• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Masjid / Waqf / مسجد، وقف > عیدگاہ پر قابضین کہیں جوہم کہیں گے وہ ہوگا،یہ کیسا

عیدگاہ پر قابضین کہیں جوہم کہیں گے وہ ہوگا،یہ کیسا

Published by Admin2 on 2012/11/5 (823 reads)

مسئلہ۱۱۲۵: از دیرم گام ضلع احمد آباد گجرات جامع مسجد مرسلہ سیّد غلام محی الدین صاحب ۱۳رجب ۱۳۲۷ھ

کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ دیرمگام گجرات میں جو عیدگاہ ہے اُس پر چند لوگ جن کا چار پانچ نفر سے زیادہ عدد نہیں خود بخود بلا اجازت بانیِ مسجد وبلا اجازت مسلمانان شہر ایسے قابض و متصرف ہو گئے ہیں کہ گویا وہ مالک ہی ہیں، چنانچہ علی الاعلان اس امر کا اظہار کرتے رہتے ہیں کہ اس مسجد میں سوائے ہمارے دوسرے کا حق نہیں جس کو ہم چاہیں گے امام بنائیں گے، اور امام جو بناتے ہیں توایسا کہ جس کے پیچھے نماز پڑھنے میں تمام مسلمانانِ شہر اور اہل علم حضرات کراہت کرتے ہیں اور یہ کراہت شرعی ہوئی نہ مخالفت ذاتی پر قابضین کی قلیل جماعت کے عقائد کی یہ کیفیت ہے کہ نکاحِ ثانی کو حرام قطعی سمجھتے ہیں ، اور مسجد پرتصرفات میں سے یہ بھی ہے کہ اہل شہر کے ساتھ نماز  پڑھنے میں مزاحمت کرتے ہیں، آیا اہل شہر کو اس مسجد میں نماز پڑھنا جائز ہے یا نہیں؟

اور  دوسری عیدگاہ قرار دیکراہل شہر نماز پڑھ سکتے ہیں یا نہیں ؟

الجواب

اہل شھر کواُس مسجد میں نماز پڑھنا جائز ہے، اور اُن لوگوں کو مزاحمت کا کوئی حق نہیں ، اگر وُہ مانع آئیں گے سخت ظالم ہوں گے۔

قال اﷲتعالٰی ومن اظلم ممن منع مسٰجد اﷲ ان یذکرفیھا اسمہ وسعٰی فی خرابھا۱ ؎۔

اﷲتعالٰی نے فرمایا: اس سے بڑھ کر ظالم کون ہوسکتا ہے جو اﷲکی مساجد میں اﷲ کے نام کے ذکر سے روکے اور ان کی ویرانی کی کوشش کرے۔(ت)

)۱؎ القرآن        ۲/۱۱۴ (

اور  ایسا امام کہ وہ مقرر کریں معتبر نہ ہوگا ، امام  وہی مانا جائے گا جسے عام مسلمانان شہر حسبِ شرائط شرعیہ مقرر کریں گے ، اس کے سوا وہ امام جسے وہ پانچ چھ برخلافِ شہر مقرر کریں نماز عید باطل محض ہوگی ، اہل شہر اگر کسی وجہ سے اس عیدگاہ میں نماز  نہ پڑھ سکیں دوسری جگہ پڑھیں اگر چہ کسی میدان میں کہ عیدگاہ میں، عمارت کی حاجت نہیں ، اور اگر دوسری عیدگاہ ہی تعمیر کرنی مناسب ہو  تو انھیں اس کا بھی اختیار ہے۔ واﷲتعالٰی اعلم


Navigate through the articles
Previous article مسجد کے معاملات میں اپنا حکم چلانا کیسا ہے؟ سنیوں کی مسجد میں شیعہ قبضہ کرنا چاہتے ہیں تو؟ Next article
Rating 2.75/5
Rating: 2.7/5 (249 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu