Tag: Islamic Terms

نمازِچاشت :آفتا ب بلند ہونے سے زوال یعنی نصف النھارشرعی تک دویاچاریابارہ رکعت نوافل پڑھنا ۔(ماخوذاز بہار شریعت، حصہ۴،ص۲۴،۲۵
نمازِاِشراق:فجر کی نماز پڑھ کر سورج طلوع ہونے کے کم ازکم ۲۰منٹ بعد دو رکعت نفل ادا کرنا۔
تحیّۃُ:الوضو: وضوکے بعداعضاء خشک ہونے سے پہلے دورکعت نمازپڑھنا۔ (ماخوذازبہارشریعت، حصہ۴،ص۲۴
تَحیَّۃُ الْمَسْجد :کسی شخص کا مسجد میں داخل ہوکربیٹھنے سے پہلے دویاچاررکعت نمازپڑھنا۔ (ماخوذازبہارشریعت، حصہ۴،ص۲۳ )
صلٰوۃُ الاَوَّابِین:نمازِ مغرب کے بعدچھ رکعت نفل پڑھنا۔ (ماخوذازبہارشریعت ،حصہ۴،ص۱۵
دَارُ الاسلام :وہ ملک ہے کہ فی الحال اس میں اسلامی سلطنت ہویااب نہیں توپہلے تھی اورغیرمسلم بادشاہ نے اس میں شعائراسلام مثل جمعہ وعیدین واذان واقامت وجماعت باقی رکھے ہوں تووہ دارالاسلام ہے۔(فتاوی رضویہ ،ج۱۷،ص ۳۶۷)
دارُالْحَرب :وہ دار جہاں کبھی سلطنت اسلامی نہ ہوئی یاہوئی اورپھرایسی غیرقوم کا تسلُّط ہوگیاجس نے شعائراسلام مثل جمعہ وعیدین واذان واقامت وجماعت یک لَخْت اٹھادئیے اورشعائرکُفرجاری کردئیے ،اورکوئی شخص اَمان اول پرباقی نہ رہے اوروہ جگہ چاروں طرف سے دارالاسلام میں گِھری ہوئی نہیں تووہ دارالحرب ہے۔ (ماخوذازازفتاو ی رضویہ، ج۱۶، ص۳۱۶،ج۱۷،ص۳۶۷ ٭دارالاسلام کے […]
جماعت نوافل بِالتّد اعِیْ :تداعی کالغوی معنی ہے ایک دوسرے کوبلانا جمع کرنا،اورتداعی کے ساتھ جماعت کامطلب ہے کہ کم ازکم چار آدمی ایک امام کی اقتداکریں۔(دیکھئے تفصیل فتاوی رضویہ، ج۷،ص ۴۳۰۔۴۳۷
شُفعہ:غیرمَنْقول جائیداد کوکسی شخص نے جتنے میں خریدااُتنے ہی میں اس جائیدادکے مالک ہونے کاحق جودوسرے شخص کوحاصل ہوجاتاہے اس کو شفعہ کہتے ہیں۔ (بہارشریعت، حصہ ۱۵، ص۴۷
لَحد:قبرکھود کراس میں قبلہ کی طرف میّت کے رکھنے کی جگہ بنانے کولحد کہتے ہیں۔ (ماخوذ ازبہارشریعت، حصہ۴،ص۱۹۲ )
ذَوِی الْاَرْحام :قریبی رشتہ دار،اس سے مراد وہ رشتہ دارہیں جونہ تواصحاب فرائض میں سے ہیں اورنہ ہی عصبات میں سے ہیں۔ (تفصیل کے لیے دیکھئے بہارشریعت، حصہ ۲۰،ص۴۷
عَصْبہ:اس سے مراد وہ لوگ ہیں جن کاحصہ مقرر نہیں ،البتہ اصحاب فرائض کودینے کے بعد بچاہواما ل لیتے ہیں اوراگر اصحاب فرائض نہ ہوں تومیت کاتمام مال انھی کاہوتاہے۔(تفصیل کے لیے دیکھئے بہارشریعت، حصہ ۲۰،ص ۲۴)
اصحاب فرائض :اس سے مرادوہ لوگ ہیں جن کامعیّن حصہ قرآن وحدیث میں بیان کردیاگیاہے۔ ان کواصحاب فرائض کہتے ہیں۔ (تفصیل کے لیے دیکھئے بہارشریعت، حصہ ۲۰،ص۱۴
صاحبَیْن :فقہ حنفی میں امام ابویوسف اور امام محمد رحمۃ اللہ تعالیٰ علیھما کو صاحبین کہتے ہیں ۔ ( کتب فقہ
ایام تشریق :یومِ نَحْر(قربانی)یعنی دس ذوالحجہ کے بعد کے تین دن(۱۱و۱۲و۱۳) کوایام تشریق کہتے ہیں۔ (ردالمحتار،ج۳،ص ۷۱)
مُکاتب :آقااپنے غلام سے مال کی ایک مقدار مقرر کرکے یہ کہہ دے کہ اتنااداکردے توآزاد ہے اورغلام اس کوقبول بھی کرلے تو ایسے غلام کو مکاتب کہتے ہیں۔ (ماخوذ ازبہارشریعت ،حصہ ۹، ص ۱۱
شیخِ فَانِی :وہ بوڑھا جس کی عمر ایسی ہوگئی کہ اب روز بروز کمزورہی ہوتاجائے گاجب وہ روزہ رکھنے سے عاجز ہویعنی نہ اب رکھ سکتاہے نہ آئندہ اس میں اتنی طاقت آنے کی امید ہے کہ روزہ رکھ سکے گا(توشیخ فانی ہے)۔(بہارشریعت، حصہ۵،ص۱۴۱
وطنِ اِقامت:وہ جگہ ہے کہ مسافر نے پندرہ دن یااس سے زیادہ ٹھہرنے کاوہاں ارادہ کیاہو۔(بہارشریعت، حصہ۴،ص۱۰۰
وطنِ اصلی :وطن اصلی سے مراد کسی شخص کی وہ جگہ ہے جہاں اس کی پیدائش ہے یااس کے گھرکے لوگ وہاں رہتے ہیں یاوہاں سَکُونت کرلی اوریہ ارادہ ہے کہ یہاں سے نہ جائے گا۔ ماخوذازبہارشریعت ،حصہ۴،ص۹۹
اَلْمَعْھُودُ کالْمَشْرُوط :یہ فقہ کاایک قاعدہ ہے کہ معہودمشروط کی طرح ہے یعنی جوبات سب کے ذہن میں ہووہ طے شدہ معاملے کاحکم رکھتی ہے۔ ماخوذ ازوقارالفتاوی، ج۱،ص۱۹۳
اَلْمَعْرُوْفُ کالْمَشْرُوط :یہ فقہ کاایک قاعدہ ہے کہ معروف مشروط کی طرح ہے یعنی جوچیز مشہور ہووہ طے شدہ معاملے کاحکم رکھتی ہے۔ماخوذازفتاوی رضویہ، ج۱۹،ص ۵۲۸
چار رکعت والی نماز کی آخری دو رکعتوں کو شفعِ ثانی کہتے ہیں (ماخوذازبہارشریعت، حصہ۴،ص۱۸ )
چار رکعت والی نماز کی پہلی دو رکعتوں کو شفعِ اول کہتے ہیں (ماخوذازبہارشریعت، حصہ۴،ص۱۸ )
اِسْبَال :تہہ بند یا پائنچے کا ٹخنوں سے نیچے خصوصاً زمین تک پہنچتے رکھنااسبال کھلاتا ہے۔(ماخوذ ازفتاوی رضویہ، ج۲۱،ص ۳۷۶
اِعْتِجَار : سرپر رومال یاعمامہ اس طرح سے باندھنا کہ درمیان کا حصہ ننگارہے تویہ اعتجارہے۔ (نورالایضاح، ص۹۱
Yeh Raza Ka Chaman Hai Raza Ka Chaman
Ziyarat around the world

Google Map locations of famous shrines