زید نے عمرو کو دھمکایا اس کا حکم
Category : Misc. Topics / متفرق مسائل
Published by Admin2 on 2012/5/9

New Page 1

مسئلہ ۱۸۴: صفر ۱۳۱۷ھ : کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ زید نے عمرو سے کہا کہ تم مٹی کے برتن کو اب پاک کرکے رکھو تو میں تمہارے چاقو مار دُوں، اب زید کے لئے کیا حکم ہے بموجب شرع شریف کے، بنیوّا توجّروا۔

الجواب: صورت مذکورہ میں زید نے تین۳ گناہ کئے: مسلمان(۱) کو ناحق تہدید، مال(۲) کو ضائع رکھنے کی تاکید، مسئلہ(۳) شرعیہ پر انکار شدید۔ زید پر لازم ہے کہ توبہ کرے اور عمرو سے بھی اپنا قصور معاف کرائے۔ واللہ تعالٰی اعلم۔