• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Jamaat / باجماعت نماز > تراویح بلاعذر بیٹھ کر پڑھنا کیسا ہے؟

تراویح بلاعذر بیٹھ کر پڑھنا کیسا ہے؟

Published by Admin2 on 2012/8/15 (1910 reads)
Page:
(1) 2 3 »

New Page 1

مسئلہ ۹۴۰ : ماقولکم رحمکم اﷲ تعالٰی فی جواب ھذا السؤال

 (اے علما ! اﷲ تم پررحم فرمائے اس سوال کاکیاجواب ہے؟ت) جماعت تراویح میں بعض لوگ صف اول ودوم میں متفرق طور پر اس طرح نماز پڑھتے ہیں کہ چارآدمی کھڑے ہوکر پھرچار بیٹھ کر بعد ہی اس کے دوکھڑے ہوئے ازاں بعد پھر تین بیٹھے ہوئے پڑھتے اور قرآن سنتے ہیں اگرچہ یہ بیٹھنے والے سب ضعیف ومعذور نہیں ہیں بلکہ بیشتر نوجوان ہیں جن کو بخیال تطویل قرأت امام برابر کھڑا رہنا بوجہ اپنی کاہلی وتکاسل کے ناگوار ہے آیابیٹھ کرنماز پڑھنا ان کا اندرصفوف بلاکراہت جائز ہے؟ کیاتسویہ صفوف کاحکم اس سے قطعاً غیرمتعلق ہے؟ کیاجماعت فرض وتراویح میں اس کی بابت کوئی حکم تخصیصی ہے؟ ایک فریق کہتاہے کہ بیٹھ کرپڑھنے والے آخر صف میں نماز پڑھیں دوسرافریق مجوز ہے کہ ایسی جماعت بلاکراہت صحیح ودرست ہے چاہے کسی صف میں کوئی شخص بیٹھ کر پڑھتا ہو یا کھڑا ہوکر اس میں کوئی محظور شرعی نہیں ہے ایسی حالت میں کون حق پرہے؟ بینواتوجروا

الجواب

دربارہ صفوف شرعاً تین باتیں بتاکیداکیدماموربہ ہیں اور تینوں آج کل معاذاﷲ کالمتروک ہورہی ہیں، یہی باعث ہے کہ مسلمانوں میں نااتفاقی پھیلی ہوئی ہے۔

اول تسویہ کہ صف برابر ہوخم نہ ہو کج نہ ہو مقتدی آگے پیچھے نہ ہوں سب کی گردنیں شانے ٹخنے آپس میں محاذی ایک خط مستقیم پرواقع ہوں جو اس خط پرکہ ہمارے سینوں سے نکل کر قبلہ معظمہ پر گزراہے عمود ہو، رسول اﷲ صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم فرماتے ہیں

عباد اﷲ لتسون صفوفکم اولیخالفن اﷲ بین وجوھکم ۱؎۔اﷲ کے بندو! ضرور یا تم اپنی صفیں سیدھی کروگے یااﷲ تمہارے آپس میں اختلاف ڈال دے گا۔

 (۱؎ صحیح مسلم        باب تسویۃ الصفوف الخ        مطبوعہ قدیمی کتب خانہ کراچی    ۱ /۱۸۲)

حضوراقدس صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم نے صف میں ایک شخص کاسینہ اوروں سے آگے نکلا ہواملاحظہ کیا، اس پر یہ ارشاد فرمایا۔رواہ مسلم عن النعمٰن بن بشیر رضی اﷲ تعالٰی عنھما(اس کو مسلم نے حضرت نعمان بن بشیر رضی اﷲ تعالٰی عنہما سے روایت کیاہے۔ت)

دوسری حدیث میں ہے فرماتے ہیں صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم:راصّوا صفوفکم وقاربوا بینھا وحاذوا بالاعناق فوالذی نفس محمد بیدہ انی لاری الشیاطین تدخل من خلٰل الصف کانھا الخذف ۲؎۔ رواہ النسائی عن انس رضی اﷲ تعالٰی عنہ۔اپنی صفیں خوب گھنی اورپاس پاس کرو اور گردنیں ایک سیدھ میں رکھو کہ قسم اس کی جس کے ہاتھ میں میری جان ہے میں شیاطین کودیکھتاہوں کہ رخنہ صف سے داخل ہوتے ہیں جیسے بھیڑ کے بچے۔ اس کو نسائی نے حضرت انس رضی اﷲ تعالٰی عنہ سے روایت کیاہے۔

 (۲؎ سنن النسائی    حث الامام علی رص الصفوف الخ     مطبوعہ مکتبہ سلفیہ لاہور    ۱ /۹۳)

تیسری حدیث صحیح میں ہے فرماتے ہیں صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم:اقیموا الصفوف فانما تصفون بصف الملٰئکۃ وحاذوا بین المناکب ۱؎۔ رواہ احمد وابوداو،د والطبرانی فی الکبیر و ابن خزیمۃ والحاکم وصححاہ عن ابن عمر رضی اﷲ تعالٰی عنہما۔صفیں سیدھی کرو کہ تمہیں توملائکہ کی سی صف بندی چاہئے اور شانے ایک دوسرے کے مقابل رکھو۔ اس کو امام احمد، ابوداؤد، طبرانی نے المعجم الکبیر میں، ابن خزیمہ اور حاکم نے حضرت عبداﷲ ابن عمر رضی اﷲ تعالٰی عنہما سے روایت کرکے اسے صحیح قراردیا۔

 (۱؎ سنن ابوداؤد    باب تسویۃ الصفوف        مطبوعہ آفتاب عالم پریس لاہور    ۱ /۹۷

(مسند احمد بن حنبل    مروی ازعبداﷲ ابن عمر رضی اﷲ عنہ    مطبوعہ دارالفکر بیروت        ۲ /۹۸)

دوم : اتمام کہ جب تک ایک صف پوری نہ ہو دوسری نہ کریں اس کا شرع مطہرہ کو وہ اہتمام ہے کہ اگرکوئی صف ناقص چھوڑے مثلاً ایک آدمی کی جگہ اس میں کہیں باقی تھی اسے بغیر پوراکئے پیچھے اور صفیں باندھ لیں، بعد کو ایک شخص آیا اس نے اگلی صف میں نقصان پایا تو اسے حکم ہے کہ ان صفوں کو چیرتاہوا جاکروہاں کھڑا ہو اور اس نقصان کو پوراکرے کہ انہوں نے مخالفت حکم شرع کرکے خود اپنی حرمت ساقط کی جو اس طرح صف پوری کرے گا اﷲ تعالٰی اس کے لئے مغفرت فرمائے گا۔ رسول اﷲ صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم نے فرمایا:الاتصفون کما تصف الملٰئکۃ عن ربھا ۲؎۔ایسی صف کیوں نہیں باندھتے جیسی ملائکہ اپنے رب کے حضور باندھتے ہیں۔

صحابہ نے عرض کی: یارسول اﷲ ! ملائکہ کیسی صف باندھتے ہیں؟

 (۲؎ صحیح مسلم        باب الامر بالسکون فی الصلوٰۃ الخ     مطبوعہ قدیمی کتب خانہ کراچی        ۱ /۱۸۱

(سنن ابوداؤد     باب تسویۃ الصفوف         مطبوعہ آفتاب عالم پریس لاہور    ۱ /۹۷)

فرمایا:

یتمون الصف الاول ویتراصّون فی الصّف۳؎۔ رواہ مسلم وابوداو،د والنسائی وابن ماجۃ عن جابر بن سمرۃ رضی اﷲ تعالٰی عنہ۔اگلی صف پوری کرتے اور صف میں خوب مل کر کھڑے ہوتے ہیں۔ اس کو مسلم، ابوداؤد،نسائی اور ابن ماجہ نے حضرت جابربن سمرہ رضی اﷲ تعالٰی عنہ سے روایت کیاہے۔

 (۳؎ صحیح مسلم        باب الامر بالسکون فی الصلوٰۃ الخ        مطبوعہ قدیمی کتب خانہ کراچی    ۱ /۸۱)

(سنن ابوداؤد     باب تسویۃ الصفوف            مطبوعہ آفتاب عالم پریس لاہور    ۱ /۹۷)

Page:
(1) 2 3 »

Navigate through the articles
Previous article جماعت ثانی کے وقت کوئی اپنی الگ نماز پڑھے تو کیسا مکہ میں چار مصلے کس نے قائم کئے Next article
Rating 2.73/5
Rating: 2.7/5 (275 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu