• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Namaz Tarweeh / نماز تراویح > تراویح میں بعد فاتحہ قصدا کوئي دعا پڑھنا کیسا

تراویح میں بعد فاتحہ قصدا کوئي دعا پڑھنا کیسا

Published by Admin2 on 2012/10/15 (993 reads)

New Page 1

مسئلہ ۱۰۸۲: ازگھوسی ضلع اعظم گڑھ محلہ کریم الدین پورمرسلہ جامع فنون عقلیہ ونقلیہ فقیہ ملت مولٰنا حکیم محمد امجدعلی صاحب اعظمی رضوی رحمۃ اﷲ تعالٰی علیہ مصنف بہارشریعت ۸/رمضان المبارک ۱۳۳۱ھ

حضور والابرکت دامت برکاتہم بعدسلام ونیاز غلامانہ معروض حافظ نے تراویح میں فاتحہ اور سورہ توبہ کے درمیاناعوذ باﷲ من النار ومن شر الکفار الخبالجہر قصداً پڑھا اب دریافت طلب یہ امرہے کہ نمازہوئی یانہیں؟ اور ہوئی تو کیسی؟ اگرنماز واجب الاعادہ ہوتو ان دونوں رکعتوں میں جوقرآن پڑھاگیاختم کے پوراہونے میں اس کااعادہ بھی ضرورہے یاکیا؟

الجواب

سورہ توبہ شریف کے آغاز پربجائے تسمیہ یہ تعوّذ محدثات عوام سے ہے شرع میں اس کی اصل نہیں، خیربیرون نماز اس میں حرج نہ تھا، رہی نماز اگرسورہ فاتحہ کے بعد یہی سورہ توبہ شروع کی اور اس سے پہلے وہ اعوذپڑھی تونمازمکروہ تحریمی واجب الاعادہ ہوئی کہ واجب ضم سورۃ بوجہ فصل بالاجنبی ترک ہوا مگراعادہ تراویح سے اعادہ قرآن لازم نہیں یہ جب تھا کہ تراویح باطل ہو جاتی اوراگرفاتحہ کے بعد کچھ آیات انفال پڑھ کر توبہ شروع کی اور اُس سے پہلے وہ تعوذپڑھا تو اگرچہ کراہت تحریم ووجوب اعادہ نہیں مگرجماعت تراویح میں مثل جماعت فرائض وواجبات یہ فعل مکروہ وخلاف سنت ضرورہے اور اس کاجہرسے پڑھنا اورزیادہ نادانی وقلت شعور ہے اُن دورکعتوں کااعادہ اولٰی ہے۔ قرآن عظیم کے اعادہ کی اصلاً حاجت نہیں۔ درمختارمیں ہے:الامام لایشتغل بغیر القراٰن وماورد حمل علی النفل منفردا۲؎۔امام قرآن کے علاوہ میں مشغول نہ ہو اور جودعائیں وغیرہ منقول ہیں وہ اس صورت پرمحمول ہیں جب اکیلاآدمی نفل پڑھ رہاہو۔(ت)

 (۲؎ درمختار        فصل یجہر الامام    مطبوعہ مطبع مجتبائی دہلی بھارت    ۱ /۸۱)

ردالمحتارو حلیہ میں ہے:اما الامام فی الفرائض فلما ذکرنا من انہ صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم لم یفعلہ فیھا، وکذا الائمۃ من بعدہ الٰی یومنا ھذا فکان من المحدثات، ولانہ تثقیل علی القوم فیکرہ، واما فی التطوع فانکان فی التراویح فکذلک۱؎الخ واﷲ تعالٰی اعلم۔فرائض میں امام کامعاملہ تووہی ہے جو ہم ذکرکرآئے یعنی نبی اکرم صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم نے نماز میں ایسا فعل نہیں کیا اسی طرح آپ کے بعد آج تک ائمہ نے بھی نہیں کیا تو اب اس کے خلاف کرنا بدعت ہوگا، اور دوسرا یہ بھی ہے کہ قوم پرثقل ہوگا لہٰذا مکروہ ہے رہا معاملہ نوافل کا تو اگرتراویح میں تو وہاں بھی یہی حکم الخ(ت) واﷲ تعالٰی اعلم

 (۱؎ ردالمحتار        فصل فی القرأۃ        مطبوعہ ایچ ایم سعیدکمپنی کراچی    ۱ /۵۴۵)


Navigate through the articles
Previous article کیا تراویح کے بعد بھی قرآن شریف سننا چاہیئے؟ تراویح سے بہتر میلاد کا سننا ہے، یہ کہنا کیسا؟ Next article
Rating 2.77/5
Rating: 2.8/5 (292 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu