• Qur'an

    In Qur'an section, we will upload translations of Qu'an in different languages. The best Urdu translation of Qur'an is "Kanzul Iman", Alhamdulillah it has been translated in many languages of the world. In this section you can also read online the great Tafaseer (Commentary) of Qu'ran, including TAFSEER-E-NAEEMI and others.

    more »

     
  • Hadith

    In Hadith section, you will be able to read online the different collections of Hadith, translation and commentary on Hadith (Sharha). We will try to upload upload Hadith with Urdu translations and Urdu Sharha of Hadiths, in scanned and unicode format, In Sha Allah.

    more »

     
  • Fiqh

    Fiqh section contains big collection of Fatawa written by Sunni Ulema (Scholars of Islam). Alhamdulillah most of the fatawa collections are brought online for the first time. You can find solution of any issue as per the guidance of Qur'an and Sunnah. It includes, Fatawa Ridawiyyah, Fatawa Amjadiyyah, Fatawa Mustafviyyah and a lot more.

    more »

     
  • Dedication

    This website is particularly dedicated to the Revivalist of Islam in the 14th century, i.e. Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi Alaihir Rahmah. We want to bring online the uttermost research work being carried out over his personality and works around the globe. For further details visit "Works on Alahazrat" Section

    more »

     
  • Books of Alahazrat

    Books written by Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi contain extensive research on various branches of Islamic arts & sciences. This website gives you an opportunity to explore this hidden treasure. You can dip into this sea of knowledge by visiting this section

    more »

     
  • Fatawa Ridawiyyah

    Fatawa Ridawiyyah is one of the greatest writtings of Alahazrat Imam Ahmad Raza Khan Bareilvi. The new translated version of this historical Fatawa consists of 30 volumes and more than 21000 pages. Reading this fatawa with care and memorizing the principles mentioned therein, can take the reader to a big height in Islamic Jurisprudence.

    more »

     
  • Sunni Library

    - Sunni Library is a collection of core Islamic Literature. You can read online the great work and contribution of Sunni Islamic scholars worldwide in general and by the Scholars of Sub Continent in particular.

    more »

     
Login
Username:

Password:

Remember me



Lost Password?

Register now!
Main Menu
Themes

(2 themes)
Fiqh > Q. & Ans. > Masjid / Waqf / مسجد، وقف > کیا نماز میں جوتا سامنے رکھنا منع ہے؟

کیا نماز میں جوتا سامنے رکھنا منع ہے؟

Published by Admin2 on 2012/11/14 (873 reads)

مسئلہ ۱۱۶۵: یکم ذی قعدہ ۱۳۳۷ھ

کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ اکثر نمازی مسجد میں جوتا سامنے رکھتے ہیں، منع کرنے پر کہتے ہیں کہ کہاں منع ہے؟ کس قول سے منع ہے؟

الجواب: رسول اﷲ صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم نے فرمایا:ان احدکم اذا قام فی الصلٰوۃ فانما ینا جی ربہ وان ربہ بینہ وبین القبلۃ فلا یبزقن احدکم قبل قبلتۃ ، ولکن عن یسارہ او تحت قدمہ۱؎۱۔رواہ البخاری عن انس رضی اﷲ تعالٰی عنہ

تم مین سے جب کوئی شخص نماز میں کھڑا ہوتا ہے تو وُہ اپنے رب سے مناجات کرتاہے اور رب تعالٰی کو نمازی اپنے اور قبلہ کے درمیان پاتا ہے توکوئی قبلہ کی جانب نہ تھوکے، البتہ بائیں جانب یا پاؤں کے نیچے تھوک دے۔ اسے بخاری نے حضرت انس رضی اﷲ تعالٰی عنہ سے روایت کیا ہے ۔(ت)

 ( ۱؎ صحیح البخاری        کتاب الصلوٰۃ    باب حک البزاق بالید من المسجد    مطبوعہ قدیمی کتب خانہ کراچی    ۱ /۵۸)

اور فرمایا:اذاقام احدکم الی الصلٰوۃ فلا یبصق امامہ ، فانما ینا جی اﷲ ما دام فی مصلاہ ولا عن یمینہ فان عن یمینہ ملکا ولیبصق عن یسارہ اوتحت قدمہ فید فنھا۱؎۔ رواہ الشیخان عن ابی ھریرۃ رضی اﷲ تعالٰی عنہ۔

جب تم میں سے کوئی نماز شروع کرے تو سامنےنہ تھو کے کیونکہ جب تک وہ نماز میں ہے  اپنے رب سے ہم کلام ہے، نہ ہی دائیں طرف تھوکے کیونکہ اس کے دائیں طرف فرشتہ ہوتا ہے، البتہ بائیں طرف یا قدم کے نیچے تھوک لے اور اسے دفن کر دے۔ اسے بخاری ومسلم نے حضرت ابوہریرہ رضی اﷲ تعالٰی عنہ سے روایت کیا۔(ت)

 ( ۱  ؎صحیح البخاری        کتاب الصلوٰۃ    باب دفن النخامۃ فی ا لمسجد        مطبو عہ قدیمی کتب خانہ کراچی    ۱ /۵۹)

اور فرمایا:اذا صلی احدکم فلا یضع نعلیہ عن یمینہ ولا عن یسارہ فتکون عن یمین غیرہ الا ان لا یکون علی یسارہ احد ولیضعھما بین رجلیہ۲؎۔ رواہ ابوداؤدعن ابی ھریرۃ رضی اﷲ تعالٰی عنہ۔ واﷲ تعالٰی اعلم

جب تم میں سے کوئی نماز پڑھے تو جو تے نہ دائیں طرف رکھے نہ بائیں طرف کیونکہ وہ کسی کی دائیں جانب ہوگی البتہ اس صورت میں جب بائیں جانب کوئی نہ ہو، اور انھیں اپنے دونوں پاؤں کے درمیان رکھ لے ۔ اسے ابوداؤد نے حضرتابوہریرہ رضی اﷲ تعالٰی عنہ سے روایت کیا ہے ۔ واﷲ تعالٰی اعلم (ت)

 ( ۲؎ سنن ابوداؤد    کتاب الصلوٰۃ         باب المصلی اذاخلع نعلیہ الخ      مطبو عہ آفتاب عالم پریس لاہور    ۱ /۶۹)


Navigate through the articles
Previous article مسجد کی دیواروں پر عربی تحریروں کا حکم مسجد میں دنیا کی باتیں کرنے والوں کا حکم Next article
Rating 2.82/5
Rating: 2.8/5 (242 votes)
The comments are owned by the poster. We aren't responsible for their content.
show bar
Quick Menu