• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Namaz Tarweeh / نماز تراویح > نماز تراویح سے متعلق مختلف سوالات

نماز تراویح سے متعلق مختلف سوالات

Published by Admin2 on 2012/10/8 (1155 reads)

مسئلہ ۱۰۶۶ تا ۱۰۶۸: از صاحب گنج گیا مرسلہ مولوی کریم رضاصاحب یکم ذیقعدہ ۱۳۱۲ھ

(۱) نمازتراویح کی جماعت اس طورپرکہ الم ترکیف سے شروع کرتے ہیں اور والناس تک ایک ایک سورہ ایک ایک رکعت میں پڑھتے ہیں اور پھر الم ترکیف سے والناس تک دوبارہ دس رکعتوں میں پڑھتے ہیں جائز ہے یانہیں؟

(۲) ہرترویحہ کے بعد دعامانگنا جائزہے یانہیں؟

 (۳) کسی حافظہ کو اس طورپر نماز تراویح کی پڑھانی کہ پہلے ایسی قوم کے ساتھ جو آٹھ رکعتیں تراویح منفرد پڑھ چکے ہوں بارہ رکعتیں ختم تراویح پڑھاکر پھردوسری قوم کے پاس جوبارہ رکعتیں تراویح کی منفرد پڑھ چکے ہوں جاکر آٹھ رکعتیں تراویح کی ہرشب میں پڑھانی جائز ہیں یانہیں؟بیّنوا بالفقہ والسنۃ والکتاب تؤجروا من اﷲ حسن الماٰب(فقہ اور کتاب وسنت کے مطابق جواب عنایت کرکے اﷲ تعالٰی سے اجرعظیم پاؤ۔ت)

الجواب

(۱) جائز ہےفی الھندیۃ بعضھم اختار قل ھواﷲ احد فی کل رکعۃ وبعضھم اختار قرأۃ سورۃ الفیل الٰی اٰخر القراٰن وھذا احسن القولین لانہ لایشتبہ علیہ عدد الرکعات ولایشتغل قلبہ بحفظھا کذا فی التجنیس۲؎اھ واﷲ تعالٰی اعلم۔ہندیہ میں ہے بعض نے ہر رکعت میں قل ھواﷲ احد کواختیار کیا اور بعض نے سورہ فیل سے آخر تک کو، اور یہ احسن قول ہے کیونکہ اس صورت میں عددرکعات میں اشتباہ نہیں ہوتا اور نہ ہی ان کے یادرکھنے میں مصروف ہوتاہے جیسا کہ تجنیس میں ہے اھ واﷲ تعالٰی اعلم(ت)

 (۲؎ فتاوٰی عالمگیری        الباب التاسع فی النوافل        مطبوعہ نورانی کتب خانہ پشاور    ۱ /۱۱۸)

 (۲) جائزہےفی ردالمحتار قال القھستانی فیقال ثلاث مرات سبحٰن ذی الملک والملکوت سبحٰن ذی العزۃ والعظمۃ والقدرۃ و الکبریاء والجبروت سبحن الملک الحی الذی لایموت سبوح قدوس رب الملئکۃ والروح لاالٰہ الااﷲ نستغفراﷲ نسألک الجنۃ ونعوذبک من النار کمافی منھج العباد۱؎ اھ  واﷲ تعالٰی اعلم۔ردالمحتارمیں ہے کہ قہستانی نے کہا کہ تین دفعہ یہ کلمات پڑھے جائیں: ملک وملکوت کے مالک تیری ذات پاک ہے اے صاحب عزت وعظمت اور جبروت وکبریا تیری ذات اقدس پاک ہے، اے مالک جوزندہ ہے اس پرموت نہیں، تیری ذات پاک ہے توپاک وقدوس ہے ملائکہ اور جبریل کا رب ہے، اﷲ کے سوا کوئی معبود نہیں، ہم اﷲ تعالٰی سے معافی مانگتے ہوئے جنت کا سوال اور دوزخ سے پناہ مانگتے ہیں منہج العباد اھ واﷲ تعالٰی اعلم(ت)

 (۱؎ ردالمحتار    مبحث التراویح    مطبوعہ ایچ ایم سعیدکمپنی کراچی    ۲ /۴۶)

 (۳) اصل یہ ہے کہ ہمارے نزدیک بیس رکعت تراویح سنت عین ہیں کہ اگرکوئی شخص مرد یاعورت بلاعذرشرعی ترک کرے مبتلائے کراہت واساءت ہو اور اُن کی جماعت کی مساجد میں اقامت سنت کفایہ کہ اگر اہل محلہ اپنی اپنی مسجدوں میں اقامت جماعت کریں اور اُن میں بعض گھروں میں تراویح تنہا یاباجماعت پڑھیں تو حرج نہیں اور اگر تمام اہل محلہ ترک کریں توسب گنہگار ہوں، ردالمحتار میں ہے:اصل التراویح سنۃ عین فلوترکھا واحدکرہ۲؎۔تراویح سنت عینی ہیں، اگرانہیں کسی نے بھی ترک کیاتومکروہ ہے۔(ت)

 (۲؎ ردالمحتار    مبحث التراویح    مطبوعہ ایچ ایم سعیدکمپنی کراچی    ۲ /۴۵)

درمختارمیں ہے:والجماعۃ فیھا سنۃ علی الکفایۃ فی الاصح فلوترکھا اھل مسجد اثموا، لالوترک بعضھم۳؎۔ان میں اصح قول کے مطابق سنت کفایہ ہے، اگر تمام اہل مسجد نے اسے ترک کیا توگنہگار ہوں گے اور اگربعض نے ترک کیاتوگنہگار نہ ہوں گے(ت)

 (۳؎ درمختار    فصل فی الوتروالنوافل    مطبوعہ مجتبائی دہلی بھارت        ۱ /۹۸)

ردالمحتارمیں ہے:ظاھر کلامھم ھناان المسنون کفایۃ اقامتھا بالجماعۃ فی المسجد حتی لواقاموھا جماعۃ فی بیوتھم ولم تقم فی المسجدا ثم الکل۱؎۔یہاں سنت کفایہ سے مرادیہ ہے کہ تراویح کومسجد میں جماعت کے ساتھ اداکیاجائے اگرتمام نے گھروں میں جماعت کے ساتھ اداکیں اور مسجد میں ادانہ کیں توسب گنہگار ہوں گے۔(ت)

 (۱؎ ردالمحتار    مبحث التراویح    مطبوعہ ایچ ایم سعیدکمپنی کراچی    ۲ /۴۵)

پس صورت مستفسرہ میں امام اور دونوں جگہ کے مقتدی تینوں فریق سے جس کے لئے یہ فعل اس شناعت کاموجب ہو اس کے حق میں کراہت واساءت ہے ورنہ فی نفسہٖ اس میں حرج نہیں مثلاً امام وہردوقوم کی مساجد میں جماعت تراویح جداہوتی ہے یہ گھروں پربطور مذکور جماعۃً وانفراداً پڑھتے ہیں تو کسی پرمواخذہ نہیں کہ ہرگروہ مقتدیان نے اگربعض ترویحات تنہا اور ہرسہ فریق نے مسجد سے جدا پڑھیں مگرجبکہ اُن کی مساجد میں اقامت جماعت ہوتی ہے سنت کفایہ اداہوگئی، ہاں امام دونوں قوموں کوپوری تراویح پڑھاتاتو یہ جداکراہت ہوتی اس سے صورت مستفسرہ خالی ہے۔

فی الھندیۃ امام یصلی التراویح فی مسجدین فی کل مسجد علی الکمال لایجوز کذا فی المحیط السرخسی والفتوی علی ذلک کذا فی المضمرات۲؎۔ہندیہ میں ہے ایک امام دومساجد میں تمام تراویح پڑھاتے ہیں تویہ جائزنہیں جیسا کہ محیط سرخسی میں ہے مضمرات میں ہے کہ فتوٰی اسی پرہے۔(ت)

 (۲؎ فتاوٰی عالمگیری        فصل فی التراویح         مطبوعہ نورانی کتب خانہ پشاور    ۱/۱۱۶)

اور اگراُن میں کسی فریق کی مسجد میں یہی جماعت بطور مذکورہوئی ہے تو اس کے لئے کراہت ہے کہ اس کی مسجد میں پوری تراویح جماعت سے نہ ہوئیں لہٰذا اس صورت میں یہ چاہئے کہ ایک فریق آٹھ یابارہ رکعتیں دوسرے امام کے پیچھے پڑھ کرباقی میں اس حافظ کی اقتداکرے اور دوسرافریق بارہ یاآٹھ رکعات میں دوسرے کامقتدی ہوکرباقی میں اس کامقتدی ہوکہ اب دونوں مسجدوںمیں پوری تراویح کی اقامت جماعت سے ہوجائے گی اور اس میں کچھ مضائقہ نہیں کہ بعض ترویحات میں ایک امام کی اقتداء ہو اور بعض دیگر میں دوسرے کی، ہاں یہ ناپسند ہے کہ ایک ترویحہ میں دورکعت کاامام اور ہودوکااور،فی الخانیۃ اقاموا التراویح بامامین فصلی کل امام تسلیمۃ بعضھم جوزوا ذلک والصحیح نہ لایستحب وانما یستحب ان یصلی کل امام ترویحۃ لیکون موافقا عمل اھل الحرمین۱؎۔خانیہ میں ہے تراویح دواماموں نے پڑھائیں، ہرامام نے دورکعات پڑھائیں توبعض نے اسے جائز کہا اور صحیح یہ ہے کہ یہ طریقہ مستحب نہیں، مستحب یہ ہے کہ ہرامام چاررکعات پڑھائے تاکہ اہل حرمین کے موافق عمل ہوجائے۔(ت)

 (۱؎ فتاوٰی قاضی خاں    باب التراویح        مطبوعہ مطبع منشی نولکشور لکھنؤ، بھارت    ۱ /۱۱۰)

سراج وہاج میں ہے:ان صلوھا بامامین فالمستحب ان یکون انصراف کل واحد علی کمال الترویحۃ فان انصرف علی تسلیمۃ لایستحب ذلک فی الصحیح۲؎۔ واﷲ تعالٰی اعلم۔اگرنماز تراویح دواماموں نے پڑھائی مستحب یہ ہے کہ ہرایک کامل ترویحہ کے بعد مصلی چھوڑے، اگر دورکعات پرچھوڑتاہے توصحیح قول کے مطابق یہ مستحب نہیں۔ واﷲ تعالٰی اعلم(ت)

 (۲؎ سراج الوہاج     شرح قدوری)


Navigate through the articles
Previous article تراویح میں پورا قرآن سننا سنت مؤکدہ ہے یا کیا؟ ایک شخص دو جگہ تراویح کی جماعت کروا سکتا ہے؟ Next article
Rating 2.91/5
Rating: 2.9/5 (271 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu