صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم بسدالفرج والتراض فی الصفوف ونھی عن خلافہ بنھی شدید۔کیونکہ ممیزبچے (جونماز کوجانتاہو) کی نمازقطعاً صحیح ہے اور حضوراکرم صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم نے صفوف میں خلا نہ چھوڑنے اور متصل رکھنے کاحکم دیا ہے اوراس کے خلاف پرنہی شدید فرمائی ہے۔(ت)

اور یہ بھی کوئی ضروری امرنہیں کہ وہ صف کے بائیں ہی ہاتھ کوکھڑا ہو، علماء اسے صف میں آنے اور مردوں کے درمیان کھڑے ہونے کی صاف اجازت دیتے ہیں، درمختار میں ہے:یصف الرجال ثم الصبیان ظاھرہ تعددھم فلو واحد ادخل الصف ۱؎۔مردصف بنائیں پھربچے، اس کاظاہرواضح کررہاہے یہ اس وقت ہے جب بچے متعدد ہوں، اگراکیلا ہوتو اسے صف کے اندرکھڑاکرلیاجائے(ت)

(۱؎ درمختار    باب الامامۃ            مطبو عہ مطبع مجتبائی دہلی    ۱ /۸۴)

مراقی الفلاح میں ہے:ان لم یکن جمع من الصبیان یقوم الصبی بین الرجال۲؎۔اگربچے زیادہ نہیں توایک بچے کومردوں کی صف میں کھڑاکرلیاجائے۔(ت)

 (۲؎ مراقی الفلاح مع حاشیۃ الطحطاوی    فصل فی بیان الاحق بالامامۃ         مطبوعہ نورمحمد کتب خانہ کراچی    ص۱۶۸)

بعض بے علم جویہ ظلم کرتے ہیں کہ لڑکا پہلے سے داخل نماز ہے اب یہ آئے تواسے نیت بندھا ہوا ہٹاکر کنارے کردیتے اور خود بیچ میں کھڑے ہوجاتے ہیں یہ محض جہالت ہے، اسی طرح یہ خیال کہ لڑکابرابر کھڑا ہوتو مرد کی نماز نہ ہوگی غلط وخطا ہے جس کی کچھ اصل نہیں۔ فتح القدیر میں ہے:اما محاذاۃ الامرد فصرح الکل بعدم افسادہ الامن شذ ولامتمسک لہ فی الروایۃ ولافی الدرایۃ ۳؎۔ ملخصاًامردکامحاذی ہونا فسادِنماز کاسبب نہیں، اس مسئلہ پر تمام فقہانے تصریح کی ہے البتہ شاذونادرطورپرکچھ لوگوں نے اس کی مخالفت کی ہے ان کے لئے نہ روایۃً کوئی دلیل ہے نہ درایۃً ملخصاً(ت)

 (۳؎ فتح القدیر        باب الامامۃ            مطبوعہ مکتبہ نوریہ رضویہ سکھر        ۱ /۳۱۲)

واﷲ تعالٰی اعلم وعلمہ جل مجدہ اتم واحکم۔


Navigate through the articles
Previous article جماعت کے ساتھ نماز پڑھنے کو مستحب کہنے والے کا حکم جماعت ثانی کے وقت کوئی اپنی الگ نماز پڑھے تو کیسا Next article
Rating 2.76/5
Rating: 2.8/5 (291 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu